ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

کانگریس نے ریل کرایہ میں اضافہ کو بتایا مودی حکومت کا تغلقی فرمان

کانگریس نے ریل کے مسافر کرائے میں اضافہ کو مودي حکومت کا تغلقی فرمان قرار دیتے ہوئے آج کہا کہ اس سے عام آدمی کا کچھ بھلا نہیں ہوگا۔

  • UNI
  • Last Updated: Sep 08, 2016 03:45 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
کانگریس نے ریل کرایہ میں اضافہ کو بتایا مودی حکومت کا تغلقی فرمان
کانگریس لیڈر رنديپ سنگھ سرجےوالا: فائل فوٹو

نئی دہلی : کانگریس نے ریل کے مسافر کرائے میں اضافہ کو مودي حکومت کا تغلقی فرمان قرار دیتے ہوئے آج کہا کہ اس سے عام آدمی کا کچھ بھلا نہیں ہوگا۔ کانگریس کے میڈیا انچارج رنديپ سورجیوالا نے یہاں نامہ نگاروں سے کہا کہ مرکز میں وزیر اعظم نریندر مودی کی قیادت میں قومی جمہوری اتحاد کی حکومت امیروں اور صنعت کاروں کے مفاد میں کام رہی ہے اسے عام آدمی کی کوئی فکر نہیں ہے۔

انہوں نے کہاکہ مودی حکومت نے تغلقی فرمان کے تحت ٹیکسی سروس دینے والی کمپنی اولا اور اوبیر کی پالیسی پر عمل دورنتو، راجدھانی اور شتابدی ٹرینوں میں بھی شروع کر دی ہے ۔انہوں نے الزام لگایا کہ مسٹر مودی نے نیا طریقہ اپنا لیا ہے جس کے مطابق عام مسافروں سے کرایہ کی لوٹ ہوگی اور صنعتکار دوستوں کو ایک لاکھ 12 ہزار کروڑ روپے کی چھوٹ دی جائے گی۔

مسٹر سرجیوالا نے کہا کہ آسمان چھوتی مہنگائی کے درمیان تہوار کے اس موسم میں ان ریل گاڑیوں میں 50 فیصد کرایہ بڑھا کر مودی حکومت نے ثابت کر دیا کہ اس کو عام طبقے کے کسی بھی شخص کے بھلے سے کچھ لینا دینا نہیں ہے۔ حکومت نے کل شتابدی، دورنتو اور راجدھانی ایکسپریس کے لئے نئی کرایہ پالیسی کا اعلان کیا جس کے مطابق مسافروں کو مرحلہ وار 50 فیصد تک زیادہ کرایہ ادا کرنا ہوگا۔

وزارت ریلوے کے اس فیصلے سے کئی مقامات پر دہلی- ممبئی، دہلی- ہوڑہ جیسے روٹوں پر راجدھانی / دورنتو ٹرینوں میں اے سی ٹو کا آخری کرایہ لو کوسٹ ایئر لائن کے کرایہ کے برابر یا کچھ زیادہ ہو سکتا ہے۔

First published: Sep 08, 2016 03:45 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading