ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

وزیر اعظم مودی کی ڈگری کے بعد اب ان کی تاریخ پیدائش پربھی اٹھے سوالَ،کانگریس نے کہا، مودی اپنی خاموشی توڑیں

نئی دہلی۔ کانگریس نے وزیراعظم نریندر مودی کی تعلیمی ڈگری کے بعد ان کی تاریخ پیدائش پر بھی سوال اٹھاتے ہوئے کہا کہ انہیں اپنی خاموشی توڑ کر دونوں معاملات میں سچائی ملک کے سامنے رکھنی چاہیے۔

  • UNI
  • Last Updated: May 08, 2016 10:32 AM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
وزیر اعظم مودی کی ڈگری کے بعد اب ان کی تاریخ پیدائش پربھی اٹھے سوالَ،کانگریس نے کہا، مودی اپنی خاموشی توڑیں
کانگریس لیڈر منیش تیواری: فائل فوٹو

نئی دہلی۔ کانگریس نے وزیراعظم نریندر مودی کی تعلیمی ڈگری کے بعد ان کی تاریخ پیدائش پر بھی سوال اٹھاتے ہوئے کہا کہ انہیں اپنی خاموشی توڑ کر دونوں معاملات میں سچائی ملک کے سامنے رکھنی چاہیے۔ کانگریس کے ترجمان منیش تیواری نے یہاں پریس کانفرنس میں کہا کہ وزیراعظم کی ڈگری اور تاریخ پیدائش کے سلسلے میں جو سوالات اٹھ رہے ہیں ان کی حقیقت کیا ہے؟ یہ ملک کے سامنے آنی چاہیے۔ مسٹر مودی کی ڈگری اور تاریخ پیدائش دونوں کے سلسلے میں شبہ کا ماحول بنا ہوا ہے اور اسے دور کرنے کی ضرورت ہے اور وزیراعظم کو اس معاملے میں خاموشی توڑنی چاہیے۔


انہوں نے کہا کہ مسٹر مودی کی تاریخ پیدائش بھی متنازع ہے۔ اس سلسلے میں جو دستاویزات ملے ہیں ان میں ان کی پیدائش کے سلسلے میں تین الگ الگ تاریخیں دی گئی ہیں۔ وزیراعظم دفتر (پی ایم او) کی ویب سائٹ پر مسٹر مودی کی تاریخ پیدائش 17 ستمبر 1950 بتائی گئی ہے لیکن گجرات کے پاٹن ضلع کے وی این ہائی اسکول وید نگر نے انہیں جو سند دی ہے اس میں ان کی تاریخ پیدائش 28 اگست 1949 بتائی گئی ہے۔



کانگریس ترجمان نے کہا کہ ڈگری کے لئے جب یہ طالب علم (مودی) دہلی یونیورسٹی میں داخلہ لیتا ہے تو سات جولائی 1975 کو داخلہ کے لئے پر کئے گئے فارم میں تاریخ پیدائش یکم اکتوبر 1958 لکھی جاتی ہے اور اس کا نام بدل کر اب نریندر مودی ہوجاتا ہے۔ مسٹر تیواری نے کہا کہ وزیر اعظم کو یہ بات واضح کرنی چاہیے کہ ان کی پیدائش 1949 میں ہوئی تھی ،1950 میں ہوئی تھی یا 1958 میں ہوئی تھی۔ انہوں نے کہا کہ 2001 سے 2016 کے درمیان مسٹر مودی کی تاریخ پیدائش کے سلسلے میں کم از کم 70 آر ٹی آئی سوالات پوچھے گئے لیکن ہمیشہ یہ کہہ کر جواب دینے سے انکار کردیاگیا کہ یہ اطلاعات ذاتی ہیں اور انہیں عام نہیں کیا جاسکتا۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم کی ڈگری اور تاریخ پیدائش کے بارے میں ملک کے عوام کو جاننے کا حق ہے کہ ان کی صحیح تاریخ پیدائش کیا ہے اگر وہ گریجویٹ ہیں توا نہیں یہ بھی بتانا چاہیے کہ انہیں کب اور کہاں سے یہ ڈگری ملی ہے۔

First published: May 08, 2016 10:32 AM IST