ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

کانگریس کا این ڈی اے پر نشانہ ، مودی کی کابینہ سینئر سٹیزن کا کلب بن گئی

کانگریس نے کابینہ میں توسیع کو ’’زیادہ سے زیادہ حکومت اور کم از کم حکمرانی ‘‘ قرار دیتے ہوئے آج کہا کہ وزیر اعظم نریندر مودی نے اچھا کام نہ کرنے والے وزراء کو ترقی دے کر نوجوانوں کو نظر انداز کیا ہے

  • UNI
  • Last Updated: Sep 03, 2017 06:55 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
کانگریس کا این ڈی اے پر نشانہ ، مودی کی کابینہ سینئر سٹیزن کا کلب بن گئی
کانگریس لیڈر اور پارٹی ترجمان منیش تیواری: فائل فوٹو۔

نئی دہلی : کانگریس نے کابینہ میں توسیع کو ’’زیادہ سے زیادہ حکومت اور کم از کم حکمرانی ‘‘ قرار دیتے ہوئے آج کہا کہ وزیر اعظم نریندر مودی نے اچھا کام نہ کرنے والے وزراء کو ترقی دے کر نوجوانوں کو نظر انداز کیا ہے اور کابینہ کو سینئر سٹیزنس کا کلب بنا دیا ہے۔  کانگریس کے سینئر ترجمان منیش تیواری نے یہاں خصوصی پریس کانفرنس میں کہا کہ جن چار وزرائے مملکت کو کابینی وزیر بنایا گیا ہےگزشتہ تین سال میں ان کی کارکردگی بہت خراب رہی ہے۔ وزارتی کونسل میں جو نئے لوگ شامل ہوئے ہیں ان میں کوئی نوجوان نہیں ہے جبکہ مسٹر مودی مسلسل نوجوانوں کی بات کرتے ہیں۔ مودی کے وزراء کی اوسط عمر 60.4 سال ہے جبکہ ملک کے نوجوانوں کی آبادی کی اوسط عمر 27 برس ہے۔

انہوں نے کہا کہ محترمہ نرملا سیتا رمن کی مدت کار میں درآمدات اور برآمدات میں زبردست کمی آئی لیکن نہ صرف ان کا درجہ بڑھا دیا گیا بلکہ انہیں وزارت دفاع کی ذمہ داری بھی سونپ دی گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ شاید انہیں خاتون ہونے کا یہ فائدہ ملا ہوگا اور امید ہے کہ وہ وزارت دفاع کا حال وزارت کامرس جیسا نہیں کریں گی۔

مسٹر دھرمیندر پردھان کو كابینہ وزیر بنائے جانے پر انہوں نے کہا کہ 38 ماہ کے دوران پٹرولیم کے وزیر مملکت کے طور پر مسٹر پردھان نے عام آدمی نہیں بلکہ خاص لوگوں کی خدمت کی ہے اور انھیں اسی کا ثمر ملا اور ترقی دیدی گئی۔ وزیر پٹرولیم کے طور پر ان کے دور میں بین الاقوامی بازار میں تیل کی قیمتیں بہت نیچے آگئیں لیکن اس کا فائدہ ملک کی عوام کو نہیں ملا۔

First published: Sep 03, 2017 06:55 PM IST