ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

ملائم سنگھ کی پریس کانفرنس، نہیں پہنچے اکھلیش، ایس پی دفتر کے باہر ہنگامہ

سماج وادی پارٹی میں کل کی اتھل پتھل کے بعد آج مفاہمت کی کوششوں کا دور چل سکتا ہے۔

  • IBN Khabar
  • Last Updated: Oct 25, 2016 05:11 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
ملائم سنگھ کی پریس کانفرنس، نہیں پہنچے اکھلیش، ایس پی دفتر کے باہر ہنگامہ
سماج وادی پارٹی میں کل کی اتھل پتھل کے بعد آج مفاہمت کی کوششوں کا دور چل سکتا ہے۔

لکھنؤ۔ سماج وادی پارٹی میں کل کی اتھل پتھل کے بعد آج صلح اور مفاہمت کی کوششوں کا دور چلا۔ آج شیو پال یادو سمیت برخاست چار وزراء کی واپسی کی بات پر بھی بحث نے زور پکڑا۔ کل ہی ملائم سنگھ نے خود صلح کا فارمولہ پیش کیا تھا کہ شیو پال تنظیم چلائیں گے اور آئندہ انتخابات کے لئے ٹکٹ کی تقسیم کا کام اکھلیش کا ہوگا۔ وہیں آج رام گوپال نے سیدھے ملائم پر حملہ بول کر ماحول اور گرم کر دیا۔ تقریباً دوپہر 3 بجے ملائم سنگھ نے پریس کانفرنس کی۔ اس پریس کانفرنس میں اکھلیش یادو کو بھی آنا تھا، لیکن وہ نہیں پہنچے۔  جانیں، اب تک کا اپڈیٹ۔


دفتر کے باہر اکھلیش حامیوں کا مطالبہ، اکھلیش خیمے کے رہنماؤں کی برخاستگی ختم ہو، انہیں دوبارہ پارٹی میں لیا جائے اور امر سنگھ کو پارٹی سے نکالا جائے۔

ایس پی دفتر کے باہر ہنگامہ، اکھلیش کے حامیوں نے کی نعرے بازی۔ ملائم سنگھ یادو فی الحال پارٹی آفس کے اندر ہی ہیں۔ آفس کے باہر ہنگامہ ختم ہونے کا انتظار۔


ہماری پارٹی جمہوری پارٹی ہے۔ جب ہم نے اکھلیش کو وزیر اعلی بنانے کا فیصلہ کیا تھا تو سارے لوگوں نے نام پیش کیا تھا۔ جب سب لوگوں کے درمیان نام رکھا تھا تو سب نے قبول کیا، تو پھر یہی ہوگا۔ میں متنازعہ بات نہیں کہوں گا۔ 2012 میں میرے نام پر ہی ووٹ ملا تھا۔ میرے نام پر اکثریت ملی تھی۔  شیو پال اور باقی سے رائے کرکے اکھلیش کو وزیر اعلی بنایا تھا۔ یہ سوال پوچھنے پر کہ کئی لیڈر چاہتے ہیں کہ آپ سی ایم بنیں، ملائم نے جواب دیا، اب 2 ماہ کے لئے کیا غور کریں۔

کیا اکھلیش دوبارہ وزیر اعلی بنیں گے، اس پر ملائم نے کہا، ہماری پارٹی جمہوری پارٹی ہے۔ ممبر اسمبلی چنے جائیں گے اور وہی طے کریں گے۔

میرے نام پر اکثریت ملی تھی، لیکن سب کی بات کرتے ہوئے ہم نے ان کو وزیر اعلی بنایا تھا، میرا وزیر اعلی بننے کا ارادہ نہیں: ملائم

یہ سی ایم پر منحصر ہے کہ وہ برخاست وزراء کو واپس لیتے ہیں یا نہیں، شیو پال نے واپس وزارت نہیں مانگی ہے: ملائم
رام گوپال کے سوال پر ملائم نے کہا کہ میں ان کی بات کو اہمیت نہیں دیتا ہوں۔

ملائم نے کہا، اکھلیش یادو ہمارے سی ایم ہیں۔ اس پر کسی کو اعتراض نہیں ہے۔ ہمارا مقصد انتخابات میں اکثریت حاصل کرنا ہے۔
میری پوری سیاسی زندگی میں عوام ہمیشہ میرے ساتھ رہی ہے اور وہ ہی میرے ساتھ ہے۔ میں ہمیشہ ان کے لئے کام کرتا ہوں۔ عوام کے مفاد کے لئے کام کروں گا۔ ہمارا خاندان ایک ہے، پارٹی ایک ہے۔ امر سنگھ کو درمیان میں کیوں لاتے ہو؟ جن کی عوامی مقبولیت نہیں ہے جو سازش کار ہیں وہ ان کا نام درمیان میں لاتے ہیں۔ اکھلیش یادو وزیر اعلی ہیں۔

ہم سب ایک ہیں، امر سنگھ کو درمیان میں کیوں لاتے ہو: ملائم

ملائم نے کہا عوام ہمیشہ میرے ساتھ رہی ہے۔ سماجواد کی راہ پر چلا ہوں۔ عوام کے مفادات کے لئے کام کرتا رہوں گا۔ ہماری حکومت اور خاندان ایک ہے۔

ملائم سنگھ سے ملنے ان کی رہائش گاہ پہنچے اکھلیش یادو۔ میٹنگ میں شیو پال کے علاوہ برخاست وزیر نارد رائے، شاداب فاطمہ اور اوم پرکاش سنگھ بھی موجود۔

ایس پی ایم ایل سی آشو ملک نے حضرت گنج تھانے میں پون پانڈے کے خلاف یرغمال بنا کر پیٹنے کی شکایت درج کرائی۔ آشو ملک نے کہا پون پانڈے کے رویے سے بہت تکلیف ہوئی۔ مقدمہ درج کرانے کے لئے پولیس میں شکایت دے دی ہے۔ یہ لوگ پارٹی کا نقصان کرنے پر تلے ہوئے ہیں۔

آج نیتا جی سے ملاقات کی۔ چائے، ناشتہ ہوا، کسی طرح کی لڑائی نہیں ہے۔ نیتا جی جو کہیں گے، وہی ہوگا۔ رتھ یاترا اور سارے پروگرام اپنے وقت پر ہوں گے۔ ہمارا مقصد ہے کہ فرقہ پرست لوگوں کو شکست دی جائے، بی جے پی جیسی پارٹیوں کو شکست دی جائے۔ ہم نے رجت جینتی پروگرام میں سب کو مدعو کیا ہے۔ ہم نے ذاتی طور پر امر سنگھ کو نہیں بلایا ہے، سارے ملک کے باشندوں اور ریاست کے لوگوں کو دعوت دی ہے۔ گایتری پرجاپتی۔

پارٹی دفتر پہنچے شیو پال یادو۔ کہا جو نیتا جی کہیں گے اس پر عمل کروں گا۔ پارٹی میں سب کچھ ٹھیک ہے۔ دفتر سے ملائم سنگھ کی رہائش گاہ پہنچے شیو پال۔ شیو پال کے ساتھ برخاست وزیر نارد رائے، شاداب فاطمہ اور اوم پرکاش سنگھ بھی موجود۔

ذرائع کے مطابق، کابینہ میں ہو سکتی ہے چاروں برخاست وزراء کی واپسی، لیکن شیو پال نے انکار کیا۔ ملائم سنگھ سے کہا دوبارہ وزیر نہیں بننا چاہتا۔

 
First published: Oct 25, 2016 12:45 PM IST