ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

میرٹھ : بہاری مزدوروں کی گھر واپسی کا نہیں کوئی انتظام ، رجسٹریشن سینٹروں کے کاٹ رہے ہیں چکر

نوڈل افسر کا کہنا ہے کہ دوسرے صوبے سے تعلق رکھنے والے افراد کی روانگی ریاستی محکمہ سے ویریفیکیشن کے بعد ہی ممکن ہے ، ایسے میں اس میں وقت لگنا لازمی ہے ۔

  • Share this:
میرٹھ : بہاری مزدوروں کی گھر واپسی کا نہیں کوئی انتظام ، رجسٹریشن سینٹروں کے کاٹ رہے ہیں چکر
میرٹھ : بہاری مزدوروں کی گھر واپسی کا نہیں کوئی انتظام ، رجسٹریشن سینٹروں کے کاٹ رہے ہیں چکر

روزی روٹی کی تلاش میں گھروں سے دور رہ کر مزدوری کرنے والا کامگار طبقہ  لاک ڈاؤن کے دوران مشکلات سے دوچار ہو کر اب اپنے گھروں کو واپس لوٹنے کے لیے پریشان ہے ۔ ٹرین اور بسوں کے ذریعہ ان افراد کو ان کے وطن بھیجے جانے کا انتظام کیے جانے کے اعلان کے باوجود بڑی تعداد میں غیر مقامی مزدور اور کامگار ابھی بھی ملک کے مختلف علاقوں میں پھنسے ہوئے ہیں اور ان کی گھر واپسی کا کوئی انتظام نہیں ہو سکا ہے ۔


میرٹھ میں بھی ایسے سینکڑوں مزدور ہیں ، جن کا تعلق بہار سے ہے اور وہ رجسٹریشن سینٹروں پر نام درج کرانے کیلئے پہنچ رہے ہیں ، لیکن ضلع انتظامیہ کی جانب سے اب تک نہ تو ان کے لیے کسی بس یا ٹرین کے ذریعہ بھیجنے کا انتظام کیا گیا ہے اور نہ ہی کوئی جانکاری ہی دی جا رہی ہے ۔ گزشتہ ایک ہفتہ سے یہ افراد ان رجسٹریشن سینٹروں کا چکر لگا کر پریشان ہو رہے ہیں ۔


وہیں نوڈل افسر کا کہنا ہے کہ دوسرے صوبے سے تعلق رکھنے والے افراد کی روانگی ریاستی محکمہ سے ویریفیکیشن کے بعد ہی ممکن ہے ، ایسے میں اس میں وقت لگنا لازمی ہے ۔ لیکن بےحد مشکل حالات میں ڈیڑ ماہ سے زیادہ کا وقت گزار چکے ان مزدوروں کے لیے اب ایک ایک دن کاٹنا مشکل ہو رہا ہے اور یہ افراد اب جلد از جلد اپنے گھروں کو واپس لوٹنا چاہتے ہیں ۔


سرکاری محکمہ کے نوڈل افسران کا کہنا ہے کہ شہر کے مختلف مراکز پر رجسٹریشن کا کام جاری ہے ۔ صوبے کے مختلف اضلاع کے لیے بسوں کے ذریعہ مزدوروں کی روانگی کا سلسلہ بھی جاری ہے ۔ تاہم غیر ریاستی مزدوروں کے معاملہ میں ان کی ریاست کے متعلقہ محکمہ کے افسران اور ڈسٹرکٹ مجسٹریٹ کے ذریعہ ویریفيكيشن کا کام مکمل کئے جانے کے بعد ہی روانگی کا سلسلہ شروع ہوگا ، جس میں وقت لگنا لازمی ہے ۔
First published: May 13, 2020 12:11 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading