ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

بڑی خبر: دہلی میں پرائیویٹ ایمبولینس کا کرایہ طے ، منافع خوروں پر ہوگی سخت کارروائی

کورونا کی آفت سے پریشان دہلی کیلئے ایک اچھی خبر ہے ۔ سرکار نے مریضوں کی سہولیت کیلئے پرائیویٹ ایمبولینس کے چارج طے کردئے ہیں ۔

  • Share this:
بڑی خبر: دہلی میں پرائیویٹ ایمبولینس کا کرایہ طے ، منافع خوروں پر ہوگی سخت کارروائی
بڑی خبر: دہلی میں پرائیویٹ ایمبولینس کا کرایہ طے ، منافع خوروں پر ہوگی سخت کارروائی

نئی دہلی : کورونا کی مار جھیل رہی قومی راجدھانی دہلی میں پرائیویٹ ایمبولینس ڈرائیوروں کے ذریعہ ناجائز وصولی کی کئی شکایتیں مل رہی تھیں ۔ مریضوں کی پریشانی سامنے آنے کے بعد دہلی کی کیجریوال سرکار نے بڑا فیصلہ کیا ہے ۔ منافع خوروں پر لگام کسنے کیلئے سرکار نے نجی ایمبولینس کی شرحیں طے کردی ہیں ۔ سرکار نے واضح طور پر ہدایت دی ہے کہ اگر حکم کی خلاف ورزی کی جائے گی تو سخت کارروائی کی جائے گی ۔ سرکار نےایمبولینس سروسز کو تین زمروں میں تقسیم میں کیا ہے اور دوری کے حساب سے کرایہ طے کردیا ہے ۔


فیصلہ کی جانکاری دیتے ہوئے وزیر اعلی اروند کیجریوال نے کہا کہ یہ ہمارے نوٹس میں آیا ہے کہ دہلی میں پرائیویٹ ایمبولینس سروسز ناجائز طور پر مریضوں سے پیسے وصول رہی ہے ، جس سے بچنے کیلئے دہلی سرکار نے زیادہ سے زیادہ قیمتیں طے کردی ہیں ، جو پرائیویٹ ایمبولینس سروسز لے سکتی ہیں ۔ حکم کی خلاف ورزی کرنے والوں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی ۔




سرکار کی بڑی تیاری

کورونا وائرس کے بڑھتے معاملات اور آکسیجن کی کمی کی مار جھیل رہی دہلی کیلئے ایک اچھی خبر ہے ۔ دہلی حکومت نے اب کورونا پر ڈبل اٹیک کرنے کا منصوبہ تیار کیا ہے ۔ راجدھانی میں 10 مئی تک 1200 آئی سی یو بیڈ تیار کرنے کا کیجریوال سرکار منصوبہ بنارہی ہے ۔ جمعرات کو وزیر اعلی کیجریوال نے اس بات کی جانکاری دی ۔

وزیر اعلی کیجریوال نے کہا کہ گزشتہ کچھ دنوں سے دہلی میں آکسیجن کی بھاری کمی چل رہی تھی ۔ دہلی میں 700 میٹرک ٹن کی ضرورت ہے لیکن کبھی 300 ، 400 ، 450 ٹن آکسیجن کی ہی مل رہی تھی ۔ کل پہلی مرتبہ دہلی کو 730 ٹن آکسیجن مرکزی سرکار نے بھیجی ہے ۔ میری گزارش ہے کہ اس کو کم مت کیجئے گا ۔ ہم سبھی دہلی والے شکرگزار ہوں گے ۔

دہلی ہائی کورٹ کی ہدایت

دہلی ہائی کورٹ نے بدھ کو کہا تھا کہ اسپتال انتظامیہ کے ذریعہ آکسیجن کی کمی کے بارے میں جھوٹی وارننگ نہیں دی جانی چاہئے ، کیونکہ اس سے پہلے سے ہی دباو جھیل رہی سرکار مشینری پر غیر ضروری طور پر بوجھ بڑھ جائے گا ۔ اس کے ساتھ ہی دہلی ہائی کورٹ نے گائیڈلائن طے کی کہ اب اس طرح کے ایس او ایس جاری کئے جائیں گے ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: May 06, 2021 08:04 PM IST