ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

ہندو راشٹر کی بات کرنے والے ملک کے اصلی دشمن : جسٹس سچر

لکھنو: جسٹس راجندر سچر کا کہنا ہے کہ ہندو راشٹر کی بات کرنے والے لوگ ملک کے اصلی دشمن ہیں ۔ہندو مسلمانوں کی مشترکہ کوشش سے ہی ملک ترقی کر سکتا ہے۔ جسٹس سچر نے سوسائٹی فار کمیونل ہارمونی کے لکھنو میں منعقدہ پروگرام میں ان خیالات کا اظہار کیا۔ پروگرام میں جسٹس سچر سمیت اہم شخصیات نے شرکت کی۔

  • ETV
  • Last Updated: Nov 24, 2015 08:53 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
ہندو راشٹر کی بات کرنے والے ملک کے اصلی دشمن : جسٹس سچر
لکھنو: جسٹس راجندر سچر کا کہنا ہے کہ ہندو راشٹر کی بات کرنے والے لوگ ملک کے اصلی دشمن ہیں ۔ہندو مسلمانوں کی مشترکہ کوشش سے ہی ملک ترقی کر سکتا ہے۔ جسٹس سچر نے سوسائٹی فار کمیونل ہارمونی کے لکھنو میں منعقدہ پروگرام میں ان خیالات کا اظہار کیا۔ پروگرام میں جسٹس سچر سمیت اہم شخصیات نے شرکت کی۔

لکھنو: جسٹس راجندر سچر کا کہنا ہے کہ ہندو راشٹر کی بات کرنے والے لوگ ملک کے اصلی دشمن ہیں ۔ہندو مسلمانوں کی مشترکہ کوشش سے ہی ملک ترقی کر سکتا ہے۔ جسٹس سچر نے سوسائٹی فار کمیونل ہارمونی کے لکھنو میں منعقدہ پروگرام میں ان خیالات کا اظہار کیا۔ پروگرام میں جسٹس سچر سمیت اہم شخصیات نے شرکت کی۔


اس موقع پرمقررین نے کہا کہ بہار انتخابات کے نتائج سے ملک میں سیکولر طاقتوں کو نئی زندگی ملی ہے ، لیکن اس پر مطمئن ہوکر بیٹھنے کی بجائے قومی یکجہتی کے پیغام کوعام کرنے کی ضرورت ہے۔ پروگرام میں مسلمانوں سے دہشت گردی کے مسئلے پر بار بار صفائی پیش کرنے پر بھی تنقید کی گئی۔


مولانا ابو الحسن علی میاں ندوی اور وشمبھر ناتھ پانڈے کی مشترکہ کوششوں سے ملک میں فرقہ پرستی کا مقابلہ کرنے کےلئے وجود میں آئی سو سائٹی فار کمیونل ہارمونی کے نائب صدر اور سابق رکن پارلیمنٹ محمد ادیب نے موجودہ حالات میں سو سائٹی کے رول کی وضاحت کرتے ہوئے بتایا کہ پچھلے کچھ دنوں سے ملک کا سیکولر طبقہ بے چینی محسوس کر رہا ہے۔ منافرت اور عدم برداشت کے مسائل نے ایک عام ہندستانی کو بھی متاثر کیا ہے۔


مشہور کالم نویس رام پنیانی نے اس بات پر اطمینان کا اظہار کیا کہ ادیبوں نے ایوارڈ واپسی سے عدم برداشت کے خلاف جو مہم شروع کی تھی ، اسے خاطر خواہ کامیابی ملی ہے ۔ لیکن اسے گاؤں گاؤں پہنچانے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے آسام کے گورنر کے بیان کی مذمت کرتے ہوئے اسے آئین کےخلاف قرار دیا۔

First published: Nov 24, 2015 08:52 PM IST