ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

جے این یو تنازعہ : عمر خالد اور انربان بھٹاچاریہ کو تین دنوں کی پولس تحویل میں بھیجا گیا

نئی دہلی: عدالت نے جواہر لال نہرو یونیورسٹی (جے این یو) کے دونوں طلبہ عمر خالد اورانربان بھٹاچاریہ کو تین دنوں کی پولس تحویل میں بھیجنے کا حکم دیا۔ عمر خالد اور انربان بھٹاچاریہ کے علاوہ جے این یو کے تین دیگر طلبہ آشوتوش کمار، راما ناگا اور اننت پرکاش پر الزام ہے کہ انہوں نے یونیورسٹی کیمپس میں ایک پروگرام کے دوران ملک مخالف نعرے بازی کی تھی۔

  • UNI
  • Last Updated: Feb 25, 2016 09:30 AM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
جے این یو تنازعہ : عمر خالد اور انربان بھٹاچاریہ کو تین دنوں کی پولس تحویل میں بھیجا گیا
نئی دہلی: عدالت نے جواہر لال نہرو یونیورسٹی (جے این یو) کے دونوں طلبہ عمر خالد اورانربان بھٹاچاریہ کو تین دنوں کی پولس تحویل میں بھیجنے کا حکم دیا۔ عمر خالد اور انربان بھٹاچاریہ کے علاوہ جے این یو کے تین دیگر طلبہ آشوتوش کمار، راما ناگا اور اننت پرکاش پر الزام ہے کہ انہوں نے یونیورسٹی کیمپس میں ایک پروگرام کے دوران ملک مخالف نعرے بازی کی تھی۔

نئی دہلی: عدالت نے جواہر لال نہرو یونیورسٹی (جے این یو) کے دونوں طلبہ عمر خالد اورانربان بھٹاچاریہ کو تین دنوں کی پولس تحویل میں بھیجنے کا حکم دیا۔ عمر خالد اور انربان بھٹاچاریہ کے علاوہ جے این یو کے تین دیگر طلبہ آشوتوش کمار، راما ناگا اور اننت پرکاش پر الزام ہے کہ انہوں نے یونیورسٹی کیمپس میں ایک پروگرام کے دوران ملک مخالف نعرے بازی کی تھی۔


عمر خالد اور انربن بھٹاچاریہ نے منگل کی نصف شب کو پولس کے سامنے خودسپردگی کی تھی۔ دہلی پولس نے عدالت سے ان کو سات دنوں کی پولس تحویل میں بھیجنے کی درخواست کی تھی، لیکن اس کی یہ درخواست مسترد کردی گئی۔ تاہم، میٹروپولیٹن مجسٹریٹ نے گزشتہ روز متعلقہ عرضی کی سماعت کے بعد دونوں ملزم طلبہ کو تین دنوں کی پولس تحویل میں بھیجنے کا حکم دیا۔

First published: Feb 25, 2016 09:30 AM IST