உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ہندوستان میں جون تک ویکسین کی سپلائی میں آسکتی ہے تیزی ، دسمبر تک مل جائیں گی 216 کروڑ ڈوز

    ہندوستان میں جون تک ویکسین کی سپلائی میں آسکتی ہے تیزی، دسمبر تک مل جائیں گی 216 کروڑ ڈوز

    Covid-19 Vaccine: کورونا ٹیکوں پر قومی ٹاسک فورس کے سربراہ اور نیتی آیوگ کے رکن ڈاکٹر ونود کمار پال نے کہا کہ اگست سے دسمبر تک ویکسین کی 216 کروڑ خوراکیں دستیاب ہو جائیں گی۔

    • Share this:
      نئی دہلی : کورونا ویکسین کی سپلائی جون تک تیز ہونے کا امکان ہے ، جس کی وجہ سے ہندوستان کو دسمبر میں ختم ہونے والی سات ماہ کی مدت میں تقریبا 300 کروڑ خوراکیں مل سکتی ہیں ۔ اس معاملہ سے وابستہ سرکاری افسران نے جمعہ کو یہ جانکاری دی ۔ افسران کے ذریعہ تیار کئے گئے اندازوں سے پتہ چلتا ہے کہ مئی میں 8.8 کروڑ ڈوز ، جون تک تقریبا دوگنا 15.81 کروڑ ڈوز اور اگست تک 36.6 کروڑ ڈوز مل سکتی ہیں ۔ صرف دسمبر میں 65 کروڑ خوراکیں دستیاب ہوسکتی ہیں ، جو مئی کی تعداد کے مقابلہ میں سات گنا زیادہ ہے  ۔

      اس تعداد سے یہ بھی پتہ چلتا ہے کہ اگست سے دسمبر تک کے درمیان تقریبا 268 کروڑ ڈوز مل سکتی ہیں ، جو کہ پہلے کے اندازہ 52 کروڑ سے زیادہ ہیں ، جس نے پہلی مرتبہ کورونا کی دوسری لہر سے متاثر ملک میں اس خطرناک وبا کے خلاف فیصلہ کن جیت کی امید پیدا کردی ہے ۔ ناقدین کا ماننا ہے کہ بی جے پی کی زیر قیادت مرکزی حکومت کئی ریاستوں میں ویکسینیشن مہم صحیح طریقہ چلانے میں ناکام رہی ہے ۔ خاص کر ایسی ریاستوں میں جہاں غیر بی جے پی سرکاریں ہیں ۔ ڈوز کی کمی کی شکایت کرتے ہوئے ان کا کہنا ہے کہ کئی مراکز پر مہم ٹھپ پڑ گئی ہے ۔

      اگست سے دسمبر تک ملیں گی 216 کروڑ ویکسین

      کورونا ٹیکوں پر قومی ٹاسک فورس کے سربراہ اور نیتی آیوگ کے رکن ڈاکٹر ونود کمار پال نے کہا کہ اگست سے دسمبر تک ویکسین کی 216 کروڑ خوراکیں دستیاب ہو جائیں گی ۔ ایک پریس بریفنگ میں انہوں نے آٹھ ٹیکوں کے بارے میں بتایا جو کہ فی الحال استعمال کئے جارہے دو ٹیکوں میں ایک اہم ضافہ ہے ، جس کی وجہ سے ملک کے سبھی 130 کروڑ افراد کو ٹیکہ لگانے میں مدد ملے گی ۔

      اس پلان پر کامیاب عمل آوری سے نئے سال کی شروعات میں ہندوستان کو اس بیماری کو ہرانے میں مدد مل گی ۔ ہندوستان میں کورونا انفیکشن کے معاملات کی تعداد سنگین طور پر بڑھ گئی ہے اور کئی ریاستوں میں میڈیکل آکسیجن کی عدم دستیابی کی وجہ سے ہوئی اموات کی وجہ سے طبی نظام بیماری کے بھاری بوجھ کے تلے دبا ہوا ہے ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: