உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    اواخر ستمبر ، اکتوبر یا نومبر ، جانئے کب شباب پر ہوگی کورونا کی تیسری لہر، کیا کہتے ہیں ماہرین

    اواخر ستمبر ، اکتوبر یا نومبر ، جانئے کب شباب پر ہوگی کورونا کی تیسری لہر، کیا کہتے ہیں ماہرین ۔ فائل فوٹو ۔

    اواخر ستمبر ، اکتوبر یا نومبر ، جانئے کب شباب پر ہوگی کورونا کی تیسری لہر، کیا کہتے ہیں ماہرین ۔ فائل فوٹو ۔

    آئی آئی ٹی کانپور کے سائنسداں منندر اگروال نے کہا کہ اگر وائرس کا کوئی نیا میوٹیشن نہیں آتا ہے تو صورتحال میں تبدیلی کا امکان نہیں ہے ۔ و ہ تین رکنی ایکسپرٹس ٹیم کا حصہ ہیں ، جس کو انفیکشن میں اضافہ کا اندازہ لگانے کا کام دیا گیا ہے ۔

    • Share this:
      نئی دہلی : ہندوستان میں کورونا وائرس کی تیسری لہر اکتوبر اور نومبر کے درمیان شباب پر ہوسکتی ہے ، لیکن اس کی شدت دوسری لہر کے موازنہ میں کافی کم ہوگی ۔ آئی آئی ٹی کانپور کے سائنسداں منندر اگروال نے کہا کہ اگر وائرس کا کوئی نیا اسٹرین نہیں آتا ہے تو صورتحال میں تبدیلی کا امکان نہیں ہے ۔ و ہ تین رکنی ایکسپرٹس ٹیم کا حصہ ہیں ، جس کو انفیکشن میں اضافہ کا اندازہ لگانے کا کام دیا گیا ہے ۔

      اگر تیسری لہر آتی ہے تو ملک میں یومیہ ایک لاکھ معالات سامنے آئیں گے جبکہ مئی میں دوسری لہر کے شباب پر رہنے کے دوران یومیہ چار لاکھ معاملات سامنے آرہے تھے ۔ دوسری لہر میں ہزاروں لوگوں کی موت ہوگئی اور کئی لاکھ لوگ متاثر ہوئے ۔

      اگروال نے ٹویٹ کیا : اگر نیا میوٹیشن نہیں آتا ہے تو جوں کی توں صورتحال برقرار رہے گی اور ستمبر تک اگر پچاس فیصد سے زیادہ انفیکشسیس میوٹیشن سامنے آتا ہے تو نیا اسٹرین سامنے آئے گا ۔ آپ دیکھ سکتے ہیں کہ نئے اسٹرین سے ہی تیسری لہر آئے گی اور اس صورت میں نئے معاملات بڑھ کر یومیہ ایک لاکھ ہوجائیں گے ۔

      گزشتہ ماہ ماڈل کے مطابق بتایا گیا تھا کہ تیسری لہر اکتوبر اور نومبر کے درمیان میں شباب پر ہوگی اور روزانہ معاملات یومیہ ڈیڑھ لاکھ سے دو لاکھ کے درمیان ہوں گے ۔ اگر سارس کوو 2 کا زیادہ متعدی میوٹیشن ہوتا ہے ۔ بہر حال ڈیلٹا سے زیادہ متعدی میوٹیشن نہیں آیا ۔

      گزشتہ ہفتہ کا اندازہ بھی اسی طرح کا تھا ، لیکن نئے اندازہ میں روزانہ معاملات کی تعداد کم ہو کر ایک سے ڈیڑھ لاکھ کی گئی ہے ۔ اگروال نے کہا کہ تازہ اعداد و شمار میں جولائی اور اگست میں ہوئے ٹیکہ کاری اور سیرو سروے کو بھی شامل کیا گیا ہے ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: