ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

نوے کروڑ ڈیبٹ۔ کریڈٹ کارڈ پر خطرہ! اس وجہ سے بند ہو سکتی ہے پیمنٹ

اگر ڈیبٹ کارڈ، کریڈٹ کارڈ پیمنٹ سسٹم بند کر دیا جاتا ہے تو اس کے نتیجے میں تقریبا 90 کروڑ ڈیبٹ / کریڈٹ کارڈ پر اثر پڑ سکتا ہے

  • Share this:
نوے کروڑ ڈیبٹ۔ کریڈٹ کارڈ پر خطرہ! اس وجہ سے بند ہو سکتی ہے پیمنٹ
نوے کروڑ کارڈ پر خطرہ

ڈیبٹ اور کریڈٹ کارڈ کے ذریعہ ہونے والے آن لائن پیمنٹ سسٹم پر خطرہ منڈلا رہا ہے۔ اس کے پیچھے بنیادی وجہ آر بی آئی کا وہ آرڈر ہے جس میں کہا گیا ہے کہ  غیر ملکی کمپنیاں 15 اکتوبر تک بھارت کے گاہکوں کا ڈیٹا صرف بھارت میں اسٹور کرنا شروع کر دیں۔  حالانکہ، اس معاملے کو لے کر کمپنیوں نے وزیر خزانہ سے ملاقات کر رعایت کا مطالبہ کیا ہے۔ آپ کو بتا دیں کہ ملک میں زیادہ تر ڈیبٹ اور کریڈٹ کارڈ ویزا، ماسٹر کارڈ کے استعمال ہوتے ہیں۔ ایسے میں اگر ڈیٹا اسٹور کو لے کر بات نہیں بنی تو آن لائن پیمنٹ کرنے میں دشواری ہو سکتی ہے۔ لہذا، ڈیبٹ اور کریڈٹ کارڈ سے پیمنٹ نہیں ہو پائے گا۔


نوے کروڑ کارڈ پر خطرہ! اگر ڈیبٹ کارڈ، کریڈٹ کارڈ پیمنٹ سسٹم بند کر دیا جاتا ہے تو اس کے نتیجے میں تقریبا 90 کروڑ ڈیبٹ / کریڈٹ کارڈ پر اثر پڑ سکتا ہے۔ غیر ملکی کمپنیوں کے دوسرے گیٹ وے بھی بند ہونے کا خطرہ بڑھ جائے گا، جس کے باعث کمپنیوں نے ریزرو بینک سے بھی رعایت کی مانگ کی ہے۔ اقتصادی معاملات کے سیکرٹری نے آر بی آئی کو ایک خط لکھا تھا، لیکن آر بی آئی کی طرف سے کمپنیوں کو چھوٹ نہیں ملی ہے۔


یہ ہے بڑی ٹنشن- ویزا، ماسٹرکارڈ، گوگل کے نمائندے نے وزیر مالیات سے ملاقات کر ڈیٹا اسٹور کے لئے مزید وقت طلب کیا ہے۔ آر بی آئی نے 15 اکتوبر تک ڈیٹا اسٹور کرنے کے لئے وقت دیا ہے، لیکن کمپنیاں 15 اکتوبر سے ڈیٹا اسٹور کرنے کی اہل نہیں ہیں۔ کمپنیوں کا کہنا ہے کہ ڈیٹا اسٹور کرنے میں تقریبا دو سال کا عرصہ درکار ہے۔

First published: Oct 06, 2018 12:12 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading