ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

تھانے کے ٹوائلیٹ میں لگے سی سی ٹی وی کیمرے کو توڑ کر شخص نے کر ڈالی ایسی حرکت

گرفتار بدمعاش نے تھانے کے ٹوائلیٹ میں لگے سی سی ٹی وی کیمرے کو توڑ دیا اور جم کر ہنگامہ مچایا۔

  • Share this:
تھانے کے ٹوائلیٹ میں لگے سی سی ٹی وی کیمرے کو توڑ کر شخص نے کر ڈالی ایسی حرکت
گرفتار بدمعاش نے تھانے کے ٹوائلیٹ میں لگے سی سی ٹی وی کیمرے کو توڑ دیا اور جم کر ہنگامہ مچایا۔

عام طور پر فلموں میں ایسا  دیکھا جاتا ہے کہ کوئی مجرم پکڑے جانے کے بعد پولیس افسر کو پہلے اس کی حیثیت بتاتا ہے اور پھر جان سے مارنے کی دھمکی دیتا ہے۔ بہار کے آرا شہر (Ara News)  میں حقیقت میں ایسا ہی کچھ ہوا ہے۔ لاک اپ میں بند کرنے کے دوران ایک مجرم نے دروغہ کو نہ صرف دھمکایا بلکہ جیل سے چھوٹنے کے بعد جان سے مارنے کی دھمکی بھی دے ڈالی۔ معاملہ نگر تھانہ علاقے کے موتی ٹولا کا ہے جہاں ایک بدماعش کو چیتا ٹیم نے ہتھیار کے ساتھ گرفتار کیا۔ اس کے بعد اس بدمعاش کو نگر تھانہ لایا گیا جہاں اس نے جم کر ہنگامہ مچایا اور اس کے بعد نگر تھانہ کے ایس آئی منوج کمار کو جان سے مارنے کی دھمکی تک ڈالی۔


دراصل بھوجپور ضلع میں جرائم پر قابو رکھنے کیلئے ایس پی راکیش کمار دبے نے چیتا ٹیم کی تشکیل کی ہے جو شہر کے ہر ایک چوراہے پر گشتی کرتے ہوئے جرائم پر کنٹرول کرے گی۔ ٹیم کے ذڑیعے شہر میں گشتی کی جا رہی تھی تبھی پولیس نے نگر تھانہ کے امبیڈکر نگر میں ایک بدمعاش کو سرعام ہتھیار لہراتے ہوئے ہنگامہ کرتے دیکھا۔ اسے فورا ہی گرفتار کر لیا گیا۔ گرفتار بدمعاش موتی ٹولا کا مقامی دیویندر عرف بڑبکوا ہے جس کو چیتا ٹیم نے گرفتار کیا۔ گرفتار کرکے بدمعاش دیویندر کو نگر تھانہ لایا گیا تو اس نے تھانہ میں شور مچانا شروع کر دیا۔


گرفتار بدمعاش نے تھانے کے ٹوائلیٹ میں لگے سی سی ٹی وی کیمرے کو توڑ دیا اور جم کر ہنگامہ مچایا۔ اس کے بعد 6-7 پولیس اہلکار کی مدد سے بدمعاش کو پکڑا گیا۔ اسی دوران ہی اس نے سب انسپیکٹر منوج کمار جو جیلس سے نکلتے ہی گولی مارنے ٹھوک دینے کی دھمکی دے ڈالی۔ اس نے کہا کہ جیل سے جب بھی نکلوں گا سب سے تم کو گولی ماروں گا۔ پولیس نے بتایا کہ شخص کے پاس سے پستول 7.65 بور کی اور زندہ کارتوس برآمد کیا گیا ہے۔ اس پر آرمس ایکٹ کے تحت درج کرکے جیل بھیج دیا گیا ہے۔ پکڑے گئے بدمعاش کے بارے جانکاری جٹانے میں پولیس لگ گئی ہے۔


رپورٹ: ابھینے پرکاش

 
Published by: Sana Naeem
First published: Jun 26, 2021 09:45 AM IST