உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    شدید ہوا سمندری طوفان گلاب ، آندھرا میں طوفان سے دو ماہی گیروں کی موت ، ایک لاپتہ

    شدید ہوا سمندری طوفان گلاب ، آندھرا میں طوفان سے دو ماہی گیروں کی موت ، ایک لاپتہ ۔ فائل فوٹو ۔

    شدید ہوا سمندری طوفان گلاب ، آندھرا میں طوفان سے دو ماہی گیروں کی موت ، ایک لاپتہ ۔ فائل فوٹو ۔

    Cyclone Gulab Landfall Update: وزیر اعظم نریندر مودی نے اتوار کو اوڈیشہ کے وزیر اعلی نوین پٹنائک اور آندھرا پردیش کے وزیر اعلی وائی ایس جگن موہن ریڈی کے ساتھ خلیج بنگال میں سمندری طوفان ’گلاب‘ سے پیدا ہونے والی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا اور ان کو ہر ممکن مدد کی یقین دہانی کرائی۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Share this:
      نئی دہلی : آندھرا پردیش کے ضلع سری کاکولم سے تعلق رکھنے والے دو ماہی گیروں کی اتوار کی شام خلیج بنگال میں اٹھے طوفان گلاب کی زد میں آنے سے موت ہوگئی جبکہ ایک ابھی تک لاپتہ ہے ۔ وہیں تین دیگر ماہی گیر بحفاظت ساحل پر پہنچنے میں کامیاب ہوگئے اور انہوں نے ریاست کے ماہی گیری کے وزیر ایس اپپالا راجو کو اکوپلی گاؤں سے فون کیا اور خود کے محفوظ ہونے کی جانکاری دی ۔  وہیں  محکمہ موسمیات نے بتایا ہے کہ طوفان نے ساحل پر دستک دینی شروع کردی ہے اور یہ اگلے کچھ گھنٹوں میں کلنگپٹنم سے 25 کلو میٹر شمار میں ساحل سے گزرے گا ۔

      جانکاری کے مطابق پلاسا کے چھ ماہی گیر دو دن قبل اڈیشہ سے نئی کشتی خریدنے کے بعد اپنے آبائی گاؤں لوٹ رہے تھے ، تبھی وہ طوفان کی زد میں آگئے ۔ کشتی میں موجود چھ ماہی گیروں میں سے ایک نے گاؤں میں فون کر کے بتایا کہ کشتی اپنا توازن کھو چکی ہے اور پانچ لوگ سمندر میں لاپتہ ہوگئے ہیں ۔ بعد میں اس کا فون بھی بند آنے لگا ، جس کی وجہ سے خدشہ پیدا ہوگیا کہ وہ بھی لاپتہ ہوگیا ہے ۔ حالانکہ تین ماہی گیر تیر کر محفوظ ساحل پر آگئے جبکہ دو ماہی گیروں کی موت ہوگئی ۔ گاوں میں فون کرکے خبر دینے والا ماہی گیر اب بھی لاپتہ ہے ۔


      وزیر اعظم مودی نے نوین پٹنائیک ، جگن موہن سے بات کی

      دریں اثنا وزیر اعظم نریندر مودی نے اتوار کو اوڈیشہ کے وزیر اعلی نوین پٹنائک اور آندھرا پردیش کے وزیر اعلی وائی ایس جگن موہن ریڈی کے ساتھ خلیج بنگال میں سمندری طوفان ’گلاب‘ سے پیدا ہونے والی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا اور ان کو ہر ممکن مدد کی یقین دہانی کرائی۔ دو الگ الگ ٹویٹس میں وزیر اعظم مودی نے ان ساحلی ریاستوں کے لوگوں کی سلامتی کی دعاکی ہے۔

      ایک ٹویٹ میں وزیر اعظم نے کہا کہ چیف منسٹر نوین پٹنائک کے ساتھ ریاست کے کچھ حصوں میں طوفان کی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا۔ مرکز نے اس صورتحال پر قابو پانے میں ہر ممکن مدد کی یقین دہانی کرائی۔ میں سب کی سلامتی کے لیے دعا کرتا ہوں۔ وزیر اعظم مودی نے کہا کہ انہوں نے آندھرا پردیش کے وزیر اعلیٰ وائی ایس جگن موہن ریڈی سے بھی بات کی اور طوفان 'گلاب کے تناظر میں پیدا ہونے والی صورتحال کا جائزہ لیا۔

      دریں اثنا ، وزارت دفاع کی طرف سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ ہندوستانی بحریہ کے جہاز اور بحری جہاز سائیکلونک طوفان 'گلاب کے اثرات سے بچاؤ اور راحت کے لیے تیار کھڑے ہیں ۔

      او ڈی آر اے ایف کی 42 اور این ڈی آر ایف کی 24 ٹیمیں تعینات

      ادھر سمندری طوفان کے پیش نظر اڈیشہ ڈیزاسٹر مینجمنٹ فورس (او ڈی آر اے ایف) کی 42 ٹیمیں اور نیشنل ڈیزاسٹر ریلیف فورس (این ڈی آر ایف) کی 24 ٹیموں کے علاوہ محکمہ فایر بریگیڈ کی 102 ٹیمیں تعینات کی گئی ہیں ۔ اڈیشہ کے چیف اسپیشل ریلیف کمشنر پی کے جینا کے مطابق ہندوستانی محکمہ موسمیات کے اندازے کے مطابق اس کا زیادہ اثر کندھمال ، گنجم ، رائے گڑھ ، ملکان گیری ، کوراپوٹ ، نبرنگ پور اور گجپتی اضلاع میں رہے گا۔ ان سات اضلاع کے علاوہ نیاگڑھ ضلع میں بھی ریلیف اور ریسکیو ٹیمیں تعینات کی گئی ہیں۔

      انہوں نے ان سات اضلاع کے کلکٹروں کو چوکس رہنے کی ہدایت دی ہے۔ محکمہ موسمیات نے کہا ہے کہ ان سات اضلاع میں ہوا کی رفتار کم رہے گی ۔ تاہم بہت زیادہ بارش کا امکان ہے۔ جینا نے کہا کہ شدید بارشوں کی وجہ سے رسہی کولیا ، ناگاؤلی اور ونشدھرا ندیوں میں سیلاب جیسی صورتحال اور رائے گڑھ اور گجپتی اضلاع میں لینڈ سلائیڈنگ ہوسکتی ہے۔ اس کے علاوہ دیگر مقامات پر چھوٹے درخت اکھڑ سکتے ہیں۔

      ضلع گجپتی میں احتیاطی تدابیر کے طور پر انتظامیہ نے تمام افسران کی دو دن کی چھٹیاں منسوخ کر دی ہیں اور ان سے کہا گیا ہے کہ وہ ضلعی ہیڈ کوارٹر کی اجازت کے بغیر کہیں نہ جائیں۔ اس شدید سمندری طوفان کے پیش نظر ماہی گیروں کو مشورہ دیا گیا ہے کہ وہ 27 ستمبر تک سمندر میں ماہی گیری کے لیے نہ جائیں ۔

      نیوز ایجنسی یو این آئی کے ان پٹ کے ساتھ ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: