உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    دادری سانحہ سے متعلق نریندرمودی کے بیان پر دگ وجے اورلالو یادو کا طنز

    نئی دہلی۔ دادری سانحہ پر وزیر اعظم نریندر مودی نے اپنی طویل خاموشی توڑتے ہوئے اسے المناک قرار دیا اور کہا کہ بی جے پی اس طرح کے واقعات کی حمایت نہیں کرتی ہے۔

    نئی دہلی۔ دادری سانحہ پر وزیر اعظم نریندر مودی نے اپنی طویل خاموشی توڑتے ہوئے اسے المناک قرار دیا اور کہا کہ بی جے پی اس طرح کے واقعات کی حمایت نہیں کرتی ہے۔

    نئی دہلی۔ دادری سانحہ پر وزیر اعظم نریندر مودی نے اپنی طویل خاموشی توڑتے ہوئے اسے المناک قرار دیا اور کہا کہ بی جے پی اس طرح کے واقعات کی حمایت نہیں کرتی ہے۔

    • IBN7
    • Last Updated :
    • Share this:

      نئی دہلی۔ دادری سانحہ پر وزیر اعظم نریندر مودی نے اپنی طویل خاموشی توڑتے ہوئے اسے المناک قرار دیا اور کہا کہ بی جے پی اس طرح کے واقعات کی حمایت نہیں کرتی ہے۔ وزیر اعظم کے اس بیان پراپوزیشن نے طنزکیا ہے۔ کانگریس لیڈر دگ وجے سنگھ نے کہا ہے کہ اگر وزیر اعظم دکھی ہیں تو کارروائی کیوں نہیں کرتے۔


      دگ وجے سنگھ نے ٹویٹ کیا کہ اگر مودی دادری کے واقعہ سے دکھی ہیں تو جن بی جے پی لیڈروں نے دادری واقعہ کی بالواسطہ حمایت کی ہے ان کے خلاف کارروائی کیوں نہیں کرتے؟


      وہیں آر جے ڈی کے صدر لالو یادو نے بھی وزیر اعظم پر حملہ بولا۔ لالو نے کہا ہے کہ مودی ہوں یا آر ایس ایس، یہ شام کو کچھ بولیں گے اور صبح پلٹ جائیں گے۔ مودی کے اس معاملے میں چپی توڑنے پر انہوں نے کہا کہ مودی نے کیا خاموشی توڑی ہے؟ تم کو مار پیٹ کر ہم ساری بول دیں۔ یہ کوئی طریقہ ہے؟


      بتا دیں کہ اترپردیش کے دادری میں گائے کا گوشت کھانے کی افواہ کی وجہ سے اخلاق کو قتل کردیا گیا تھا۔ اس واقعہ کی وجہ سے بی جے پی حکومت کی کافی کرکری ہوئی ہے۔

      First published: