ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

نوٹوں پر پابندی کا اثر اب تھوک منڈیوں پر بھی، مہنگی ہو سکتی ہیں سبزیاں

نوٹ کی چوٹ سے اب سبزی کی بھی قلت ہونے والی ہے۔ پیسہ نہ ہونے پر تھوک تاجروں نے سبزی کی سپلائی روک دی ہے۔

  • IBN Khabar
  • Last Updated: Nov 12, 2016 02:15 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
نوٹوں پر پابندی کا اثر اب تھوک منڈیوں پر بھی، مہنگی ہو سکتی ہیں سبزیاں
نوٹ کی چوٹ سے اب سبزی کی بھی قلت ہونے والی ہے۔ پیسہ نہ ہونے پر تھوک تاجروں نے سبزی کی سپلائی روک دی ہے۔

نئی دہلی۔ نوٹ کی چوٹ سے اب سبزی کی بھی قلت ہونے والی ہے۔ پیسہ نہ ہونے پر تھوک تاجروں نے سبزی کی سپلائی روک دی ہے۔ جو تھوڑی بہت دکان اور گوداموں میں ہے اسے ہی بیچ کر شٹر میں تالا لگانے کا فیصلہ لے لیا گیا ہے۔ وجہ ہے دكانداری گھٹ کر 25 فیصد رہ گئی ہے۔ ادھار نہ فروخت کرنے پر کچا مال خراب ہو رہا ہے۔ اپنے ہی ہاتھوں سے نقد خریدا گیا سامان ادھار میں کب تک لٹائیں گے۔ اسی کے چلتے باہر سے مال نہ منگانے کا فیصلہ لیا گیا ہے۔ مارکیٹ کے حالات ٹھیک نہیں ہونے تک دکانیں بند رکھی جائیں گی۔


اس کا اثر اب تھوک اور ریٹیل مارکیٹ میں بھی نظر آنے لگا ہے۔ نیوز 18 انڈیا ڈاٹ کام کی ٹیم نے آج صبح دریا گنج سبزی منڈی کے حالات کا جائزہ لیا۔ منڈی میں سبزی کے کاروبار سے منسلک کچھ لوگوں سے بات بھی کی۔ تاجروں کا دعوی ہے کہ اگلے دو چار دن میں سبزی منڈی کے حالات خراب ہونے والے ہیں۔ منڈی میں سبزی آنا بند ہو جائے گی۔ دکاندار دکان نہیں کھولیں گے۔ یہ فیصلہ دریا گنج سبزی منڈی میں بیٹھے دکانداروں نے لیا ہے۔


پیاز کے تھوک تاجر لیاقت کا کہنا ہے کہ گاہکوں کے پاس نوٹ نہیں ہیں، اب ایسے میں ہم سامان کسے فروخت کریں۔ جو ہوٹل والے ایک ہزار روپے کا مال خریدتے تھے وہ اب 250-300 کا بھی مشکل سے لے جا رہے ہیں۔ ہم ہاتھ پر ہاتھ رکھ کر بیٹھے ہیں۔ ادھار بھی ہم کتنا فروخت کریں گے۔ دوسری بات یہ ہے کہ مال منگانے کے لئے بھی رقم چاہئے۔ ٹرک کا کرایہ بھی دینا ہے۔ بینک جاؤ تو وہاں صرف چار ہزار روپے مل رہے ہیں۔


store

اب آپ ہی بتائیے کہ کیا چار ہزار روپے میں ایک ٹرک مال آ جائے گا۔ 80 ہزار روپے تو مال کا کرایہ لگتا ہے۔ رکشے میں سبزی ڈھونے والا رنكو بھی اپنا 80 فیصد تک کام ادھار میں کر رہا ہے۔ منڈی کے ایک کنارے ہی ٹماٹر فروخت کرنے والے یونس کا کہنا ہے کہ نوٹ کے چکر میں ادھار بھی نہ بیچیں تو ٹماٹر خراب ہو جائے گا۔ اس لئے جاننے والوں کو ادھار فروخت کر رہے ہیں۔ منڈی کی طرف دیکھیں تو چار پانچ دن پہلے کے مقابلے بھیڑ بہت کم ہے۔ کسانوں نے خود سے بھی ادھار کی وجہ سے سبزیوں کی سپلائی روک دی ہے۔
First published: Nov 12, 2016 02:11 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading