ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

شیلادکشت نے بلائی ہارون یوسف سمیت تینوں کارگزارصدورکی میٹنگ، عام آدمی پارٹی سے اتحاد پرغوروخوض

کانگریس نے 11 مارچ کوعام آدمی پارٹی کے ساتھ اتحاد کے تمام راستے بند کردیئے تھے۔ کانگریس صدرراہل گاندی نے پیرکوپارٹی کارکنان سے کہا کہ انہیں دہلی کی سبھی ساتوں سیٹوں پرجیت یقینی کرنی ہے۔ 

  • Share this:
شیلادکشت نے بلائی ہارون یوسف سمیت تینوں کارگزارصدورکی میٹنگ، عام آدمی پارٹی سے اتحاد پرغوروخوض
دہلی پردیش کانگریس صدر شیلا دکشت نے اتحاد پرغوروخوض کے لئے تینوں کارگزار صدورکی میٹنگ بلائی ہے۔ فائل فوٹو

دہلی پردیش کانگریس صدرشیلا دکشت نےتینوں ریاستی کارگزارصدورکی میٹنگ بلائی ہے، جس میں ہارون یوسف، راجیش للوٹھیا اوردیویندریادو موجود ہیں۔ بتایا جارہا ہے کہ اس میٹنگ میں عام آدمی پارٹی کے ساتھ دہلی میں اتحاد کولےکرغوروخوض ہوسکتا ہے۔ راہل گاندھی کی طرف سے انکارکے بعد بھی ابھی تک دہلی میں عام آدمی پارٹی کےساتھ کانگریس کواتحاد کولے کرقیاس آرائیوں کا سلسلہ چل رہا ہے۔


واضح رہے کہ 11 مارچ کوکانگریس نےعام آدمی پارٹی کے ساتھ اتحاد کے سبھی راستے بند کردیئے تھے۔ کانگریس صدرراہل گاندھی نے پیرکوپارٹی کارکنان سےکہا کہ انہیں دہلی کی سبھی ساتوں سیٹوں پرجیت یقینی کرنی ہے۔ الیکشن کمیشن کی طرف سے لوک سبھا الیکشن کی تاریخوں کے اعلان کےایک دن بعد راہل گاندھی نے بوتھ کارکنان سے کہا "بوتھ کارکنان کویہ یقینی کرنا ہوگا کہ کانگریس دہلی کی سبھی 7 سیٹیں جیت لے"۔


حالانکہ اس کے بعد بھی تنظیم کے امکانات برقراررہیں، جہاں اروند کیجریوال مسلسل راہل گاندھی کودہلی اورہریانہ میں اتحاد کرنے کی تجویزدیتے رہے۔ وہیں کانگریس کی طرف سے بھی عام آدمی پارٹی کے ساتھ اتحاد کولے کرسروے کرایا گیا۔ حالانکہ شیلا دکشت اس اتحاد کے لئے شروع سے ہی خلاف رہیں۔ فی الحال شیلا دکشت کی میٹنگ میں کیا فیصلہ ہوتا ہے، یہ دیکھنا دلچسپ ہوگا۔


وہیں دوسری بات یہ بھی سامنے آرہی ہےکہ  اتحاد کو لےکرکانگریس دو حصوں میں تقسیم ہوگئی ہے۔ کانگریس کے دہلی کے انچارج پی سی چاکو کا کہنا ہے کہ پارٹی کے زیادہ تر لیڈران اتحاد کے حق میں ہیں اور ان کا ماننا ہے کہ اتحاد بی جے پی کو دہلی میں شکست دینے میں معاون ہو گا۔ نیوز ایجنسی اے این آئی سے بات کرتے ہوئے چاکو نے کہا ’’ جہاں تک میں جانتا ہوں دہلی کے سینئر لیڈران کی رائے ہے کہ بی جے پی کو شکست دینا پارٹی کی پہلی ذمہ داری ہے۔ زیادہ تر لیڈران کا کہنا ہے کہ اس کے لئے ہمیں آپ سے اتحاد کر لینا چاہئے‘‘۔ وہیں شیلا دکشت اتحاد کے پوری طرح خلاف بتائی جارہی ہیں۔
First published: Mar 19, 2019 02:21 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading