உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    نوٹ تبدیل کرنے کیلئے بینک پہنچے راہل گاندھی ، بھیڑ کے ساتھ قطار میں کھڑے نظر آئے

    photo ANI

    photo ANI

    کانگریس کے نائب صدر راہل گاندھی جمعہ کو پارلیمنٹ اسٹریٹ میں واقع اسٹیٹ بینک آف انڈیا (ایس بی آئی) کی برانچ پہنچے اور عام لوگوں کے ساتھ قطار میں لگ گئے

    • Pradesh18
    • Last Updated :
    • Share this:
      نئی دہلی : کانگریس کے نائب صدر راہل گاندھی جمعہ کو پارلیمنٹ اسٹریٹ میں واقع اسٹیٹ بینک آف انڈیا (ایس بی آئی) کی برانچ پہنچے اور عام لوگوں کے ساتھ قطار میں لگ گئے ۔ راہل گاندھی سے جب میڈیا نے سوال کیا تو انہوں نے کہا کہ وہ اپنے نوٹ بدلوانے کے لئے یہاں آئے ہیں۔ راہل کے ساتھ کانگریس کی لیڈر سشمتا بھی تھیں۔
      راہل شام 4 بجے ایس بی آئی برانچ پہنچے۔ یہاں پہلے سے قطار میں کھڑے لوگوں کے درمیان راہل نے کہا کہ یہاں دیکھئے، کیا کوئی سوٹ بوٹ والا قطار میں کھڑا ہے؟ تمام عام آدمی یہاں ہیں، کوئی بھی پیسے والا نہیں ہے، قطار میں کھڑے راہل گاندھی نے کہا کہ ایسا کر کے وہ عام آدمی کے دکھ میں شریک ہو رہے ہیں، حکومت ان کے لیے ہونی چاہئے۔
      دریں اثنا راہل گاندھی کے بینک پہنچنے کے بعد لوگ لائنیں توڑ کر ان کے ساتھ سیلفی لینے لگے۔ لوگوں کے درمیان ایک بڑے لیڈر سے ملنے کی خوشی بھی صاف طور پر دکھائی دے رہی تھی ، لیکن انہوں نے تسلیم کیا کہ راہل کے بینک آنے سے کچھ تبدیلی تو نہیں آئی۔
      راہل نے اس کے بعد میڈیا سے یہ بھی کہا کہ بھیا مجھے قطار میں کھڑا رہنے دیجئے ... بعد میں بات کروں گا۔ انہوں نے کہا کہ غریب کو تکلیف ہو رہی ہے، میں یہاں 4 ہزار روپے تبدیل کروانے آیا ہوں، جب میں یہاں پہنچا تو لوگوں کو اندر کر دیا گیا۔ میں لائن میں کھڑا ہونا چاہتا ہوں، آپ کو یہ سمجھ میں نہیں آئے گا، نہ میڈیا کو سمجھ میں آئے گا، نہ وزیر اعظم کو سمجھ میں آئے گا۔
      بینک میں ایک شخص نے کہا کہ اب راہل گاندھی آ گئے ہیں ، تو بینک والے یہ دکھانے کی کوشش کر رہے ہیں کہ سب ٹھیک ہے۔ وہیں دوسرے شخص نے کہا کہ راہل گاندھی کے آنے سے مشکلات مزید بڑھ گئی ۔ سیاستدانوں کو نہیں آنا چاہئے۔ ہمارا وقت خراب ہو رہا ہے۔
      First published: