உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    پرائیویٹ اسکولوں پر نکیل کسے گی کیجریوال حکومت ، بل تیار

    نئی دہلی : دہلی حکومت نے پرائیویٹ اسکولوں کی من مانی پر نکیل کسنے کے لئے دہلی اسکول ایجوکیشن ترمیمی بل کا مسودہ تیار کرلیا ہے۔

    نئی دہلی : دہلی حکومت نے پرائیویٹ اسکولوں کی من مانی پر نکیل کسنے کے لئے دہلی اسکول ایجوکیشن ترمیمی بل کا مسودہ تیار کرلیا ہے۔

    نئی دہلی : دہلی حکومت نے پرائیویٹ اسکولوں کی من مانی پر نکیل کسنے کے لئے دہلی اسکول ایجوکیشن ترمیمی بل کا مسودہ تیار کرلیا ہے۔

    • News18
    • Last Updated :
    • Share this:

      نئی دہلی : دہلی حکومت نے پرائیویٹ اسکولوں کی من مانی پر نکیل کسنے کے لئے دہلی اسکول ایجوکیشن ترمیمی بل کا مسودہ تیار کرلیا ہے۔ بل کے مطابق نجی اسکول اب نہ تو بچوں سے کوئی کپیٹیشن فیس لے سکیں گے اور نہ ہی داخلہ کے وقت کوئی انٹرویو ہوگا ۔ اس کے ساتھ ہی ای ڈبليوایس کوٹے کے تحت داخلہ بھی اسکول اپنی سطح پر نہیں کریں گے بلکہ حکومت لاٹری سسٹم کے ذریعے بچوں کا انتخاب کرکے ان کے نام اسکولوں کو بھیجے گی۔


      وزیر اعلی اروند کیجریوال اور نائب وزیر اعلی منیش سسودیا نے ایک پریس کانفرنس میں بتایا کہ کوئی بھی اسکول براہ راست یا بالواسطہ طور پر یا کسی بھی طرح کی کپیٹیشن فیس لے گا تو اس کے خلاف کارروائی ہوگی۔ اس پر کپیٹیشن فیس کا 10 گنا یا 5 لاکھ روپے تک جرمانہ عاید کیا جائے گا اور ساتھ ہی ساتھ اس میں تین سال کی سزا کا بھی بندوبست کیا گیا ہے۔ نرسری داخلہ میں کسی بچے یا والدین کا انٹرویو لینے پر بھی 5 لاکھ روپے جا جرمانہ کیا جائے گا ۔ نو ڈٹینشن پالیسی یعنی 8 ویں تک بچے کو فیل نہ کرنے کی پالیسی ختم ہوگی ، کیونکہ اس کے بہت خراب نتائج آ رہے ہیں۔


      پرائیویٹ اسکولوں کے اکاؤنٹس کا ویریفکیشن ہوگا ، جو ایک ریٹائرڈ جج کی کمیٹی کرے گی ، جس میں چارٹرڈ اکاؤنٹینٹس بھی شامل ہوں گے۔ گڑبڑی پائی جانے کی صورت میں کمیٹی کے پاس بطور سزا اس بات کا اختیارہوگا کہ وہ اسکول کی اگلے سال کی فیس مقرر کرے۔ علاوہ ازیں اس بات کو بھی یقینی بنایا جائے گا کہ اسکول کی فیس اور ٹیچروں کی سیلری میں مساوات ہو۔ تمام اسکولوں کے اکاؤنٹس اور فیس اسٹرکچر حکومت کی ویب سائٹ پر ڈالی جائے گی۔


      اس کے علاوہ ای ڈبلیو ایس کوٹے کے لئے حکومت آن لائن لاٹری نکالے گی اور اسکول کو بتایا جائے گا کہ اس کو کن بچوں کا داخلہ کرنا ہے یعنی اب اسکول کے پاس ای ڈبلیو ایس کوٹے کے تحت داخلہ لینے کا حق نہیں ہوگا۔

      First published: