உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Petrol and Diesel Vehicles: دہلی میں پٹرول۔ڈیزل گاڑیوں کی انٹری پر پابندی، صرف سی این جی۔الیکٹرک گاڑیوں کو اجازت

    دہلی کے وزیر ماحولیات گوپال رائے نے اعلان کیا ہے کہ 27 نومبر سے الیکٹرک اور سی این جی گاڑیوں کو داخلہ ملے گا، جو ضروری خدمات میں مصروف ہیں۔

    دہلی کے وزیر ماحولیات گوپال رائے نے اعلان کیا ہے کہ 27 نومبر سے الیکٹرک اور سی این جی گاڑیوں کو داخلہ ملے گا، جو ضروری خدمات میں مصروف ہیں۔

    دہلی کے وزیر ماحولیات گوپال رائے نے اعلان کیا ہے کہ 27 نومبر سے الیکٹرک اور سی این جی گاڑیوں کو داخلہ ملے گا، جو ضروری خدمات میں مصروف ہیں۔

    • Share this:
      Delhi Air Pollution Update News: ملک کی قومی راجدھانی دہلی میں ہوا کا معیار  (Delhi Air Quality)  بہتر ہوا ہے  لیکن اس کے باوجود یہ خراب زمرے میں ہے۔ دریں اثنا، دہلی کے وزیر ماحولیات گوپال رائے Gopal Rai) نے اعلان کیا ہے کہ 27 نومبر سے الیکٹرک اور سی این جی (CNG)  گاڑیوں کی انٹری ملے گی، جو ضروری خدمات میں مصروف ہیں۔ اس کے علاوہ پیٹرول اور ڈیزل گاڑیوں  (Petrol and Diesel Vehicles)  کےگاڑیوں کی انٹری پر 3 دسمبر تک پابندی رہے گی۔ اس کے ساتھ ہی آلودگی میں بہتری کو دیکھتے ہوئے دہلی کابینہ نے اب 29 نومبر سے اسکول دوبارہ کھولنے کا فیصلہ کیا ہے۔

      اس کے علاوہ گوپال رائے نے کہا کہ ان جگہوں کے لیے بسیں چلائی جائیں گی جہاں سے دہلی حکومت کے زیادہ سے زیادہ ملازمین آتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ حکومت دہلی سکریٹریٹ سے آئی ٹی او اور اندرا پرستھ میٹرو اسٹیشنوں تک اپنے ملازمین کے لیے شٹل بس سروس بھی شروع کرے گی۔ جبکہ گزشتہ تین دنوں میں ہوا کے معیار میں بہتری آئی ہے۔ شہر کا AQI دیوالی سے پہلے کے دنوں جیسا ہے۔

      اس سے پہلے دہلی میں آلودگی کی بڑھتی ہوئی سطح کی وجہ سے نئیگاڑیوں کی انٹری پر روک  لگا دیا گیا تھا۔ اس کے علاوہ 13 نومبر کو دہلی حکومت نے شہر کے تمام تعلیمی اداروں کو بند کرنے اور تعمیرات اور انہدام کی سرگرمیوں پر پابندی لگانے کا حکم دیا۔ ساتھ ہی ساتھ اس کے ملازمین سے کہا گیا تھا کہ وہ گھر سے کام کریں تاکہ فضائی آلودگی سے نمٹنے اور اس کے صحت پر اثرات کو کم کیا جا سکے۔ بتا دیں کہ 17 نومبر کو دہلی میں غیر ضروری سامان لے جانے والے ٹرکوں کے داخلے پر پابندی لگانے کے علاوہ پابندیوں کو بڑھا دیا گیا تھا۔

      بتادیں کہ ہوا کے معیار میں بہتری اور مزدوروں کو ہونے والی تکلیف کے پیش نظر تعمیرات اور انہدام کی سرگرمیوں پر سے پابندی پیر کو ہٹا دی گئی تھی، لیکن قومی راجدھانی دہلی اور این سی آر میں فضائی آلودگی کے پیش نظر سپریم کورٹ نے دوبارہ پابندیاں دوبارہ شروع کر دیں۔ تعمیراتی کاموں پر پابندی ہے۔ عدالت نے الیکٹریکل، کارپینٹری، انٹیریئر ورک اور پلمبنگ کے کاموں پر چھوٹ  دی ہے۔ ویسے، فضائی آلودگی کے مسئلے سے نمٹنے کے لیے سپریم کورٹ نے پہلے ہی دہلی-این سی آر میں 15 سال سے زیادہ پرانی پٹرول گاڑیوں اور 10 سال سے زیادہ پرانی ڈیزل گاڑیوں پر پابندی لگا دی ہے۔

       
      Published by:Sana Naeem
      First published: