ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

شکور بستی معاملے میں دہلی سرکار، پولس اور ریلوے کو ہائی کورٹ کا نوٹس

نئی دہلی۔ شکور بستی میں جھگیاں ہٹانے کے معاملے میں دہلی ہائی کورٹ نے دہلی سرکار، دہلی پولس اور وزارت ریلوے کو نوٹس جاری کرکے جواب طلب کیا ہے۔

  • UNI
  • Last Updated: Dec 15, 2015 08:55 AM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
شکور بستی معاملے میں دہلی سرکار، پولس اور ریلوے کو ہائی کورٹ کا نوٹس
نئی دہلی۔ شکور بستی میں جھگیاں ہٹانے کے معاملے میں دہلی ہائی کورٹ نے دہلی سرکار، دہلی پولس اور وزارت ریلوے کو نوٹس جاری کرکے جواب طلب کیا ہے۔

نئی دہلی۔  شکور بستی میں جھگیاں ہٹانے کے معاملے میں دہلی ہائی کورٹ نے دہلی سرکار، دہلی پولس اور وزارت ریلوے کو نوٹس جاری کرکے جواب طلب کیا ہے۔ عدالت نے پوچھا ہے کہ ایسا کرنے سے پہلے حکومت، پولس اور ریلوے نے اپنی طرف سے کیا انتظامات اور کوششیں کی تھیں، ا ن سب کی وسیع تفصیلات عدالت کو سونپی جائے۔ عدالت نے یہ بھی کہا کہ یہ پوری کارروائي انتہائی غیر انسانی ہے۔


دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال نے کہا ہے کہ اب بغیر بحالی کے انتظام کے کسی اور بستی یا جھگی کو نہیں توڑا جائے گا۔ شکور بستی میں قبضہ ہٹانے کے لئے محکمہ ریلوے اور پولس کی طرف سے کی جانے والی انہدامی کارروائی پر مسٹر کیجریوال پہلے ہی ریلوے اور مرکزی حکومت پر غیر انسانی موقف اپنانے کا الزام لگا چکے ہیں۔ اس دوران چھ ماہ کی ایک بچی کی موت ہو گئی ہے۔ جس کے بعد ریلوے کے وزیر سریش پربھو نے کہا کہ ریلوے پر یہ غلط الزام لگایا جا رہا ہے کہ اس کارروائی کے دوران بچی کی موت ہوئی۔سچ یہ ہے کہ بچی کی موت پہلے ہی ہو چکی تھی۔ مسٹر سریش پربھو نے اس معاملے میں سیاست کرنے کا الزام لگاتے ہوئے کہا کہ وہ اس معاملے میں مسٹر کیجریوال سے بات کریں گے۔ ریلوے کے وزیر نے کہا ہے کہ تجاوزات ہٹانے کے دوران وہاں پولس کی ٹیم موجود تھی ۔ یہ انہدامی کارروائی اچانک نہیں کی گئی تھی۔ اس کے لئے کئی بار نوٹس دیا جا چکا تھا۔

First published: Dec 15, 2015 08:55 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading