ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

نیشنل ہیرالڈ : سونیا اور راہل گاندھی کو بڑی راحت ، نچلی عدالت کا فیصلہ خارج

نئی دہلی : دہلی ہائی کورٹ نے نیشنل ہیرالڈ معاملے میں پٹیالہ ہاؤس کورٹ کے اس فیصلے کو درکنار کرتے ہوئے آج کانگریس صدر سونیا گاندھی اور نائب صدر راہل گاندھی کو بڑی راحت دی

  • UNI
  • Last Updated: Jul 13, 2016 12:18 AM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
نیشنل ہیرالڈ : سونیا اور راہل گاندھی کو بڑی راحت ، نچلی عدالت کا فیصلہ خارج
نئی دہلی : دہلی ہائی کورٹ نے نیشنل ہیرالڈ معاملے میں پٹیالہ ہاؤس کورٹ کے اس فیصلے کو درکنار کرتے ہوئے آج کانگریس صدر سونیا گاندھی اور نائب صدر راہل گاندھی کو بڑی راحت دی

نئی دہلی : دہلی ہائی کورٹ نے نیشنل ہیرالڈ معاملے میں پٹیالہ ہاؤس کورٹ کے اس فیصلے کو درکنار کرتے ہوئے آج کانگریس صدر سونیا گاندھی اور نائب صدر راہل گاندھی کو بڑی راحت دی، جس میں عدالت نے کانگریس سے مالی سال 2010-11 کی اپنی بیلنس شیٹ اور وزارت خزانہ اور كارپوریٹ امور کی وزارت سے متعلق دستاویزات طلب کئے تھے۔

جسٹس پی ایس تیجی نے آج اس معاملے حکم دیا کہ نچلی عدالت کے حکم کو منسوخ کیا جاتا ہے۔ ہائی کورٹ نے زیریں عدالت کے متعلقہ حکم کے خلاف کانگریس لیڈروں کی جانب سے دائر اپیل پر گزشتہ 18 اپریل کو اپنا فیصلہ محفوظ رکھ لیا تھا۔ زیریں عدالت نے نہ صرف کانگریس سے 2010-11 کی بیلنس شیٹ طلب کی تھی، بلکہ وزارت خزانہ اور کارپوریٹ امور کی وزارت سے متعلق دستاویزات بھی طلب کئے تھے۔

بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے لیڈر سبرامنیم سوامی نے پارٹی صدر اور نائب صدر کے علاوہ پارٹی کے سینئر لیڈر موتی لال ووہرا، آسکر فرنانڈیز اور سمن دوبے و ديگر پر دھوکہ دہی اور فنڈ کے غلط استعمال کا الزام لگاتے ہوئے ان کے خلاف پٹیالہ ہاؤس عدالت میں عرضی دائر کی تھی۔ اگرچہ تمام ملزمان نے ڈاکٹر سبرامنیم سوامی کے الزامات کو غلط قرار دیا ہے۔

پٹیالہ ہاؤس عدالت نے گزشتہ سال 26 جون کو دونوں کانگریسی لیڈروں کو سمن جاری کیا تھا۔ ڈاکٹر سوامی کا الزام ہے کہ سونیا گاندھی اور ان کے بیٹے کی 38-فیصد کی حصہ داری والی کمپنی ینگ انڈیا نے نیشنل ہیرالڈ کی ناشر کمپنی ایسوسی جرنلس لمیٹڈ کو غلط طریقے سے حاصل کیا تھا۔ اس حکم کو بعد میں دہلی ہائی کورٹ میں چیلنج کیا گیا تھا۔

First published: Jul 13, 2016 12:18 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading