ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

دہلی ہائی کورٹ نے مرکزی حکومت کو دیا حکم ، کہا : کیسے بھی دہلی کو 490MT آکسیجن دیجئے

جسٹس وپن سانگھی اور جسٹس ریکھا پلی کے بنچ نے کہا کہ "ہم مرکزی حکومت کو ہدایت دیتے ہیں کہ وہ کسی بھی حال میں دہلی کو 490 ٹن آکسیجن کی فراہمی آج ہی یقینی بنائے"۔ جسٹس سانگھی نے مرکز کی جانب سے پیش ہونے والے ایڈیشنل سالیسٹر جنرل چیتن شرما سے کہا کہ "اب پانی سر سے اوپر ہوگیا ہے، اور اب بہت ہوچکا"۔

  • UNI
  • Last Updated: May 01, 2021 07:46 PM IST
  • Share this:
دہلی ہائی کورٹ نے مرکزی حکومت کو دیا حکم ، کہا : کیسے بھی دہلی کو 490MT آکسیجن دیجئے
دہلی ہائی کورٹ نے مرکزی حکومت کو دیا حکم ، کہا : کیسے بھی دہلی کو 490MT آکسیجن دیجئے

نئی دہلی : دہلی ہائی کورٹ نے ہفتہ کے روز مرکزی حکومت کو ہدایت دی کہ وہ دہلی کے لئے مختص 490 ٹن مائع طبی آکسیجن آج ہی فراہم کرے اور ایسا کرنے میں ناکام رہنے پر عدالت اس کے خلاف توہین عدالت کی کارروائی پر غور کر سکتی ہے۔ ہائی کورٹ نے بترا اسپتال میں آکسیجن کی شدید قلت سے متعلق درخواست کی فوری سماعت کرتے ہوئے یہ سخت ہدایت دی ہے۔ سماعت کے دوران اسپتال نے عدالت کو بتایا کہ آکسیجن کی کمی کے سبب اسپتال میں اب تک آٹھ مریضوں کی موت ہوچکی ہے۔


جسٹس وپن سانگھی اور جسٹس ریکھا پلی کے بنچ نے کہا کہ "ہم مرکزی حکومت کو ہدایت دیتے ہیں کہ وہ کسی بھی حال میں دہلی کو 490 ٹن آکسیجن کی فراہمی آج ہی یقینی بنائے"۔ جسٹس سانگھی نے مرکز کی جانب سے پیش ہونے والے ایڈیشنل سالیسٹر جنرل چیتن شرما سے کہا کہ "اب پانی سر سے اوپر ہوگیا ہے، اور اب بہت ہوچکا"۔


جج نے کہا کہ "ہم 490 ٹن سے زیادہ آکسیجن دینے کو نہیں کہہ رہے ہیں۔ آپ نے اسے مختص کردیا ہے۔ اب آپ کے اوپر واجب ہے کہ اس کی فراہمی جلد کریں"۔ عدالت نے کہا کہ مرکزی حکومت نے دہلی کو روزانہ 490 ٹن میڈیکل آکسیجن مختص کیا تھا ، جو صرف کاغذ پر ہے۔ دہلی کو مختص کی گئی آکسیجن ابھی تک نہیں مل سکی ہے۔


عدالت نے کہا کہ"ٹینکروں کا انتظام کرنا بھی مرکز کی ذمہ داری ہے"۔ بنچ نے متنبہ کرتے ہوئے کہا کہ "اگر حکم کی تعمیل نہیں ہوئی تو ہم توہین عدالت کی کارروائی شروع کرنے پر غور کریں گے"۔

ملک میں کورونا کے دنیا بھر میں سب سے زیادہ معاملات

ادھر ہندوستان میں عالمی وبا کورونا کا تیزی سے پھیلاؤ رکنے کا نام نہیں لے رہا ہے اور پچھلے 24 گھنٹوں کے دوران اس انفیکشن کے چار لاکھ 1993 معاملات سامنے آئے ہیں جو دنیا بھر میں سب سےزیادہ ہیں ۔ صحت اور خاندانی بہبود کی مرکزی وزارت نے ہفتے کو یہ اطلاع دی ۔ پچھلے 24 گھنٹوں کے دوران تین ہزار 523 لوگوں کی کورونا سے موت ہوگئی ، جس کے ساتھ اس انفیکشن سے مرنے والوں کی تعداد دو لاکھ 11 ہزار 853 ہوگئی ۔ راحت کی بات ہے کہ اب تک ایک کروڑ 56 لاکھ 80 ہزار مریضوں نے کورونا کو مات دی ہے۔

ماہرین کے جائزے کے مطابق ہندوستان کے کورونا وائرس معاملات اگلے ہفتے تین سے پانچ نئی درمیان عروج پر ہو سکے ہیں ۔ انفیکشن پر نظر رکھنے کیلئے تشکیل ماہرین کے گروپ کے سربراہ ایم ودھا ساگر کے مطابق ہمارا اندازہ ہے کہ اگلے ہفتے تک ، ملک بھر میں روز بڑھے ہوئے کورونا کے معاملات سامنے آئیں گے۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: May 01, 2021 07:46 PM IST