ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

دوسرے مذہب کی لڑکی سے محبت کرنے پر گنوا دی تھی جان، اب والد نے کیا افطار کا اہتمام

یکم فروری کو مغربی دہلی کے رگھوبير نگر کے اے بلاک میں مسلمان لڑکی سے محبت کی وجہ سے قتل کر دیا گیا تھا۔

  • Share this:
دوسرے مذہب کی لڑکی سے محبت کرنے پر گنوا دی تھی جان، اب والد نے کیا افطار کا اہتمام
انکت سکسینہ کے خاندان کی جانب سے منعقد افطار پارٹی کی تصویر

ایک فروری 2018 کے روز انکت سکسینہ نام کے نوجوان کا قتل کر دیا گیا تھا۔ اس کا گناہ محض اتنا تھا کہ وہ مسلم لڑکی سے محبت کرتا تھا اور اس سے شادی کرنا چاہتا تھا۔اس واقعہ کے پانچ ماہ بعد انکت کے خاندان نے کل اپنے گھر میں افطار پارٹی منعقد کی۔ اس کی وجہ معاشرہ میں ہندو مسلمان کے درمیان آپسی بھائی چارا پھیلانا ہے۔ واضح رہے کہ بیٹے کی موت کو 5 ماہ ہو چکے ہیں، گھر میں کمانے والا کوئی نہیں، پڑوسی اور محلے والوں کی مدد سے خاندان کا گزارا ہوتا ہے۔ یشپال سکسینہ کہتے ہیں کہ نفرت نہیں ہونی چاہئے اور اگر نفرت نہ ہوتی تو آج انکت زندہ ہوتا۔


یہ افطار پارٹی مغربی دہلی کے خیالا علاقہ میں انکت سکسینہ کے گھر میں منعقد کی گئی ۔ اس افطار میں دیگر علاقوں سے مسلم خاندانوں نے شرکت کی ۔ گھروالوں نے انکت سکسینہ ٹرسٹ بھی بنایا ہے جس کا مقصد مذہب کے نام پر ہو رہے اختلافات کو ختم کرنا ہے ۔


واضح ہرہے کہ کچھ روز قبل انکت کے والد نے نیوز 18 سے کہا تھا کہ ’’ میں بیٹے کے لئے کچھ ایسا کرنا چاہتا ہوں جس سے اس کو لوگ زندگی بھر یاد کریں ۔ اسلئے میں نے اپنے بیٹے کے نام پر ٹرسٹ بنایا ، جس کا مقصد اس ایک دوسرے مذہب کے لئے نفرت کو ختم کرنا اور معاشرہ میں بیداری اور امن پیداکرنا ہے ‘‘۔


 

ankit saxena
میڈیا خبروں کے مطابق انکت نےکچھ روز بقل اپنی گرلفرنڈ سے بنع کسی کو بتائے شادی کرنے کا فیصلہ کیا تھا۔ واقعہ کے روز اس نے اپنی گرلفرنڈ کو میٹرو اسٹیشن پر ملنے کے لئ بلایا تھا ۔ واضح رہے کہ لڑکی کے خاندان والوں کو اس رشتہ سے اعتراض تھا۔ اسلئے انہوں نے انکت کو محبت کرنے کی سزا دی ۔ لڑکی کے والد ، چاچا اور ماما پر چاکو سے انکت کا گلا کاٹنے کا الزام ہے ۔ دریں اثنا قتل کے کچھ دیر قبل کا انکت کا ایک سی سی ٹی وی ویڈیو سامنے آیا تھا۔

ankit



 
First published: Jun 04, 2018 11:47 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading