உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    دہلی کابینہ نے پاس کیا جن لوک پال بل ، وزیر اعلی بھی دائرے میں

    نئی دہلی: دہلی اسمبلی کے سرمائی اجلاس کا پہلا دن ہنگامہ خیز رہا ۔ حکمراں جماعت اور اپوزیشن نے ایک دوسرے پر جم کر لفظی تیز چلائے اور الزامات تراشیاں کیں۔

    نئی دہلی: دہلی اسمبلی کے سرمائی اجلاس کا پہلا دن ہنگامہ خیز رہا ۔ حکمراں جماعت اور اپوزیشن نے ایک دوسرے پر جم کر لفظی تیز چلائے اور الزامات تراشیاں کیں۔

    نئی دہلی: دہلی اسمبلی کے سرمائی اجلاس کا پہلا دن ہنگامہ خیز رہا ۔ حکمراں جماعت اور اپوزیشن نے ایک دوسرے پر جم کر لفظی تیز چلائے اور الزامات تراشیاں کیں۔

    • News18
    • Last Updated :
    • Share this:

      نئی دہلی: دہلی اسمبلی کے سرمائی اجلاس کا پہلا دن ہنگامہ خیز رہا ۔ حکمراں جماعت اور اپوزیشن نے ایک دوسرے پر جم کر لفظی تیز چلائے اور الزامات تراشیاں کیں۔


      ادھر سیشن کے پہلے دن ہنگامے کے درمیان کیجریوال حکومت نے کابینہ میں دہلی کا جن لوک پال بل پیش کیا، جسے کابینہ نے اپنی منظوری دے دی ۔ اب دہلی کے وزیر اعلی اروند کجریوال کا آفس بھی جن لوک پال بل کے دائرے میں آئے گا۔


      اس سے پہلے وی ایچ پی کے آنجہانی لیڈر اشوک سنگھل کو خراج تحسین پیش کرنے کے سلسلے میں عام آدمی پارٹی اور بی جے پی کے اراکین اسمبلی ایک دوسرے پر حملہ آور نظر آ ئے۔


      بی جے پی ممبران اسمبلی نے اشوک سنگھل کو خراج تحسین پیش کرنے کا مطالبہ کیا ، جس پر آپ کے رکن اسمبلی امانت اللہ خان نے احتجاج کرتے ہوئے آنجہانی لیڈر اشوک سنگھل کے بارے میں تلخ الفاظ کا استعمال کیا اور خراج تحسین پیش کئے جانے کی مخالفت کی۔


      اس کے بعد بی جے پی کے ممبر اسمبلی اوپی شارم نے بھی آپ ممبران اسمبلی کے خلاف قابل اعتراض الفاظ کا استعمال کیا ۔ تاہم اسمبلی اسپیکر نے ان الفاظ کو ایوان کی کارروائی سے باہر نکال دیا۔

      First published: