اپنا ضلع منتخب کریں۔

    دہلی ایکسائز پالیسی معاملہ: بی جے پی نے منیش سسودیا کو گھیرا، 100 کروڑ کی رشوت کا الزام

    Youtube Video

    Delhi Liquor Policy 2022: بی جے پی کے قومی ترجمان سمبیت پاترا نے جمعہ کو دہلی کے وزیر اعلیٰ کیجریوال اور ان کے نائب منیش سسودیا پر اس معاملے میں انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ کی تحقیقات میں سامنے آنے والے حقائق کی بنیاد پر سخت حملہ کیا۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Delhi, India
    • Share this:
      بھارتیہ جنتا پارٹی دہلی کی نئی ایکسائز پالیسی میں مبینہ بدعنوانی کے معاملے کو لیکر اروند کیجریوال کی قیادت والی عام آدمی پارٹی حکومت پر مسلسل حملہ آور ہے۔ بی جے پی کے قومی ترجمان سمبیت پاترا نے جمعہ کو دہلی کے وزیر اعلیٰ کیجریوال اور ان کے نائب منیش سسودیا پر اس معاملے میں انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ کی تحقیقات میں سامنے آنے والے حقائق کی بنیاد پر سخت حملہ کیا۔ انہوں نے پریس کانفرنس میں کہا، ’’جب پورا ایکسائز پالیسی معاملہ گھوٹالے کے طور پر سامنے آیا اور اس معاملے میں سی بی آئی کی تحقیقات شروع ہوئی تو ملزم نمبر ایک منیش سسودیا سمیت 34 لوگوں نے 140 موبائل فون بدلے۔ ڈیجیٹل شواہد کو مٹانے کے لیے ان موبائل فونز کو کچل دیا گیا۔

      سمبیت پاترا نے مزید کہا، 'دہلی کی ایکسائز پالیسی 5 جولائی 2021 کو پبلک کی گئی تھی لیکن پالیسی کی ایک کاپی 31 مئی 2021 کو منیش سسودیا کے دوستوں بشمول مینوفیکچرر اور کارٹیل کو لیک کر دی گئی تھی۔ ای ڈی نے دہلی ایکسائز پالیسی گھوٹالے کیس میں حیدرآباد سے 2 تاجروں کو گرفتار کیا ہے۔ شراب پالیسی گھوٹالے کی حقیقت تہ در تہ بے نقاب ہو رہی ہے۔ اس گھوٹالے سے دہلی حکومت کے ریونیو کو 2631 کروڑ کا نقصان ہوا ہے۔ 140 فون ٹوٹ گئے اور 140 نئے خریدے گئے۔ منیش سسودیا نے یہ سب ڈیجیٹل ثبوت مٹانے کے لیے کیا۔ اس پر 1 کروڑ 20 لاکھ روپے خرچ ہوئے۔ ان دونوں تاجروں اور ان کی کمپنیوں سے 100 کروڑ روپے کی پیشگی ادائیگی دہلی حکومت کے ارکان اور منیش سیسودیا نے کی تھی۔

       

      عرفان پٹھان اور شعیب کے درمیان شروع ہوئی جنگ، ہندوستان کی ہار پر اختر نے لئے مزے

      لالو پرساد یادو کو کڈنی دینے کیسے تیار ہوئیں بیٹی روہنی، اور کیسے مان گئے RJD چیف؟

      بی جے پی کے ترجمان نے عام آدمی پارٹی کو بنیادی طور پر بے ایمان اور بدعنوان پارٹی قرار دیا۔ سمبت پاترا نے دہلی میونسپل کارپوریشن انتخابات کے لیے اروند کیجریوال کی ضمانت پر بھی تنقید کی۔ انہوں نے کہا کہ جو خود وارنٹ پر ہیں وہ کسی کو کیا گارنٹی دیں گے۔ یہ لوگ پہلے بھی کئی ضمانتیں دے چکے تھے، ان کے ساتھ کیا ہوا ہم سب جانتے ہیں۔ وہ کیا گارنٹی دیں گے جن کے اپنے وارنٹ جاری ہوں؟' ایکسائز اسکینڈل میں ملوث/ مشتبہ 34 اہم افراد نے متعلقہ مدت کے دوران ڈیجیٹل شواہد کو تباہ کرنے کی نیت سے کل 140 فونز تبدیل کیے۔ ان میں منیش سسودیا بھی شامل ہیں۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: