ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

Delhi Metro News: دلی میٹرو میں 7 ستمبر سے سفر کرنے سے پہلے جان لیجئے یہ نئے ضابطے

مسافروں کو ڈبے کے اندر ایک سیٹ چھوڑ کر بیٹھنا ہوگا اور اگر مسافر کھڑے ہوتے ہیں تو ان کے درمیان کی دوری کم از کم ایک میٹر طے کی گئی ہے۔ میٹرو میں چڑھنے کے لئے مسافروں کی معلومات کے لئے داخلے کے دروازے کے نزدیک گولے بنائے گئے ہیں اور یہ طے شدہ فاصلے کا تعین کرتے ہیں۔

  • UNI
  • Last Updated: Sep 03, 2020 03:10 PM IST
  • Share this:
Delhi Metro News: دلی میٹرو میں 7 ستمبر سے سفر کرنے سے پہلے جان لیجئے یہ نئے ضابطے
دلی میٹرو میں 7 ستمبر سے سفر کرنے سے پہلے جان لیجئے یہ نئے ضابطے

نئی دہلی۔ قومی دارالحکومت دہلی میں سات ستمبر سے شروع ہونے والی میٹرو خدمات کے سلسلے میں دہلی میٹرو ریل کارپوریشن (ڈی ایم آر سی) نے جمعرات کو مسافروں کے لئے خصوصی ہدایات جاری کیں اور کورونا انفیکشن کو روکنے کے لئے ان پر عمل کرنا سبھی مسافروں کے لئے لازمی ہوگا۔ پہلے مرحلے میں سات، نو اور دس ستمبر اور دوسرے مرحلے میں 11ستمبر اور تیسرے مرحلے میں 12 ستمبر سے میٹرو ریل خدمات شروع ہو رہی ہیں۔ میٹرو احاطوں کو کوویڈ سے پاک رکھنے کے لئے احتیاطی اقدامات کے طور پر شروع میں ہر میٹرو اسٹیشن میں صرف ایک یا دو طے دروازوں سے مسافروں کو داخل ہونے اور نکلنے کی اجازت ہوگی۔


ڈی ایم آر سی نے کورونا انفیکشن کے درمیان اپنی خدمات شروع کرنے کی تیاریوں سے متعلق تفصیلی اطلاعات یہاں راجیو چوک پر میڈیا کو دیں۔ اس دوران ایک ٹرین کو ڈسپلے کے طور پر کھڑا کیا گیا تھا اور اس میں مسافروں کو بیٹھنے سے متعلق معلومات دی گئیں۔ مسافروں کو ڈبے کے اندر ایک سیٹ چھوڑ کر بیٹھنا ہوگا اور اگر مسافر کھڑے ہوتے ہیں تو ان کے درمیان کی دوری کم از کم ایک میٹر طے کی گئی ہے۔ میٹرو میں چڑھنے کے لئے مسافروں کی معلومات کے لئے داخلے کے دروازے کے نزدیک گولے بنائے گئے ہیں اور یہ طے شدہ فاصلے کا تعین کرتے ہیں۔ اسٹیشنوں / گاڑیوں میں داخل ہوتے وقت اور پورے سفر کے دوران سبھی مسافروں کے لئے فیس ماسک پہننا / چہرے کو ڈھکنا لازمی ہوگا۔ صحت سے متعلق اپڈیٹ کے لئے مسافروں کے ذریعہ ’آروگیہ سیتو ایپ‘کا استعمال بھی ضروری ہوگا۔


اسٹیشن کے داخلہ دروازوں / فرسکنگ ایریا میں سبھی مسافروں کو تھرمل اسکریننگ سے گزرنا ہوگا اور ہاتھوں کو سینیٹائز کرنا ہوگاْ۔ 45 اہم اسٹیشنوں پر ’آٹو تھرمل اینڈ ہینڈ سینیٹائزیشن مشینوں‘ کا انتظام کیا گیا ہے۔ باقی میٹرو اسٹیشنوں پر ہینڈ سینیٹائزیشن کے لئے ’آٹو سینیٹائزر ڈسپینسر‘ لگے ہوں گے اور تھرمل اسکریننگ مینوئلی ’تھرمل گن‘ کے ذریعہ کی جائے گی۔ یہ سہولت فرسکنگ / انٹری پوائنٹ پر ڈی ایم آر سی / سی آئی ایس ایف اہلکاروں کے ذریعہ فراہم کی جائے گی۔


جن مسافروں میں بخار یا کووڈ-19 کی علامات ہوں گی انہیں سفر کی اجازت نہیں دی جائے گی۔ انہیں نزدیکی میڈیکل سینٹر میں رپورٹ کرنے کو کہا جائے گا۔ لفٹ کی صلاحیت کی بنیاد پر ایک بار میں صرف دو سے تین افراد کو ہی لفٹ کے استعمال کی اجازت ہوگی۔ اسی طرح سماجی دوری برقرار رکھنے کے لئے ایسکیلیٹر پر مسافر ایک ایک سیڑھی چھوڑ کر کھڑے ہوں گے۔

واضح رہے کہ سات ستمبر کو یلو لائن (سمے پور بادلی سے ہڈا سٹی سینٹر اور ریپڈ میٹرو گروگرام) کو صبح چار گھنٹے (سات بجے سے 11 بجے تک) اور شام کو بھی چار گھنٹے (شام چار بجے سے رات آٹھ بجے تک) چلایا جائےگا۔ اس کے بعد نو ستمبر کو لائن 3/4- بلو لائن ،دواریکا سیکٹر 21 سے نوئیڈا الیکٹرانک سٹی ،ویشالی اور لائن سات (پنک لائن ) مجلس پارک سے شیو وہار کا آپریشن شروع ہوگا۔ یہ سروس بھی صبح اور شام کو چار چار گھنٹے تک رہے گی۔ اس میں صبح سات بجے سے 11 بجے تک اور شام چار بجے سے رات آٹھ بجے تک میٹرو خدمات مہیا ہوں گی۔ اسی مرحلے میں دس ستمبر کو لائن ایک (ریٹھالا سے شہید استھل) ،لائن پانچ (گرین لائن ) کیرتی نگر- اندر لوک سے بریگیڈیئر ہوشیار سنگھ اور لائن چھ (وائلٹ لائن) کشمیری گیٹ سے راجہ ناہر سنگھ تک چلے گی اور اس کا وقت بھی صبح اور شام کو چار چار گھنٹے کا ہوگا۔ اس میں صبح سات بجے سے 11 بجے تک اور شام چار بجے سے رات آٹھ بجے تک میٹرو خدمات مہیا ہوں گی۔

دوسرے مرحلے میں 11 ستمبر سے میٹرو خدمات شروع ہوں گی اور اس میں میٹرو ٹرین سفر کا وقت چارگھنٹے سے بڑھاکر چھ گھنٹے کر دیا گیا ہے۔ دوسرے مرحلے میں پہلے مرحلے کی لائنوں کے علاوہ لائن آٹھ (مجینٹا لائن) جنک پوری ویسٹ سے بوٹینیکل گارڈن اور لائن نو (گرے لائن ) دواریکا سے نجف گڑھ کی شروعات ہوگی۔ اس کا وقت صبح سات بجے سے صبح گیارہ بجے اور شام چار بجے سے رات دس بجے تک ہوگا۔ تیسرے مرحلے میں 12 ستمبر سے سبھی لائنوں پر پورے دن میٹرو سروس صبح چھ بجے سے رات گیارہ بجے تک مہیا ہو گی ۔اس مرحلے میں لائن ایک اور دو کے علاوہ (ایئرپورٹ ایکسپریس لائن) نئی دہلی سے دواریکا سیکٹر 21 کو چلایا جائے گا۔
Published by: Nadeem Ahmad
First published: Sep 03, 2020 03:10 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading