உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Lockdown in Delhi:ضروری اشیاکی فروخت کےدوران زیادہ قیمت وصول کرنےپرہوگی کارروائی،دہلی کے وزیرعمران حسین نےدیاانتباہ

    علامتی تصویر

    علامتی تصویر

    دہلی کے وزیر برائے خوراک اور شہری فراہمی (food and civil supplies minister ) عمران حسین (Imran Hussain) نے سینئر افسران کو ہدایت دی کہ وہ روزانہ کی بنیاد پر عملے کے کام کاج کا جائزہ لیں۔ انہوں نے مزید ہدایت دی کہ کسی بھی قیمت پر دوائیں، خوردہ فروشوں یا تاجروں کو صحت کے بحران سے ناجائز فائدہ اٹھانے کی اجازت نہیں ہونی چاہئے۔

    • Share this:
      ںسءدہلی کے خوراک اور شہری فراہمی کے وزیر (food and civil supplies minister ) عمران حسین (Imran Hussain) نے پیر کو عہدیداروں کو ہدایت دی کہ وہ خوردہ فروشوں یا تقسیم کاروں کے خلاف سخت کاروائی کریں۔ جن میں کووڈ۔19 کے علاج کے لئے درکار دوائیں(medicines)، آکسیجن (oxygen) انجیکشن ریمیڈی سیور (injections remdesivir)اور ٹوسلیزوماب (tocilizumab ) شامل ہیں۔عمران حسین نے سینئر افسران کو ہدایت دی کہ وہ روزانہ کی بنیاد پر عملے کے کام کاج کا جائزہ لیں۔ انہوں نے مزید ہدایت دی کہ کسی بھی قیمت پر دوائیں، خوردہ فروشوں یا تاجروں کو صحت کے بحران سے ناجائز فائدہ اٹھانے کی اجازت نہیں ہونی چاہئے۔

      دہلی میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے حسین نے بتایا کہ قانون کے مطابق خلاف ورزی کرنے والوں کو سختی سے نمٹا جائے گا۔انہوں نے ضلعی وار نفاذ ٹیم کی تشکیل کی ہدایت دی، جس کے رابطے کی تفصیلات عوام کی سہولت کے لئے محکمہ یا دہلی حکومت کی ویب سائٹ پر واضح طور پر ظاہر ہونی چاہئیں۔ حسین نے سینئر افسران کو بھی ہدایت دی کہ وہ فیلڈ اسٹاف کی طرف سے روزانہ کی بنیاد پر اس سلسلے میں کی جانے والی کارروائی کا جائزہ لیں اور شام 5 بجے تک اپنے دفتر کو روزانہ رپورٹ بھیجیں۔


      اس کے علاوہ ذاتی طور پر ان سے کی جانے والی کارروائی سے آگاہی حاصل کریں۔ حسین نے کہا کہ ’’میں کیمسٹوں، خوردہ فروشوں، تاجروں اور مینوفیکچروں سے اپیل کرتا ہوں کہ وہ ڈبہ بند اجناس سے متعلق اصولوں کے ساتھ تعمیل کریں اور صارفین کے مفادات کے لئے زیادہ سے زیادہ قیمت وصول کرنے سے باز رہیں اور کووڈ۔19 کے خلاف جنگ میں حکومت سے تعاون کرے‘‘۔

      قواعد کی پاسداری نہ کرنے سے خوردہ فروش / کارخانہ دار / تاجر قانونی میٹروولوجی ایکٹ (Legal Metrology Act, 2009) اور پیکیجڈ اجناس کے قواعد (Packaged Commodities Rules, 2011) کے تحت قانونی چارہ جوئی کی جائے گی۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: