ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

بیوی کے اسقاط حمل کرانے کو لیکر داماد کو تھا ساس پر شک، کردیا یہ ہوش اڑادینے والا کام

راجدھانی دہلی میں ایک شخص نے اپنی ساس کا مبینہ طور پر گولی مار کر قتل کردیا۔ دراصل اسے شک تھا کہ اس کی بیوی کے دو مرتبہ اسقاط حمل کرانے کے فیصلے کے پیچھے اس کی ساس تھی۔ پولیس نے سنیچر کو یہ اطلار دی۔

  • Share this:
بیوی کے اسقاط حمل کرانے کو لیکر داماد کو تھا ساس پر شک، کردیا یہ ہوش اڑادینے والا کام
علامتی تصویر

راجدھانی دہلی میں ایک شخص نے اپنی ساس کا مبینہ طور پر گولی مار کر قتل کردیا۔ دراصل اسے شک تھا کہ اس کی بیوی کے دو مرتبہ اسقاط حمل کرانے کے فیصلے کے پیچھے اس کی ساس تھی۔ پولیس نے سنیچر کو یہ اطلار دی۔


پولیس نے بتایا کہ مہلوک مغربی وہار کے ایک نجی اسپتال میں بطقر نرس کام کرتی تھیں۔ 14 فروری کو جب وہ منڈکا کی طرف آرہی تھیں تو ان کا قتل کردیا گیا۔ پولیس نے بتایا کہ مہلوک خاتون کے داماد پنکج اور اس کے دو ساتھیوں اجول ڈباس اوت اجیت نے خاتون پر مبینہ طور سے گولیاں چلائیں۔ جب وہ ای رکشہ میں تھیں۔ انہیں پانچ گولیاں ماری گئی تھیں۔ خاتون کی موقع پر ہی موت ہوگئی۔


ڈپٹی کمشنر آف پولیس (اسپیشل سیل) پی ایس کشواہا نے بتایا کہ اطلاع کی بنیاد پر بدھ کے روز لاڈ پور گاؤں سے ایک ملزم اجول دباس کو گرفتار کیا گیا۔ اسی دوران دیگر دو ملزم اجیت اور پنکج ابھی تک فرار ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ اُجول سے ایک پستول اور نو کارتوس برآمد ہوئے ہیں۔ اس کے ساتھ ہی دیگر دو ملزم اجیت اور پنکج کی بھی تلاش جاری ہے۔

First published: Feb 23, 2020 09:04 AM IST