ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

نربھیا کی ماں نے سپریم کورٹ میں دائر کی مداخلت کی درخواست

واضح رہے کہ نربھیا اجتماعی عصمت دری کیس کے چاروں قصورواروں کو آج ویڈیو کانفرنسگ کے ذریعے پٹیالہ ہاؤس کورٹ میں پیش کیا گیا۔ معاملے کی سماعت کرتے ہوئے کورٹ نے کہا کہ اس کیس سے جڑا ایک معاملہ سپریم کورٹ میں زیر التوا ہے۔

  • UNI
  • Last Updated: Dec 13, 2019 02:17 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
نربھیا کی ماں نے سپریم کورٹ میں دائر کی مداخلت کی درخواست
واضح رہے کہ نربھیا اجتماعی عصمت دری کیس کے چاروں قصورواروں کو آج ویڈیو کانفرنسگ کے ذریعے پٹیالہ ہاؤس کورٹ میں پیش کیا گیا۔ معاملے کی سماعت کرتے ہوئے کورٹ نے کہا کہ اس کیس سے جڑا ایک معاملہ سپریم کورٹ میں زیر التوا ہے۔

دہلی میں 2012 کے اجتماعی آبروریزی کی متاثرہ نربھیا کی ماں آشا دیوی نے کیس کے ایک مجرم اکشے کمار سنگھ کی نظر ثانی کی درخواست کے خلاف سپریم کورٹ میں مداخلت کی عرضی دی ہے۔ متاثرہ کی ماں کی طرف سے پیش ہوئے وکیل نے چیف جسٹس ایس اے بوبڈے کی صدارت والی ایک بنچ کے سامنے اس معاملے کا خصوصی ذکر کیا اور اس کیس کے ایک مجرم اکشے کی نظر ثانی درخواست کی مخالفت کی۔

عدالت عظمی نے ان کی درخواست منظور کر لی اور معاملے کی سماعت کے لئے 17 دسمبر کی تاریخ مقرر کی۔

عدالت نے گزشتہ برس نو جولائی کو تین دیگر قصورواروں پون، ونے اور مکیش کی نظر ثانی کی عرضیاں یہ کہتے ہوئے مسترد کر دی تھیں کہ سال 2017 کی سزا پر نظر ثانی کرنے کی کوئی بنیاد نہیں ہے۔

واضح رہے کہ نربھیا اجتماعی عصمت دری کیس کے چاروں قصورواروں کو آج ویڈیو کانفرنسگ کے ذریعے پٹیالہ ہاؤس کورٹ میں پیش کیا گیا۔ معاملے کی سماعت کرتے ہوئے کورٹ نے کہا کہ اس کیس سے جڑا ایک معاملہ سپریم کورٹ میں زیر التوا ہے۔ اس لئے جب تک وہاں کا نبٹارا نہیں ہوتا ہے۔ لوئر کورٹ اس وقت تک سماعت نہیں کرے گا۔ بتادیں کہ سپریم کورٹ نربھیا گینگ ریپ کے قصوروار اکشے کمار سنگھ کی  نظرثانی کی عرضی پر 17 دسمبر کو سماعت کرے گا۔  ایسے میں پٹیالہ کورٹ نے سماعت 18 دسمبر تک ملتوی کردی ہے۔

پٹیالہ ہاؤس کورٹ میں اس دوران نربھیا کے وکیل نے کہا کہ پھانسی کی تاریخ طے ہونی چاہئے۔ رحم کی عرضی سے ڈیتھ وارنٹ جاری ہونے کا کوئی لینا دیا نہیں ہے۔ رحم کی عرضی لگانے کیلئے ڈیتھ وارنٹ کو نہیں روکا جاسکتا۔ اس پر کورٹ نے کہا کہ پہلے سپریم کورٹ کا فیصلہ آنے دیجئے اس کے بعد ہی ہم سماعت کریں گے۔

کورٹ نے قصورواروں کے وکیل اے پی سنگھ کو بھی پھٹکار لگائی۔ عدالت نے کہا کہ آپ کیس کے دوران کورٹ میں موجود نہیں ہوتے ہیں۔ آپ اس معاملے میں کوئی بھی فیصلہ آنے میں دیر کررہے ہیں۔
چاروں ملزموں کی جلد پھانسی کی عرضی پر سماعت ملتوی پر نربھیا کی ماں نے کہا "جب ہم قصورواروں کی سزا کیلئے 7 سال سے انتظار کررہے ہیں تو 7 دن اور کر لیں گے"۔
First published: Dec 13, 2019 02:14 PM IST