உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    کل سے دہلی - نوئیڈا روٹ پر نہیں چلے گی میٹرو، ہڑتال پر جائیں گے 9000 ملازمین

    دہلی این سی آر کی لائف لائن بن چکی میٹرو سروس ہفتہ کے روزسے ٹھپ رہے گی۔ ڈی ایم آرسی کے نان ایگزیکٹیو ملازمین اور دہلی کے لیبر کمشنر کے درمیان اتفاق رائے نہیں بن سکی۔ اب ناراض 9000 ملازمین نے ہڑتال پر جانے کا اعلان کیا ہے۔

    دہلی این سی آر کی لائف لائن بن چکی میٹرو سروس ہفتہ کے روزسے ٹھپ رہے گی۔ ڈی ایم آرسی کے نان ایگزیکٹیو ملازمین اور دہلی کے لیبر کمشنر کے درمیان اتفاق رائے نہیں بن سکی۔ اب ناراض 9000 ملازمین نے ہڑتال پر جانے کا اعلان کیا ہے۔

    دہلی این سی آر کی لائف لائن بن چکی میٹرو سروس ہفتہ کے روزسے ٹھپ رہے گی۔ ڈی ایم آرسی کے نان ایگزیکٹیو ملازمین اور دہلی کے لیبر کمشنر کے درمیان اتفاق رائے نہیں بن سکی۔ اب ناراض 9000 ملازمین نے ہڑتال پر جانے کا اعلان کیا ہے۔

    • Share this:
      دہلی این سی آرکی لائف لائن بن چکی میٹرو سروس ہفتہ کے روزسے ٹھپ رہے گی۔ ڈی ایم آرسی کے نان ایگزیکٹیو ملازمین اوردہلی کے لیبر کمشنر کے درمیان اتفاق رائے نہیں بن سکا۔ اب ناراض ملازمین نے ہڑتال پر جانے کا اعلان کیا ہے۔ ملازمین کے ہڑتال پرجانے سے شہرمیں میٹروخدمات بری طرح سے متاثر ہوسکتی ہے۔

      میٹرو میں تقریباً 12,000 ملازم ہیں، جن میں 9,000 غیرانتظامی عملہ کے اسٹاف ہیں۔ دہلی میٹرو ریل نگم (ڈی ایم آرسی) کے کچھ غیرانتظامی عملہ کے اسٹاف 19 جون سے یمنا بینک اورشاہدرہ اسٹیشن سمیت کچھ اسٹیشنوں پراپنی 8 نکاتی مطالبات کی حمایت میں احتجاج کررہے ہیں۔

      سبھی ملازمین ہڑتال میں نہیں ہیں شامل

      ڈی ایم آرسی اسٹاف کونسل نےسبھی ممبران سے احتجاج میں شامل ہونے کی گزارش کی تھی، لیکن سبھی نے اس میں حصہ نہیں لیا۔ غیرانتظامی ملازمین میں ٹرین آپریٹر، اسٹیشن کنٹرولر، آپریشن اور بحالی کے عملے اور تکنیکی عملے کے ساتھ ہی آپریٹر سے متعلق دیگر ملازمین شامل ہوتے ہیں۔

      کیا ہے ملازمین کا مطالبہ؟

      کونسل کے کچھ ممبران تنخواہ کی ادائیگی کے پیمانے میں ترمیم، ڈی ایم آرسی اسٹاف کونسل کو ملازمین یونین میں تبدیل کرنے، کسی ملازم کو نکالنے کے لئے مناسب ہدایات سمیت کئی مطالبات کو لے کر احتجاج کررہے ہیں۔

      کونسل نے کہا کہ مطالبات کو دہلی میٹرو کے افسران اوروزارت برائے شہری ترقیات کو بھیج دیا گیا ہے۔ کونسل کے سکریٹری روی بھاردواج نے کہا کہ ہمارا پہلا مطالبہ ڈی ایم آرسی اسٹاف کونسل کو ڈی ایم آرسی ملازم یونین میں تبدیل کرنے کا ہے، کیونکہ کونسل آئینی باڈی نہیں ہے۔

       

       
      First published: