உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    دہلی کے آرکے پورم میں زہریلی گیس پھیلنے سے دہشت، 12 سے زیادہ لوگوں کو اسپتال میں کرایا گیا داخل

    مقامی لوگوں نے بتایا کہ گیس سے کئی افراد بے ہوش ہوگئے جنہیں اسپتال میں داخل کرایا گیا ہے۔

    مقامی لوگوں نے بتایا کہ گیس سے کئی افراد بے ہوش ہوگئے جنہیں اسپتال میں داخل کرایا گیا ہے۔

    مقامی لوگوں نے بتایا کہ گیس سے کئی افراد بے ہوش ہوگئے جنہیں اسپتال میں داخل کرایا گیا ہے۔

    • Share this:
      نئی دہلی. راجدھانی دہلی کے آر کے پورم کے ایکتا وہار میں گزشتہ رات اس وقت خوف و ہراس پھیل گیا جب کسی نے یہ افواہ پھیلائی کہ بغل کے سی آر پی ایف (CRPF)  یا این ایس جی (NSG) کیمپ سے زہریلی گیس (Poisonous Gas) چھوڑی گئی ہے۔ اس کے بعد علاقے میں افراتفری مچ گئی اور لوگوں کی آنکھیں جلنے لگیں۔ یہی نہیں لوگ گھروں سے پریشان ہو کر سڑکوں پر نکل آئے اور کھڑے ہو گئے۔ کوئی نہیں سمجھ سکا کہ کیا ہو رہا ہے۔ جبکہ مقامی لوگوں نے بتایا کہ گیس سے کئی افراد بے ہوش ہوگئے جنہیں اسپتال میں داخل کرایا گیا ہے۔ حالانکہ، ڈی سی پی گورو شرما نے تصدیق کی ہے کہ کیٹس ایمبولینس اور پی سی آر کے ذریعے 7 لوگوں کو صفدر جنگ اسپتال لے جایا گیا ہے۔

      اسی دوران اطلاع ملتے ہی کئی سماجی کارکن موقع پر پہنچ گئے اور لوگوں کو ماسک دیے تاکہ زہریلی گیس کی وجہ سے لوگوں کو سانس لینے میں تکلیف نہ ہو۔ اس کے بعد دہلی پولیس کو اطلاع دی گئی۔ اطلاع ملتے ہی مقامی تھانے کے ایس ایچ او اپنی ٹیم کے ہمراہ پہنچ گئے۔ کوئی حادثہ نہ ہو اس کیلئے فائر بریگیئڈ کی دو گاڑیاں اور تقریباً 6 ایمبولینسیں بھی موقع پر پہنچ گئیں ۔

      دہلی پولیس نے یہ بات بتائی
      دہلی پولیس نے موقع پر پہنچ کر سی آر پی ایف اور این ایس جی کیمپ میں جاکر جانچ کی لیکن وہاں سے گیس کے اخراج سے انکار کیا گیا ہے۔ یہ معاملہ کل رات اس وقت سامنے آیا جب لوگ کھانا کھا کر سونے کی تیاری کر رہے تھے لیکن اس کے بعد لوگ خوف و ہراس میں مبتلا رہے اور باہر سڑکوں پر جم کر رہ گئے۔ پولیس ابھی تک اس بات کی تحقیقات کر رہی ہے کہ یہ گیس لیک کہاں سے ہوئی ہے۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: