ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

کانگریس آئی ٹی سیل کے رکن پرلگا جنسی استحصال کا الزام، پولیس نے درج کی ایف آئی آر

دہلی پولیس نے کانگریس کے آئی ٹی سیل کے رکن چراغ پٹنائک کے خلاف ایف آئی آر درج کیا ہے۔ چراغ پر کانگریس کے سوشل میڈیا سیل میں کام کرنے والی ایک سابق خاتون نے جنسی استحصال کا الزام لگایا ہے۔

  • Share this:
کانگریس آئی ٹی سیل کے رکن پرلگا جنسی استحصال کا الزام، پولیس نے درج کی ایف آئی آر
دہلی پولیس نے کانگریس کے آئی ٹی سیل کے رکن چراغ پٹنائک کے خلاف ایف آئی آر درج کیا ہے۔ چراغ پر کانگریس کے سوشل میڈیا سیل میں کام کرنے والی ایک سابق خاتون نے جنسی استحصال کا الزام لگایا ہے۔

نئی دہلی: دہلی پولیس نے کانگریس کے آئی ٹی سیل کے رکن چراغ پٹنائک کے خلاف ایف آئی آر درج کیا ہے۔ چراغ پر کانگریس کے سوشل میڈیا سیل میں کام کرنے والی ایک خاتون نے جنسی استحصال کا الزام لگایا ہے۔


پولیس میں شکایت درج ہونے کے بعد سوشل میڈیا سیل کی انچارج دویا اسپندنا پر ملزم کا بچاو کرنے کے الزامات لگ رہے ہیں۔ حالانکہ دویا اسپندنا نے ٹوئٹر پر ایک بیان جاری کیا ہے کہ انہیں متاثرہ خاتون کی طرف سے کسی بھی طرح کی شکایت نہیں ملی ہے۔


واضح رہے کہ منگل کو بی جے پی نے پریس کانفرنس کیا تھا، جس میں بی جے پی لیڈر میناکشی لیکھی نے کانگریس پر خواتین کے استحصال کا الزام لگایا تھا۔ لیکھی نے دہلی پولیس سے اپیل کی تھی کہ وہ کانگریس کے سوشل میڈیا آفس میں جنسی استحصال کی شکایت پر ایف آئی آردرج کریں، اس کے ساتھ ہی شکایت کرنے والی لڑکی کی سیکورٹی کو یقینی بنائیں۔ اس پریس کانفرنس کے ایک گھنٹے بعد ہی دہلی  پولیس نے ایف آئی آر درج کرلی ہے۔


وہیں بی جے پی لیڈر گورو بھاٹیا نے الزام لگایا ہے کہ لڑکی کی شکایت کے باوجود دویا اسپندنا خاموش رہیں۔ وہیں اس معاملے میں کانگریس ممبرپارلیمنٹ رینوکا چودھری نے کہا کہ کانگریس اس معاملے کی جانچ کررہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ جانچ پوری ہونے کے بعد کارروائی کی جائے گی۔ چودھری نے کہا کہ ایسے مدعوں کے لئے کانگریس زیرو ٹالرینس کی پالیسی پر کام کرتی ہے۔

دویا اسپندنا نے دی صفائی

کانگریس سوشل میڈیا سیل کی انچارج دویا اسپندنا نے ایک بیان جاری کیا ہے، جس کے مطابق انہیں خاتون کی طرف سے کوئی شکایت نہیں ملی ہے۔ اس بیان میں لکھا ہے کہ شکایت کمیٹی کے پاس اس سے متعلق تحریری، زبانی، سرکاری اورغیر سرکاری کسی بھی طرح سے سابق رکن کی طرف سے کوئی شکایت نہیں آئی ہے۔ رپورٹر جس شکایت کی بات کررہے ہیں ہمارے پاس اس کی کاپی بھی نہیں ہے، جب ہم نے رپورٹر سے شکایت کی کاپی مانگی تو انہوں نے بتایا کہ شکایت میں "غیر اخلاقی سلوک" اور ذاتیات کی توہین جیسے الفاظ کا استعمال کیا گیا ہے۔



اس میں آگے لکھا "ہم نے سابق ملازم سے رابطہ کیا ہے اور اس سے متعلق ان کا جواب مانگا ہے۔ اس معاملے میں موجودہ رکن کے برتاو کی بنیاد پر کانگریس سوشل میڈیا ٹیم کے ارکان نے ان کے تئیں اپنی حمایت ظاہر کی ہے۔ اس کے ساتھ ہی دویا نے سوشل میڈیا ٹیم کے ارکان کو دستخط والا پیج شیئر کیا ہے۔

اس کے ساتھ ہی دویا اسپندنا نے بتایا کہ سابق ملازم نے جاتے وقت لکھا تھا کہ وہ ذاتی اور صحت سے متعلق وجوہات کے سبب نوکری چھوڑ رہی ہے۔ انہوں نے لکھا تھا کہ اس کے لئے ٹیم کا کوئی دیگر رکن ذمہ دار نہیں ہے۔ استعفیٰ میں لکھا تھا "مجھے یہاں کام کرکے اچھا لگا، مجھے موقع دینے کے لئے شکریہ"۔
First published: Jul 03, 2018 07:53 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading