ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

تین طلاق آرڈی نینس کو ملی صدر رام ناتھ كووند کی منظوری

صدر رام ناتھ كووند نے تین طلاق پر روک متعلق آرڈیننس سمیت چار آرڈیننس پر جمعرات کو دستخط کر دیے۔

  • Share this:
تین طلاق آرڈی نینس کو ملی صدر رام ناتھ كووند کی منظوری
علامتی تصویر

صدر رام ناتھ كووند نے تین طلاق پر روک متعلق آرڈیننس سمیت چار آرڈیننس پر جمعرات کو دستخط کر دیے۔ وزارت قانون و انصاف کی جانب سے دی گئی معلومات کے مطابق صدر نے تین طلاق پر روک سے متعلق مسلم خواتین (شادی حقوق تحفظ) تیسرا آرڈیننس، 2019، انڈین میڈیکل کونسل (ترمیمی) دوسرا آرڈیننس، 2019، کمپنی (ترمیمی) دوسرا آرڈیننس، 2019 اور چت فنڈ (غیر منضبط) ریگولیشن آرڈیننس، 2019 کو منظوری دے دی ہے۔


مسلم خواتین شادی حقوق تحفظ آرڈیننس، 2019 کے احکامات کو برقرار رکھنے کے لئے آرڈیننس تیسری بار لایا گیا ہے۔ اس کے ذریعے، تین طلاقوں کو غیر قانونی قرار دیا گیا ہے۔اسے تعزیری جرم سمجھا گیا ہے، جس کے تحت تین سال کی سزا اورجرمانہ کا التزام ہے۔


شادی شدہ مسلم خواتین کے حقوق کے تحفظ کے مقصد سے لایا گیا یہ آرڈیننس انہیں ان کے شوہروں کی طرف فوری اور ناقابل واپسی ’طلاق بدعت’ کے ذریعے طلاق دئے جانے سے روکے گا۔


اس سے متعلق بل لوک سبھا میں گزشتہ سال منظور کیا گیا تھا، لیکن راجیہ سبھا میں اتفاق نہ ہونے کی وجہ سے منظور نہیں ہو پایا تھا، جس کی وجہ سے حکومت کو آرڈیننس لانا پڑا تھا۔ اس کے بعد اجلاس سرما میں حکومت نے اس بل میں کچھ ترمیم کر اسے لوک سبھا سے پھر منظور کروا لیا تھا، لیکن ایوان بالا میں یہ پھر لٹک گیا۔ اس کے بارے میں، مرکزی کابینہ نے دوبارہ آرڈیننس لانے کا فیصلہ کیا اور صدر کی منظوری کے لئے بھیجا۔
First published: Feb 21, 2019 09:44 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading