ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

پانچ ماہ کے بعد کھلی دہلی فساد میں خاکستر ہوئی گوکل پوری ٹائر مارکیٹ

جمعیت علما کی جانب سے 97 دکانوں کی تعمیر نو کرائی گئی اور جمعہ سے قبل جنرل سکریٹری مولانا محمود مدنی نے آن لائن نیک خواہشات کا اظہار کرتے ہوئے مارکیٹ کا افتتاح کیا ۔

  • Share this:
پانچ ماہ کے بعد کھلی دہلی فساد میں خاکستر ہوئی گوکل پوری ٹائر مارکیٹ
پانچ مہینوں بعد کھلی دہلی فساد میں خاکستر ہوئی گوکل پوری ٹائر مارکیٹ

دہلی فسادات میں جھلسی شمال مشرقی دہلی میں متاثرین کی زندگی اب دھیرے دھیرے پٹری پر لوٹ رہی ہے اور ان کے زخموں پر مرہم لگانے کا سلسلہ بدستور جاری ہے ۔ دہلی حکومت کی جانب سے فساد کے بعد امدادی رقم دی گئی تھی ، تاہم پورا معاوضہ ملنا ابھی باقی ہے ۔ لیکن سماجی اور مذہبی تنظیمیں لوگوں کے زخموں پرمرہم لگانے کی پوری کوششیں کررہی ہیں ۔ اسی کڑی میں جمعیت علما ہند محمود مدنی گروپ کی جانب سے گوکل پوری ٹائر مارکیٹ کو دوبارہ سے بنوانے کے بعد آج دکانداروں کے حوالے کردیا گیا ۔ جمعیت علما کی جانب سے 97 دکانوں کی تعمیر نو کرائی گئی اور جمعہ سے قبل جنرل سکریٹری مولانا محمود مدنی نے آن لائن نیک خواہشات کا اظہار کرتے ہوئے مارکیٹ کا افتتاح کیا ۔ جبکہ ڈیم ایم ششی کوشل ، اے ڈی ایم آر آر اگروال اور ایس ڈی ایم اور ایس ڈی ایم یمنا وہار دیوبند اپودھیا ئے اور ایس ڈی ایم کراول نگر مسٹر بونیٹ کمار پٹیل نے درخت لگا کر کیا ۔ ڈی ایم ششی کوشل نے اس موقع پر جمعیت کی کوششوں کی ستائش کی ۔ ٹائر مارکیٹ کے ذمہ داروں نے اب اس کا نا م جمعیت ٹائر مارکیٹ رکھ دیا ہے ۔ اسے اب جمعیت ٹائر مارکیٹ مدنی نگر گوکل پوری کہا جائے گا ۔


محمو مدنی نے آن لائن افتتاح کیا


مولانا محمود مدنی نے آن لائن افتتاح کرتے ہوئے کہا کہ یہ مارکیٹ دوبارہ آباد ہوگئی ہے ۔ انھوں نے کہا کہ ایک مکان کی تعمیر سے ایک خاندان مستفید ہوتا ہے ، مگر ایک مارکیٹ کی تعمیر سے ہزاروں افراد کو روزگار ملتا ہے ۔ انھوں نے کہا کہ جمعیت علما ہند انسانیت کی بنیاد پر کام کرتی ہے ۔ جمعیت علما ہند نے یہاں جو کچھ بھی کیا ہے ، وہ صرف اپنی ذمہ داری ادا کی ہے ۔ مولانا مدنی نے کہا کہ فساد میں ظلم کرنے والوں نے اس مارکیٹ کو جلاد یا ۔ الحمدللہ اس علاقہ کے غیور مسلمانوں نے اس کام کو شروع کرایا ، کچھ اور تنظیموں نے یہاں کی تعمیر نو میں حصہ لیا اور اب یہ کام پورا ہوا ہے ۔


مولانا مدنی نے کہا کہ فساد میں ظلم کرنے والوں نے اس مارکیٹ کو جلاد یا ۔ الحمدللہ اس علاقہ کے غیور مسلمانوں نے اس کام کو شروع کرایا ، کچھ اور تنظیموں نے یہاں کی تعمیر نو میں حصہ لیا اور اب یہ کام پورا ہوا ہے ۔
مولانا مدنی نے کہا کہ فساد میں ظلم کرنے والوں نے اس مارکیٹ کو جلاد یا ۔ الحمدللہ اس علاقہ کے غیور مسلمانوں نے اس کام کو شروع کرایا ، کچھ اور تنظیموں نے یہاں کی تعمیر نو میں حصہ لیا اور اب یہ کام پورا ہوا ہے ۔


دہلی حکومت متاثرین کیلئے معاوضہ رقم میں کرے اضافہ

تاہم اس موقع پر مولانا نیاز احمد فاروقی اور اس پورے منصوبہ میں شامل رہے مولانا حکیم الدین قاسمی نے سرکار سے مطالبہ کیا کہ وہ متاثرین کے معاوضہ میں اضافہ کرے ۔ ساتھ ہی معاوضہ کی دائیگی میں تاخیر نہ کی جائے ۔ انھوں نے کہا کہ جو کام کیا گیا ہے وہ کام سرکاروں کو کرنا چاہئے، مگر سرکار اس قدر تاخیر کرتی ہے کہ اگر ملک کی رفاہی تنظیمیں آگے نہ آئیں تو لوگ مایوسی کے شکار ہو جائیں ۔ غورطلب ہے کہ شمال مشرقی دہلی کے فساد کے وقت گوکل پوری ٹائر مارکیٹ میں ہر طرف دھواں دھواں تھا اور جلی ہوئی دکانوں کے باقیات بکھرے تھے ، ٹائر مارکیٹ کے مالکوں کو اپنے ذریعہ معاش کی تباہی پر یقین نہیں آرہا تھا ، پوری دنیا میں وہاں کی تصویر یں وائر ل ہوئی تھیں ۔ تاہم اب تصویریں بدل گئی ہیں ۔


کرائی جارہی سبز تزئین کاری

ٹائر مارکیٹ کی تعمیر نو کے ساتھ مارکیٹ میں رونق لوٹ آئی ہے ، تو اب جمعیت علما اس مارکیٹ کی تزئین کاری کے لئے شجرکاری کررہی ہے ۔ یہی وجہ ہے کہ ڈی ایم ششی کوشل کے ذریعہ موقع پر پودے لگا کر تزئین کاری کی شر وعات کی گئی ۔ منصوبہ کے مطابق اس مارکیٹ میں بڑی تعدا د میں پودے لگائے جائیں گے ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Jul 24, 2020 07:35 PM IST