ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

شرپسند عناصر کےخلاف ہندو مسلمان متحد، دونوں طبقے کےلوگ مل کرکر رہے ہیں علاقےکا تحفظ

مقامی لوگوں کاکہنا ہےکہ انہوں نےگزشتہ 34 برسوں میں فرقہ وارانہ تشددکبھی نہیں دیکھا ہے۔ وہ یہاں طویل وقت سے امن وامان سے رہ رہے ہیں۔ چندلوگوں نے یہاں کا ماحول خراب کرنےکی کوشش کی ہے۔ یہ شرپسند عناصرعلاقے میں بدامنی پیدا کررہے ہیں۔

  • Share this:
شرپسند عناصر کےخلاف ہندو مسلمان متحد، دونوں طبقے کےلوگ مل کرکر رہے ہیں علاقےکا تحفظ
دہلی کا شمال مشرقی علاقہ شہریت ترمیمی قانون (CAA) پر ہورہے احتجاج کےدوران فرقہ وارانہ تشدد کی زد میں آگیا، لیکن اب اس علاقے میں واقع یمنا وہار میں رہنے والے مختلف مذاہب کے لوگ ان شرپسند عناصرکو ہرانےکےلئے متحد ہو رہے ہیں، جن کی وجہ سے دہلی کا ماحول خراب ہوا۔ مقامی لوگوں کا کہنا ہےکہ انہوں نےگزشتہ 34 برسوں میں فرقہ وارانہ تشدد کبھی نہیں دیکھا ہے۔ وہ یہاں طویل وقت سے امن وامان سے رہ رہے ہیں۔ چند لوگوں نے یہاں کا ماحول خراب کرنےکی کوشش کی ہے۔ یہ شرپسند عناصر علاقے میں بدامنی پیدا کر رہے ہیں۔ یمنا وہار میں رہنے والے ہندو یا مسلمان، دونوں فرقےکےلوگ شرپسند عناصرکو یہاں سے دور رکھنےکےلئے ایک ساتھ آگئے ہیں۔

نئی دہلی: دہلی کا شمال مشرقی علاقہ شہریت ترمیمی قانون (CAA) پر ہورہے احتجاج کےدوران فرقہ وارانہ تشدد کی زد میں آگیا، لیکن اب اس علاقے میں واقع یمنا وہار میں رہنے والے مختلف مذاہب کے لوگ ان شرپسند عناصرکو ہرانےکےلئے متحد ہو رہے ہیں، جن کی وجہ سے دہلی کا ماحول خراب ہوا۔ مقامی لوگوں کا کہنا ہےکہ انہوں نےگزشتہ 34 برسوں میں فرقہ وارانہ تشدد کبھی نہیں دیکھا ہے۔ وہ یہاں طویل وقت سے امن وامان سے رہ رہے ہیں۔ چند لوگوں نے یہاں کا ماحول خراب کرنےکی کوشش کی ہے۔ یہ شرپسند عناصر علاقے میں بدامنی پیدا کر رہے ہیں۔ یمنا وہار میں رہنے والے ہندو یا مسلمان، دونوں فرقےکےلوگ شرپسند عناصرکو یہاں سے دور رکھنےکےلئے ایک ساتھ آگئے ہیں۔


فرقہ وارانہ طاقتوں کو ہرانےکےلئے ہورہا ہے کام


مقامی باشندہ محمد ساجد نےکہا، 'ہندو اور مسلم طویل وقت سے علاقے میں امن وامان سے رہ رہے ہیں۔ ایسا پاگل پن علاقےکےلئے نیا ہے۔ یہی وجہ ہےکہ ہم نے فرقہ وارانہ طاقتوں کو ہرانےکا فیصلہ کیا ہے'۔ انہوں نےکہا کہ یہاں رہنے والےلوگوں نے باہری لوگوں کو بھگا دیا، جو یمنا وہارکے بازار علاقے میں آئے تھے اور جنہوں نے اس علاقے میں بدامنی پیدا کرنےکی کوشش کی تھی۔ باہری لوگوں کےخلاف اس علاقےکی حفاظت کےلئے مقامی لوگ باری باری سے کام کر رہے ہیں۔


لاٹھیوں سے لیس لوگ کر رہے ہیں نگرانی

یمنا وہارکے ایک دیگرباشندہ راہل نےکہا، 'لاٹھیوں سےلیس یہاں کے لوگ باہری لوگوں کے خلاف علاقےکی نگرانی کر رہے ہیں۔ ہم اس طرح عناصرکو کالونی کے اندر داخل ہونے اورہنگامہ کرنے سے روکنےکی کوشش کر رہےہیں۔

اتحاد سے ہی ملےگی شکست

رئیس الدین ریحان نے کہا کہ صرف اتحاد سے ہی تفرقہ بازی کرنے والی قوتوں کو شکست مل سکتی ہے۔ 'ہم ایسے عناصرکےخلاف ایک ساتھ آئے ہیں، جو ہمیں تقسیم کرنے میں لگی ہیں۔ دونوں طبقےکےلوگ اس لڑائی کو ایک ساتھ لڑ رہے ہیں۔

ناگہانی واقعات کو روکنےکےلئے اٹھائےگئے یہ قدم

سُمت نےکہا کہ بچوں کو اپنےگھروں کے اندر رہنےکے لئے کہا گیا ہے اور باشندوں نےکسی بھی ناگہانی واقعات کو روکنےکےلئے ہر طرح کے قدم اٹھائےگئے ہیں۔ واضح رہےکہ پولیس نےکہا کہ شمال مشرقی دہلی میں ہوئےتشدد میں اب تک 24 لوگوں کی موت ہوچکی ہے۔ دہلی پولیس کے پی آر او ایم ایس رندھاوا نےکہا ہےکہ دہلی تشدد معاملے میں اب تک 106 لوگوں کو گرفتارکیا گیا ہے۔ 18 لوگوں کےخلاف ایف آئی آر درج کی گئی ہے۔ انہوں نےکہا کہ ہم شمال مشرقی اضلاع کےلئے دو نمبر 22829334 اور 22829335 دستیاب کرا رہے ہیں۔ اس سے ہم لوگوں کو اپیل کرنا چاہیں گےکہ اگر آپ کوکسی مدد کی ضرورت ہے، آپ کے پاس کوئی اطلاع ہے، تو آپ بتا سکتے ہیں۔
First published: Feb 26, 2020 10:31 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading