ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

دہلی تشدد : عشرت جہاں نے جیل میں مار پیٹ کئے جانے کا لگایا الزام ، عدالت نے دیا یہ حکم

عشرت جہاں نے عدالت میں براہ راست دلائل پیش کرتے ہوئے کہا کہ یہ ایک مہینے کے اندر دوسرا واقعہ ہے اور وہ مسلسل جسمانی اذیت رسانی کی وجہ سے کافی ذہنی کشیدگی میں ہیں ۔

  • Share this:
دہلی تشدد : عشرت جہاں نے جیل میں مار پیٹ کئے جانے کا لگایا الزام ، عدالت نے دیا یہ حکم
دہلی تشدد : عشرت جہاں نے جیل میں مار پیٹ کئے جانے کا لگایا الزام ، عدالت نے دیا یہ حکم

شمال مشرقی دہلی میں ہوئے تشدد  (Delhi Violence) کے سلسلہ میں گرفتار کانگریس کی سابق پارشد عشرت جہاں  (Ishrat Jahan) نے منگل کو ایک عدالت کے سامنے الزام لگایا کہ منڈولی جیل میں قیدیوں نے ان کے ساتھ بری طرح سے مار پیٹ کی اور انہیں مسلسل استحصال کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے جبکہ ایڈیشنل سیشن جج امیتابھ راوت (Amitabh Rawat) نے جیل افسران کو عشرت جہاں کی سیکورٹی یقینی بنانے کیلئے فورا قدم اٹھانے کی ہدایت دی ہے ۔


عدالت نے جیل افسران کو بدھ کو تفصیلی رپورٹ پیش کرنے اور یہ بتانے کیلئے کہا ہے کہ اس معاملہ کے حل کیلئے کیا قدم اٹھائے گئے ہیں اور کیا عشرت جہاں (Ishrat Jahan) کوکسی دیگر جیل میں منتقل کرنے کی ضرورت ہے ۔ جب عدالت نے منڈولی جیل کی اسسٹنٹ سپرنٹنڈنٹ سے پوچھا کہ کیا ایسا کوئی واقعہ پیش آیا ہے ، تو انہوں نے اس کی تصدیق کی اور کہا کہ ضروری قدم اٹھائے گئے ہیں ۔ اس پر عدالت نے جیل افسران سے کہا کہ وہ (عشرت جہاں ) پوری طرح سے ڈری ہوئی ہیں ۔ براہ کرم فورا ان سے بات کریں اور حالات کو سمجھیں ۔ ان کے اندیشہ اور ڈر کو دور کرنے کیلئے اٹھائے گئے اقدامات کے بارے میں تفصیلی رپورٹ پیش کریں ۔


جج نے جیل افسران کو ویڈیو کانفرنس کے ذریعہ عشرت جہاں (Ishrat Jahan) کو بدھ کو عدالت میں پیش کرنے کا بھی حکم دیا ۔ عشرت جہاں نے عدالت میں براہ راست دلائل پیش کرتے ہوئے کہا کہ یہ ایک مہینے کے اندر دوسرا واقعہ ہے اور وہ مسلسل جسمانی اذیت رسانی کی وجہ سے کافی ذہنی کشیدگی میں ہیں ۔


عشرت جہاں (Ishrat Jahan) نے الزام لگایا کہ ایک مہینے میں یہ دوسرا واقعہ ہے ۔ آج صبح ساڑھے چھ بجے انہوں نے ( قیدیوں نے ) میری بری طرح سے پٹائی کی اور گالی گلوج کیا ۔ ان میں سے ایک نے اپنا ہاتھ بھی کاٹ لیا تاکہ مجھے جھوٹی شکایت کرنے پر سزا دی جائے ۔ خوش قسمتی سے جیل افسران نے ان کی بات نہیں سنی ۔ میں نے تحریری شکایت بھی کی ہے ۔ وہ مجھے دہشت گرد کہتے رہتے ہیں ۔ انہوں نے مجھ سے کینٹین میں پیسے کی بھی ڈیمانڈ کی ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Dec 22, 2020 06:50 PM IST