ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

ہندو مہاسبھا کا مطالبہ- تبلیغی جماعت پر عائدکی جائے پابندی

آل انڈیا ہندو مہاسبھا نے مرکزی حکومت سےتبلیغی جاعت پر پابندی لگانے اوران کی تمام سرگرمیوں اور پروگراموں کو غیرقانونی اورغیر آئینی قرار دینےکا مطالبہ کیا ہے۔

  • Share this:
ہندو مہاسبھا کا مطالبہ- تبلیغی جماعت پر عائدکی جائے پابندی
تبلیغی جماعت سے وابستہ کارکنان کی تلاش پورے ملک میں کی جارہی ہے۔ فائل فوٹو

نئی دہلی: آل انڈیا ہندو مہاسبھا نے مرکزی حکومت سے ملک میں کورونا وائرس کو ایک مبینہ سازش کے تحت پھیلانے کے سلسلے میں تبلیغی جاعت پر پابندی لگانے اور ان کی تمام سرگرمیوں اور پروگراموں کو غیر قانونی اور غیر آئینی قرار دینےکا مطالبہ کیا ہے۔

ہندو مہاسبھا کےقومی نائب صدر گگن بھاٹیہ اور قومی ترجمان آچاریہ پنکج شرما نے آج یہاں جاری ایک بیان میں دعویٰ کیا ہےکہ تبلیغی جماعت نے دہلی میں جو پروگرام کیا، وہ حکومت کی اجازت کے بغیرکیا گیا تھا۔ یہاں تک کہ تبلیغی جماعت میں بیرون ممالک سے جو نمائندے حصہ لینےکےلئےآئے ان کی بھی مکمل اطلاعات جماعت کی طرف سے حکومت کو نہیں دی گئی۔ ایسے میں جب ساری دنیا میں کرونا وائرس کی وبا پھیلی ہوئی ہے تو تبلیغی جماعت کے دہلی پروگرام میں حصہ لینے والے تقریبا دو ہزار سے زیادہ نمائندوں کی میڈیکل جانچ کرانا بھی ضروری نہیں سمجھا گیا۔


تبلیغی جماعت کے خلاف پورے ملک میں ناراضگی کا ماحول تیار ہورہا ہے۔ علامتی تصویر
تبلیغی جماعت کے خلاف پورے ملک میں ناراضگی کا ماحول تیار ہورہا ہے۔ علامتی تصویر



آل انڈیا ہندو مہاسبھا کےلیڈروں نےکہا کہ تبلیغی جماعت نے اپنے نمائندوں کی میڈیکل جانچ نہ کرا کر اور ان کے آنےکی اطلاع حکومت کو نہ دے کر واضح کردیا ہے کہ ملک میں کورونا وبا پھیلانے کےلئے یہ ان کی ایک مبینہ منصوبہ بند سازش تھی۔


نیوز ایجنسی یواین آئی اردو
First published: Apr 07, 2020 08:34 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading