உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    JMI: سال 1975 میں جماعت اسلامی پرلگی پابندی سےمتعلق بڑاانکشاف! صحافی کاچونکادینےوالااعتراف

    او عبدالرحمن

    او عبدالرحمن

    واضح رہے کہ جماعت اسلامی 26 اگست 1941 کو لاہور میں مولانا سید ابوالاعلیٰ مودودی (Sayyid Abul Ala Maududi) کی قیادت میں قائم ہوئی۔ تقسیم کے بعد ہندوستان میں باقی رہ جانے والی تنظیم کے اراکین نے ایک آزاد جماعت بنانے کے لیے خود کو دوبارہ منظم کیا۔

    • Share this:
      نیوز 18 ڈاٹ کام کی ایک خبر کے مطابق ایک چونکا دینے والے اعتراف میں جماعت اسلامی (Jamaat-e-Islami) سے وابستہ اور مدھیامم گروپ (Madhyamam Group) کے ایڈیٹر او عبدالرحمن (O Abdurahman) نے مبینہ طور پر انکشاف کیا ہے کہ انہوں نے ہندوستانی حکومت کی طرف سے بھیجے گئے خطوط کو تباہ کر دیا تھا جب وہ ہندوستان میں ایمرجنسی کے دور میں قطر کے سفارت خانے کے اہلکار تھے۔

      یہ خطوط قطری میڈیا کو تقسیم کیے جانے تھے، ان میں یہ وضاحت موجود تھی کہ جماعت اسلامی پر ہندوستان میں پابندی کیوں عائد کی گئی تھی۔ عبدالرحمن نے کہا کہ وہ اس وقت سفارت خانے کے ساتھ ترجمان کے طور پر کام کر رہے تھے۔ انہوں نے مزید کہا کہ ان کے ضمیر نے انہیں قطری میڈیا کو خط بھیجنے کی اجازت نہیں دی۔

      جماعت اسلامی پر پابندی کیوں لگائی گئی؟

      جماعت اسلامی پر پابندی 1975 میں ایمرجنسی کے اعلان کے چند دن بعد لگائی گئی۔ سینئر صحافی نے کہا کہ اگلے دو سال واقعی مشکل تھے۔ انہوں نے مزید کہا کہ اسلامی تنظیموں اور رہنماؤں نے اس فیصلے کی شدید مخالفت کی تھی۔ عبدالرحمن نے مبینہ طور پر یہ بھی انکشاف کیا کہ آر ایس ایس پر پابندی کی وضاحت کرنے والے خطوط فوری طور پر میڈیا کو پہنچائے گئے۔

      مزید پڑھیں:ممبئی 26/11 دہشت گردانہ حملہ: سابق ہندوستانی ڈپلومیٹ کا بڑا انکشاف، پاکستانی فوج نے کہی تھی یہ بات

      واضح رہے کہ جماعت اسلامی 26 اگست 1941 کو لاہور میں مولانا سید ابوالاعلیٰ مودودی (Sayyid Abul Ala Maududi) کی قیادت میں قائم ہوئی۔ تقسیم کے بعد ہندوستان میں باقی رہ جانے والی تنظیم کے اراکین نے ایک آزاد جماعت بنانے کے لیے خود کو دوبارہ منظم کیا۔ جماعت اسلامی ہند اپریل 1948 میں الہ آباد میں وجود میں آئی اور اسے آفیشیل طور پر "جماعت اسلامی ہند" کہا گیا۔

      مزید پڑھیں: کرناٹک میں بی جے پی لیڈر پروین نیٹارو کے قتل کی جانچ NIA کو سونپی گئی


      اس تنظیم پر ہندوستانی حکومت نے اپنے سات دہائیوں کے وجود کے دوران دو بار پابندی عائد کی تھی: پہلی عارضی طور پر 1975 تا 1977 کی ایمرجنسی کے دوران اور پھر 1992 میں۔ جب کہ پہلی بار پابندی کو ایمرجنسی کے خاتمے کے بعد منسوخ کر دیا گیا تھا، دوسری بار سپریم کورٹ نے کالعدم کر دیا تھا۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: