ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

دہلی کے فساد زدہ علاقے کے دیال پور تھانہ نے درج کی ایک جیسی پانچ ایف آئی آر

راجدھانی دہلی میں 25 فروری سے لے کر 27فروری تک شمال مشرقی دہلی میں ہوئے فرقہ وارانہ فسادکے دوران متاثرین اور عام لوگوں کے ذریعہ سینکڑوں کالیں مدد کیلئے کی گئیں تھی۔ تاہم پولیس مدد کے لئے نہیں پہنچی۔ اس قسم کی شکایتیں کھل کر سامنے آئی تھیں۔

  • Share this:
دہلی کے فساد زدہ علاقے کے دیال پور تھانہ نے درج کی ایک جیسی پانچ ایف آئی آر
تصویر:نیوز18- فائل فوٹو)۔

نئی دہلی۔ راجدھانی دہلی میں 25 فروری سے لے کر 27فروری تک شمال مشرقی دہلی میں ہوئے فرقہ وارانہ فسادکے دوران متاثرین اور عام لوگوں کے ذریعہ سینکڑوں کالیں مدد کیلئے کی گئیں تھی۔ تاہم پولیس مدد کے لئے نہیں پہنچی۔ اس قسم کی شکایتیں کھل کر سامنے آئی تھیں۔ دہلی پولیس کی جانچ کو لے کر سماجی کارکن ، حقوق انسانی کارکن اور سول سوسائٹی کے لوگ مسلسل سوالات اٹھارہے ہیں تاہم اب اس کڑی میں ایک بڑا سوال سامنے آیا ہے جس سے دہلی پولیس کے کردار پر ایک اور بڑا سوالیہ نشان لگ گیا ہے۔ دراصل دہلی پولیس کے تھانہ دیال پور کے تحت پانچ ایف آئی آر درج کی گئی ہیں جن میں ایف آئی آر کا سارا مواد یکساں ہیں۔ حالانکہ یہ تمام معاملے آرمس ایکٹ کے تحت درج ہوئے ہیں لیکن ہرایف آئی آر کی کہانی محض یہ ہے۔ موقع پر ڈیوٹی کانسٹیبل کو مشکوک شخص چھیا ہوا ملا جس کی جامہ تلاشی پر دائیں جیب سے دیسی کٹا برآمد ہوا ۔تھانہ کو اطلاع دی گئی۔ موقع پر راہگیروں کو شامل تفتیش ہونے کے لئے کہا گیا تاہم وہ جائز مجبوری بتاکر چلے گئے۔ وقت کی کمی کے باعث خود ہی رپورٹ درج کی گئی۔


پہلی ایف آئی آر 66/2020


ستائیس

فروری تھانہ دیال پور ایف آئی آر نمبر 0066۔ کانسٹیبل پیوش کا بیان نمبر 176/NEپی آئی ایس نمبر 28122137تھانہ دیال پور اپنے کانسٹیبل ساتھی روہت کے ساتھ دفعہ 144نافذ ہونے کے تحت ڈیوٹی پر برج پوری علاقہ میں تھا تبھی تین بجے کے قریب نالہ روڈ پر ایک گاڑی کے پیچھے مشکوک شخص ملا جو کو روک کر جامہ تلاشی لی تو دیسی کٹا دائیں جیب سے برآمد ہوا تفتیش پر معلوم ہوا محمد شعیب عمر 22سال ولد محمد فروخ رہائشی جعفرآباد شناخت ہوئی جس کی اطلاع تھانہ کو دی ۔ہیڈ کانسٹیبل موقع پر آئے چار پانچ راہ گیروں کو شامل تفتیش ہونے کو کہا لیکن وہ جائز ضرورت بتاکر نام وہ پتہ بتائے بغیرچلے گئے ۔وقت کی کمی کے وجہ سے کےسی کو نوٹس بھی نہیں دیا جا سکا۔ایف آئی آر میں دیشی کٹے کی تفصیلات بتاتے ہوئے لکھا گیا ہے کہ سادے کاغذ پر کٹے کا خاکہ بنایا گیا لوہے کا کٹا ہے جس پر لکڑی کادستہ لگا ہے ۔کٹے کا سائز لمبائی 29.3سینٹی میٹر ، ، نال 15.7سینٹی میٹر ، زندہ کارتوش کا سائز 7.3اور پیندے کا سائز 1.4سینٹی میٹرتھا۔واقعہ تین بج کر تیرہ منٹ پر ہوا اور تحریرپانچ بجے لکھی گئی ۔آرمس ایکٹ کے تحت 25/54/59دفعات میں معاملے کو درج کیا گیا ۔

دوسری ایف آئی آر 67/20202

ستائیس

فروری دیال پور تھانہ ،ایف آئی آر نمبر 0067۔کانسٹیبل سبھاش کا بیان نمبر 908/NEپی آئی ایس نمبر 28102947کے تحت لکھا گیا ہے کہ 27فروری کو ساتھی کانسٹیبل سنیل کے ساتھ دفعہ 144ڈیوٹی کے تحت چاند باغ علاقہ میں تھا جہاں پر نالہ روڈ پر بند پان کے کھوکھے کی آڑ میں مشکوک شخص ملا۔ تفتیش پر بتہ چلا وہ شاہ رخ ولد نثار احمدعمر 22سال ، رہائشی نہرو وہار گلی نمبر 7دیال پور ہے ۔جامہ تلاشی پر دیسی کٹا دائیں جیب سے برآمد ہوا۔ تھانہ کو اطلاع دی جس پر ہیڈ کانسٹیبل سنیل کمار موقع پر آئے اور چار پانچ راہ گیروں کو شامل تفتیش ہونے کو کہا لیکن وہ جائز ضرورت بتاکر نام و پتہ بتائے بغیر چلے گئے ۔ایف آئی آر میں دیشی کٹے کی تفصیلات بتاتے ہوئے لکھا گیا ہے کہ سادے کاغذ پر کٹے کا خاکہ بنایا گیا لوہے کا کٹا ہے جس پر لکڑی کادستہ لگا ہے ۔کٹے کا سائز لمبائی 28.4سینٹی میٹر ، ، نال 16.5سینٹی میٹر ، زندہ کارتوش کا سائز 7.3اور پیندے کا سائز 1.4سینٹی میٹرتھا۔واقعہ ۶بجے اور تحریر تحریرساڑھے سات بجے لکھی گئی ۔آرمس ایکٹ کے تحت 25/54/59دفعات میں معاملے کو درج کیا گیا۔

تیسری ایف آئی آر 68/20203

ستائیس
فروری ، تھانہ دیال پور ایف آئی آر نمبر 0068۔کانسٹیبل دیپک کا بیان نمبر/NE 3046، پی آئی ایس نمبر 28104680کے تحت لکھا گیا ہے کہ 6بج کر پندرہ منٹ پر اپنے ساتھی کانسٹیبل نیشو کے ساتھ دفعہ 144کے تحت ڈیوٹی پر السر ا ہوٹل مین روڈ بابو نگر کے علاقہ میں تھے تبھی گلی کے پاس مشکوک شخص چھپا کھڑا تھا تفتیش پر پتہ چلا کہ وہ فیضان ولد عبدالرحمان عمر 28،رہائشی گلی نمبر 9گوتم پوری سلیم پور ہے جامہ تلاشی پر دائیں جیب سے دیسی کٹا برآمد ہوا میں یہاں دہشت پھیلانے آیاتھا تبھی آپ لوگوںنے قابوکرلیا تھانہ اطلاع دی جس پر ٹیڈ کانسٹیبل اشوک موقع پر آئے اور اور چار پانچ راہ گیروں کو شامل تفتیش ہونے کو کہا لیکن وہ جائز ضرورت بتاکر نام وہ پتہ بتائے بغیر چلے گئے ۔ایف آئی آر میں دیشی کٹے کی تفصیلات بتاتے ہوئے لکھا گیا ہے کہ سادے کاغذ پر کٹے کا خاکہ بنایا گیا لوہے کا کٹا ہے جس پر لکڑی کادستہ لگا ہے ۔کٹے کا سائز لمبائی 28.4سینٹی میٹر ، ، نال 16.5سینٹی میٹر ، زندہ کارتوش کا سائز 7.3اور پیندے کا سائز 1.4سینٹی میٹرتھا۔واقعہ 6:15بجے کاہے اور تحریر7:45بجے لکھی گئی ۔آرمس ایکٹ کے تحت 25/54/59دفعات میں معاملے کو درج کیا گیا۔

چوتھی ایف آئی 69/20204

کانسٹیبل اشوک کا بیان نمبر/NE 1214 پی ایس آئی نمبر 28183041کے تحت درج کیا گیا ہے کہ کانسٹیبل اشوک اپنے ساتھی کانسٹیبل گیان سنگھ کے ساتھ دفعہ 144ڈیوٹی کے تحت نیو مصطفی آباد میں تھا تقریبا 8:55بجے سنجے چوک پر ایک مشکوک شخص ملا تفتیش پر معلوم ہوا کہ وہ اطہر ولد نعمت اللہ عمر 28سال ، رہائشی بھاگیرتھی وہار ہے جامہ تلاشی پر لوڈیڈ دیسی کٹابرآمد ہوا تھانہ اطلاع دی جس پر ہیڈ کانسٹیبل ستپال موقع پر پہونچے اور چار پانچ راہ گیروں کو شامل تفتیش ہونے کو کہا لیکن وہ جائز ضرورت بتاکر نام وہ پتہ بتائے بغیر چلے گئے ۔ایف آئی آر میں دیشی کٹے کی تفصیلات بتاتے ہوئے لکھا گیا ہے کہ سادے کاغذ پر کٹے کا خاکہ بنایا گیا لوہے کا کٹا ہے جس پر لکڑی کادستہ لگا ہے ۔کٹے کا سائز لمبائی 29.3سینٹی میٹر ، ، نال 15.7سینٹی میٹر ، زندہ کارتوش کا سائز 7.3اور پیندے کا سائز 1.4سینٹی میٹرتھا۔واقعہ 9:17بجے کاہے اور تحریر 10:20بجے لکھی گئی ۔آرمس ایکٹ کے تحت 25/54/59دفعات میں معاملے کو درج کیا گیا۔

پانچوی ایف آئی آر 70/20205

ستائیس
فروری تھانہ دیال پور ایف آئی آر نمبر 0070۔ کانسٹیبل چمن کا بیان نمبر 1254/NEپی آئی ایس نمبر 28103510کے تحت لکھا گیا کہ چمن کانسٹیبل اپنے ساتھی کانسٹیبل امت کے ساتھ دفعہ 144کے تحت ڈیوٹی پر تخمیر پور میں تقریبا 09;25پر تھا تبھی تخمیر پور اسکول کے پاس ایک مشکوک شخص چھپا ہوا کھڑا تھا ۔تفتیش پر معلوم ہوا وہ فیض احمد ولد فیضل احمد عمر 30سال ، رہائشی راجیوگاندھی نگر نیو مصطفی آباد ہے جامہ تلاشی پر دیسی کٹا برآمد ہوا جس کی اطلاع تھانہ کو دی جس پرایس آئی ونیت موقع پر پہونچے اور اور چار پانچ راہ گیروں کو شامل تفتیش ہونے کو کہا لیکن وہ جائز ضرورت بتاکر نام وہ پتہ بتائے بغیر چلے گئے ۔ایف آئی آر میں دیشی کٹے کی تفصیلات بتاتے ہوئے لکھا گیا ہے کہ سادے کاغذ پر کٹے کا خاکہ بنایا گیا لوہے کا کٹا ہے جس پر لکڑی کادستہ لگا ہے ۔کٹے کا سائز لمبائی 28.4سینٹی میٹر ، ، نال 16.5سینٹی میٹر ، زندہ کارتوش کا سائز 7.3اور پیندے کا سائز 1.4سینٹی میٹرتھا۔واقعہ 6:15بجے کاہے اور تحریر7:45بجے لکھی گئی ۔آرمس ایکٹ کے تحت 25/54/59دفعات میں معاملے کو درج کیا گیا۔

دہلی اسمبلی اقلیتی فلاح کمیٹی کے سامنے آیا معاملہ

دہلی فساد کو لے کر انتظامیہ سے مسلسل بات چیت کررہی دہلی اسمبلی اقلیتی فلاح کمیٹی کے سامنے یہ معاملہ آیا جس کے بعد ا ن ایف آئی آر پر سوالات اٹھنے شروع ہو گئے۔ کمیٹی کے چیئرمین امانت اللہ خان نے شوشل میڈیا پر ایف آئی آر شیئر کردی اور دہلی پولیس کمشنر اور دہلی کے ایل جی انل بیجل کو ٹیگ کرتے ہوئے لکھا دہلی فساد کو لے کر انصاف کا دعوی کرنے والی دہلی پولیس کا ایک اور کارنامہ۔ ایک ہی تاریخ میں ایک ہی تھانہ دیال پور میں ایک جیسی مواد والی پانچ ایف آئی آر درج کی گئیں۔
Published by: Nadeem Ahmad
First published: Sep 18, 2020 08:20 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading