ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

ڈاکٹروں نے کھڑے کئے ہاتھ، چار دن تک بھٹکنے کے بعد حاملہ خاتون کے ساتھ ہوا یہ۔۔۔

پنجاب کے جالندھر (Jalandhar) میں ایک حاملہ خاتون (pregnant ladies) اور پیٹ میں پل رہے بچے کی موت کا معاملہ سامنے آیا ہے۔

  • Share this:
ڈاکٹروں نے کھڑے کئے ہاتھ، چار دن تک بھٹکنے کے بعد حاملہ خاتون کے ساتھ ہوا یہ۔۔۔
جانچ افسر کے آر بیجو نے بتایا کہ پوسٹ مارٹم رپورٹ کے بعد جے موہن تھمپی کے بیٹے اشون کو گرفتاری کے بعد اشون نے اپنا جرم قبول کر لیا ہے۔

پنجاب کے جالندھر (Jalandhar) میں ایک حاملہ خاتون (pregnant ladies) اور پیٹ میں پل رہے بچے کی موت کا معاملہ سامنے آیا ہے۔ ملی جانکاری کے مطابق یوپی کی مقامی 22 سالہ وکی جالندھر کے آدم پور میں اینٹ بھٹے پر مزدوری کرتا تھا۔ 28 مئی کو 19 سالہ بیوی سیما کے پیٹ میں اچانک درد ہا اور وہ اسپتال لیکر پہنچا جہاں ڈاکٹروں نے اسے جالندھر کیلئے ریفر کردیا۔ اس کے بعد وہاں بھی ڈاکٹروں نے ہاتھ کھڑے کردئے۔ وکی بیوی سیما کو لیکر جالندھر لوٹ آیا۔ یہاں سیما کو سول اسپتال میں داخل کرایا گیا جہاں اس کی موت ہوگئی۔

ڈاکٹروں کی بڑی لاپرواہی۔۔

ڈاکٹروں کی اس بڑی لاپرواہی کے سامنے آنے کے بعد ضلع انتظامیہ نے اعلی سطحی جانچ کے احکام دئے ہیں۔ ڈسٹرکٹ کلکٹر نے کہا کہ یہ ایک سنگین معاملہ ہے اور اس کی جانچ ہوگی۔ معاملے کی جانچ اسمارٹ سٹی کی سی ای او آئی ایس ایس شینا اگروال کو سونپی گئی ہے اور ایک ہفتے کے اندر رپورٹ طلب کی گئی ہے۔

ڈاکٹر نے کہا یہ جانیں

وہیں وکی نے کہا کہ 5 مئی کو جب اس نے اپنی بیوی سیما کا الٹراساؤنڈ کرایا تھا تب حالت ٹھیک تھی۔ امرتسر میں بیوی کو دن دن تک داخل نہیں کیا گیا۔ وہاں کے ڈاکٹروں نے ٹھیک سے علاج نہیں کیا۔ وہیں ڈاکٹروں کا کہنا ہے کہ سیما کے پیٹ میں بچے کی موت پہلے ہی ہوگئی تھی اور بیتر علاج کیلئے کہیں اور جانے کو کہا گیا تھا۔


سول سرجن ڈاکٹر گریندر چاولہ نے کہا کہ سیما کے علاج میں کوئی کمی نہیں کی گئی۔ بچہ پہلے ہی مر چکا تھا لیکن اور بہتر علاج کیلئے ہم نے انہیں کسی اور اسپتال میں دکھانے کی صلاح دی۔ جب وہ لوٹ کر آیا تو ہم نے پوچھا کیا ہوا تو وکی نے بتایا کہ میڈیکل کالج امرتسر میں ٹھیک علاج نہیں ہوا اس لئے وہ جالندھر آگیا۔
First published: Jun 06, 2020 12:28 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading