ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

پاکستان میں ہندوستانی ہائی کمیشن کے پاس نظر آیا ڈرون ، ہندوستان نے کیا خبردار، ایسا واقعہ دوبارہ نہ ہو

وزارت خارجہ کے ترجمان ارندم باغچی نے کہا کہ پاکستان کو اس بات کی جانچ کرنی چاہئے کہ ہائی کمیشن کی سیکورٹی میں سیندھ کیسے لگی ۔ انہوں نے کہا کہ 26 جون کو اسلام آباد میں واقع ہندوستانی ہائی کمیشن کے اوپر ڈرون دکھائی دیا تھا ، ہم امید کرتے ہیں کہ پاکستان اس معاملہ کی جانچ کرے گا اور یقینی بنائے گا کہ سیکورٹی میں سیندھ کا واقعہ دوبارہ پیش نہ آئے ۔

  • Share this:
پاکستان میں ہندوستانی ہائی کمیشن کے پاس نظر آیا ڈرون ، ہندوستان نے کیا خبردار، ایسا واقعہ دوبارہ نہ ہو
وزارت خارجہ کے ترجمان ارندم باغچی نے کہا کہ پاکستان کو اس بات کی جانچ کرنی چاہئے کہ ہائی کمیشن کی سیکورٹی میں سیندھ کیسے لگی ۔ انہوں نے کہا کہ 26 جون کو اسلام آباد میں واقع ہندوستانی ہائی کمیشن کے اوپر ڈرون دکھائی دیا تھا ، ہم امید کرتے ہیں کہ پاکستان اس معاملہ کی جانچ کرے گا اور یقینی بنائے گا کہ سیکورٹی میں سیندھ کا واقعہ دوبارہ پیش نہ آئے ۔

نئی دہلی : پاکستان میں ہندوستانی ہائی کمیشن کے پاس ڈرون دکھائی دینے کے معاملہ پر ہندوستانی وزارت خارجہ نے شدید رد عمل ظاہر کیا ہے۔ وزارت خارجہ کے ترجمان ارندم باغچی نے کہا کہ پاکستان کو اس بات کی جانچ کرنی چاہئے کہ ہائی کمیشن کی سیکورٹی میں سیندھ کیسے لگی ۔ انہوں نے کہا کہ 26 جون کو اسلام آباد میں واقع ہندوستانی ہائی کمیشن کے اوپر ڈرون دکھائی دیا تھا ، ہم امید کرتے ہیں کہ پاکستان اس معاملہ کی جانچ کرے گا اور یقینی بنائے گا کہ سیکورٹی میں سیندھ کا واقعہ دوبارہ پیش نہ آئے ۔


بتادیں کہ پاکستان میں واقع ہندوستانی ہائی کمیشن میں یہ ڈرون ایسے وقت میں دیکھا گیا جب ہندوستان میں جموں و کشمیر میں واقع انڈین ایئرفورس اسٹیشن پر دو ڈرون سے حملے ہوئے  ۔ اس حملے کے بعد بھی مسلسل ڈرون کا دیکھا جانا جاری ہے ۔ یہ پہلی مرتبہ ہے جب پاکستان میں ہندوستانی مشن کے پاس ڈرون دیکھے جانے کا ایسا واقعہ پیش آیا ہے ۔ مشن کے پاس ڈرون کی موجودگی اس وقت دیکھی گئی جب وہاں ایک پروگرام چل رہا تھا ۔ جس دن پاکستان میں یہ واقعہ پیش آیا ، اسی دن جموں میں ایئرفورس اسٹیشن پر پہلا ڈرون حملہ ہوا تھا ۔


طالبان لیڈر سے ایس جے شنکر کی ملاقات کی خبریں غلط


جمعہ کو وزارت خارجہ سے طرف سے ایک مرتبہ پھر ایس جے شنکر کی کسی بھی طالبان لیڈر کے ساتھ ملاقات کو خبر کو فرضی بتایا گیا ۔ وزارت خارجہ نے کہا کہ یہ باتیں پوری طرح سے بے بنیاد اور جھوٹی ہیں ۔ ساتھ ہی وزارت نے کہا کہ افغانستان میں بڑھتے تشدد پر ہندوستان کی نگاہیں مرکوز ہیں ۔ ہندوستان کی طرف سے وہاں موجود ہندوستانی شہریوں کیلئے ایڈوائزری بھی جاری کی گئی ہے ۔

افغانستان میں واقع ہندوستانی سفارت خانہ کی جانب سے کہا گیا ہے کہ ہندوستانی شہریوں پر اغوا کئے جانے کا سنگین خطرہ منڈلا رہا ہے ۔ سفارت خانہ نے کہا کہ اہم شہروں کے باہر سفر سے پرہیز کرنا چاہئے اور کسی بھی ضروری کام سے باہر جائیں تو اس کو جتنا ممکن ہوسکے اتنا پوشیدہ رکھیں ۔ بتادیں کہ امریکہ نے گیارہ ستمبر تک اپنی افواج ہٹانے کا اعلان کیا ہے ، جس کی وجہ سے افغانستان میں گزشتہ کچھ ہفتوں میں کئی حملے ہوئے ہیں ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Jul 02, 2021 08:46 PM IST