ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

ای ڈی نے این آر ایچ ایم گھوٹالے کے ملزم کی 200 کروڑ کی جائیداد ضبط کی

لکھنؤ۔ بہوجن سماج پارٹی (بی ایس پی)سے نکالے گئے سابق وزیر بابو سنگھ کشواہا پرانفورسمنٹ ڈائرکٹوریٹ (ای ڈی) نے شکنجہ کستے ہوئے آج ان کی 200 کروڑ روپے کی رئیل اسٹیٹ کی جائیداد ضبط کر لی۔

  • News18
  • Last Updated: Sep 24, 2015 09:24 AM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
ای ڈی نے این آر ایچ ایم گھوٹالے کے ملزم کی 200 کروڑ کی جائیداد ضبط کی
لکھنؤ۔ بہوجن سماج پارٹی (بی ایس پی)سے نکالے گئے سابق وزیر بابو سنگھ کشواہا پرانفورسمنٹ ڈائرکٹوریٹ (ای ڈی) نے شکنجہ کستے ہوئے آج ان کی 200 کروڑ روپے کی رئیل اسٹیٹ کی جائیداد ضبط کر لی۔

لکھنؤ۔ بہوجن سماج پارٹی (بی ایس پی)سے نکالے گئے سابق وزیر بابو سنگھ کشواہا پرانفورسمنٹ ڈائرکٹوریٹ (ای ڈی) نے شکنجہ کستے ہوئے آج ان کی 200 کروڑ روپے کی رئیل اسٹیٹ کی جائیداد ضبط کر لی۔


واضح رہے کہ بابو سنگھ کشواہا کروڑوں روپے کے قومی دیہی صحت مشن (این آر ایچ ایم) کے اسکینڈل کے الزام ​​میں جیل میں بند ہیں۔ ای ڈی بابو سنگھ کشواہا کے خلاف حوالہ معاملے کی بھی تحقیقات کر رہا ہے۔ ڈائریکٹوریٹ نے گزشتہ سال سابق وزیر بابو سنگھ کشواہا کی لکھنؤ کے گومتی نگر میں چار کروڑ 25 لاکھ روپے کی جائیداد ضبط کی تھی۔


ای ڈی کے ذرائع نے کہا کہ مسٹر کشواہا نے اپنے پارٹنر کے نام سے بہت ساری جائیداد خریدی تھی۔ مسٹر کشواہا کے پاس لکھنؤ کے سب سے مہنگے علاقے حضرت گنج کے كسماڈا ہاؤس میں ایک فلیٹ ہے جسے انهوں نے سوربھ جین کے نام سے خریدا تھا۔ اس کے علاوہ اسی بلڈنگ میں ان کے دو فلیٹ اور ہیں جو مختلف نام سے لئے گئے ہیں۔ دہلی کے قرول باغ میں ان کا تین منزلہ شاپنگ كامپلکس بھی ہے۔ ڈائریکٹوریٹ نے ان کی کچھ قیمتی کاریں بھی ضبط کی ہیں۔ ڈائریکٹوریٹ کے مطابق ضبط کی گئی جائیداد کی قیمت تقریبا دو سو کروڑ روپئے ہے۔


اس سے قبل ای ڈی نے مسٹر کشواہا اور 14 دیگر لوگوں کے خلاف معاملہ درج کیا تھا۔ مرکزی تفتیشی ایجنسی (سی بی آئی)نے بھی این آر ایچ ایم گھوٹالے میں 15 مختلف معاملے درج کئے ہیں۔

First published: Sep 24, 2015 09:22 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading