ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

پورے ملک میں جوش وخروش کے ساتھ منایا جارہا ہے جشن عید میلاد النبیؐ

اسلامی کلینڈرکے لحاظ سے اسلامی سال کے تیسرے مہینے ربیع الاول کی 12 ویں تاریخ کو 571 عیسوی میں حضرت محمد صلی اللہ علیہ وسلم کی پیدائش ہوئی تھی، اسی مناسبت سے مسلمان عید میلاد النبی مناتے ہیں۔

  • Share this:
پورے ملک میں جوش وخروش کے ساتھ منایا جارہا ہے جشن عید میلاد النبیؐ
جشن عید میلاد النبی مناتے ہوئے مسلمان: فائل فوٹو

آج یعنی 21 نومبر کو عید میلاد النبی کا تیوہار منایا جارہا ہے۔ مسلمانوں کے لئے یہ دن بے حد خاص ہوتا ہے۔ مسلمان اسے تیوہارکے طورپرمناتے ہیں۔ عید میلاد النبی پیغمبرحضرت محمد صلی اللہ علیہ وسلم کی یوم ولادت کے طورپرمنایا جاتا ہے۔ مسلمان آخری نبی حضرت محمد مصطفیٰ صلی اللہ علیم وسلم کے امتی ہیں۔


پیغمبرحضرت محمد صلی اللہ علیہ وسلم کا پورا نام محمد ابن عبداللہ بن عبدالمطلب تھا اوران کی پیدائش مکہ شہرمیں ہوئی تھی۔ مکہ کے قریب غارحرا میں آپ صلی اللہ علیہ وسلم پر وحی نازل ہوئی تھی، غارحرا میں جو وحی نازل ہوئی تھی، وہ قرآن مقدس کی شکل میں موجود ہے۔ حالانکہ جشن عید میلاد النبی سے متعلق مسلمانوں میں اختلاف ہے۔ تاہم جولوگ عید میلاد النبی مناتے ہیں وہ انتہائی تزک واحتشام کےساتھ اس کا اہتمام کرتے ہیں۔


ملک کے مختلف شہروں، علاقوں اورگاوں میں جشن عید میلاد النبی کا انعقاد کیا جارہا ہے۔ اس موقع پردینی اجلاس کا اہتمام، قرآن خوانی، جلسہ سیرت النبی اورنعتیہ مشاعرے کا انعقاد کیا جارہا ہے۔ لکھنو، حیدرآباد، گلبرگہ، دہلی، ممبئی، بنگلورو، جے پور، کولکاتا سمیت پورے ملک میں انتہائی جوش وخروش کے ساتھ عید میلاد النبی کااہتمام کیا جارہا ہے۔


ملک کے مختلف حصوں میں بیشترمسلمان عید میلاد النبی کا جشن مناتے ہیں۔ دراصل اسلامی کلینڈرکے لحاظ سے اسلامی سال کے  تیسرے مہینے ربیع الاول کی 12 ویں تاریخ کو 571 عیسوی میں حضرت محمد صلی اللہ علیہ وسلم کی پیدائش ہوئی تھی، اسی مناسبت سے مسلمان عید میلاد النبی مناتے ہیں۔ حالانکہ اس بارے میں بھی امت مسلمہ میں اختلاف ہے۔ ایک طبقے کا ماننا ہے کہ حضوراکرم صلی اللہ علیہ وسلم کی پیدائش 9 ربیع الاول کو ہوئی تھی۔
First published: Nov 21, 2018 11:28 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading