ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

ملک بھر میں آج منایا جائے گا عید الاضحی کا تہوار ، جانئے کہاں نماز کی اجازت اور کہاں پابندی؟

Eid Ul Adha 2021 : صدر جمہوریہ رامناتھ کووند نے عیدالاضحی کے موقع پر اہل وطن کو مبارکباد اور نیک خواہشات دی ہیں۔ صدر جمہوریہ کووند نے عیدالاضحی سے قبل کی شام منگل کو کہا کہ عیدالاضحی کے موقع پر تمام اہل وطن، خاص طورپر ہمارے مسلمان بھائیوں اور بہنوں کو مبارکباد دیتا ہوں اور ان کی بہتری کی دعا کرتا ہوں۔

  • Share this:
ملک بھر میں آج منایا جائے گا عید الاضحی کا تہوار ، جانئے کہاں نماز کی اجازت اور کہاں پابندی؟
ملک بھر میں آج منایا جائے گا عید الاضحی کا تہوار ، جانئے کہاں نماز کی اجازت اور کہاں پابندی؟ ۔ (Image: Shutterstock)

نئی دہلی : ملک بھر میں بدھ کو عید الاضحی کا تہوار منایا جائے گا ۔ کورونا وائرس کی وبا کی وجہ سے اس مرتبہ کورونا پروٹوکول پر عمل کرتے ہوئے مسلمانان ہند بقرعید کا تہوار منائیں گے ۔ زیادہ تر ریاستوں میں کووڈ۔19 سے متعلق پابندیاں لاگو ہیں۔ مختلف ریاستوں نے عید الاضحیٰ 2021 کے پیش نظر رہنما اصول کئے ہیں ۔ کئی ریاستوں میں اجتماعی نمازوں پر پابندی عائد کردی گئی ہے ۔


ادھر صدر جمہوریہ رامناتھ کووند نے عیدالاضحی کے موقع پر اہل وطن کو مبارکباد اور نیک خواہشات دی ہیں۔ صدر جمہوریہ کووند نے عیدالاضحی سے قبل کی شام منگل کو کہا کہ عیدالاضحی کے موقع پر تمام اہل وطن، خاص طورپر ہمارے مسلمان بھائیوں اور بہنوں کو مبارکباد دیتا ہوں اور ان کی بہتری کی دعا کرتا ہوں۔ صدر جمہوریہ نے کہا کہ عیدالاضحی محبت اور قربانی کے جذبہ کے تئیں احترام کا اظہار کرنے اور ایک جامع معاشرے میں اتحاد اور بھائی چارے کیلئے مل کر کام کرنے کا تہوار ہے۔


صدر جمہوریہ رامناتھ کووند نے مزید کہا کہ عید کا تہوار اپنی خوشیوں کو شیئر کرنے کا غریبوں اور بے سہارا لوگوں کو مکمل مدد کرنے کا بھی موقع ہوتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ آئیے ہم سب مل کر کووڈ وبا سے بچاو کو اختیار کرتے ہوئے سماج کے ہر طبقہ کی خوشحالی اور بھلائی کے لئے کام کرنے کا عز م کریں۔


کہاں نماز کی اجازت اور کہاں پابندی؟

جموں وکشمیر

جموں وکشمیر میں اس سال بھی عیدالاضحیٰ کی تقریبات میں کووڈ 19 کا سایہ نظر آئے گا۔ جب مرکز کے زیرانتظام علاقہ میں بڑے پیمانے پر مجمع کو 25 افراد تک محدود کردیا ہے۔ کشمیر میں تیسری کووڈ لہر کے خطرہ کے درمیان کسی بھی اجتماعی نماز یا عبادت کی اجازت نہیں ہوگی۔

اترپردیش

اترپردیش کی حکومت نے 21 جولائی 2021 کو ہونے والے عید الاضحیٰ کی تقریبات کے لئے اجتماعات پر پابندی عائد کردی ہے۔ سی ایم یوگی آدتیہ ناتھ نے ہدایت دی کہ ایک وقت میں کسی بھی مقام پر 50 سے زیادہ افراد جمع نہ ہوں۔ یہ فیصلہ کورونا کی موجودہ صورتحال کے پیش نظر کیا گیا ہے۔ سی ایم یوگی آدتیہ ناتھ نے مزید کہا کہ عوامی مقامات پر جانوروں کی قربانی نہیں دی جانی چاہئے۔ اس کے لئے مخصوص مقامات پر ہی قربانی کا انتظام کرنا چاہئے۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ کسی بھی رسم کو انجام دینے کے لئے ممنوعہ جانوروں جیسے گائے اور اونٹوں کو ذبح نہ کیا جائے۔

دہلی کی جامچ مسجد کی فائل فوٹو۔(shutterstock)۔
دہلی کی جامچ مسجد کی فائل فوٹو۔(shutterstock)۔


بہار

بہار میں وقف بورڈ نے ایک سرکلر جاری کیا اور مساجد انتظامیہ سے کہا کہ وہ ریاستوں میں بقرعید کے جشن کے لئے اجتماعی نماز ادا نہ کریں کیونکہ ابھی تک ریاستی حکومت کی طرف سے جاری کردہ رہنما خطوط نہیں ہیں۔

آسام

آسام حکومت نے نیا ایس او پی جاری کیا۔ جورھاٹ ، گولاگھاٹ ، بسوآناتھ ، سونت پور ، لکھیم پور میں پوری طرح سے قابو پایا جاتا ہے۔ ماریگاؤں ، گولپارہ میں کرفیو میں ایک بجے تک نرمی کا اعلان کیا۔ گوہاٹی میں کرفیو کے وقت میں کوئی تبدیلی نہیں۔ دیگر 26 اضلاع میں بھی کرفیو میں شام 5 بجے تک نرمی ہے۔ نئے ایس او پی کے مطابق تمام ہوائی اور ریلوے مسافروں کو کووڈ۔19 ٹیسٹ کرانا ہوگا۔ مزید برآں شمال مشرقی ریاستوں میں سفر کرنے والے مسافروں کو بھی اس پروٹوکول پر عمل پیرا ہونا پڑے گا۔ عید کی خوشی کے دوران صرف 5 افراد کو مساجد میں اپنی رسومات ادا کرنے کے لئے جمع ہونے کی اجازت ہے۔

دہلی

دہلی میں بقرعید 2021 کے موقع پر جامع مسجد میں اجتماعی نماز نہیں ہوگی۔ لیکن ایس او پی کے ساتھ اجتماعی نماز کی اجازت ہے جس کی پیروی کی جانی چاہئے۔ مذہبی رہنماؤں نے مسلمانوں سے اپیل کی کہ وہ کووڈ 19 پروٹوکول پر عمل کریں۔

راجستھان

کورونا وائرس کے پھیلاؤ پر قابو پانے کے لئے راجستھان حکومت نے جمعہ کے روز عید الاضحیٰ کے موقع پر بڑے پیمانے پر اجتماعات پر پابندی کا اعلان کرتے ہوئے تازہ رہنما خطوط جاری کیے۔ راجستھان حکومت نے لوگوں سے اپیل کی کہ وہ احتیاطی تدابیر اختیار کریں اور کووڈ 19 پروٹوکول پر عمل کریں۔ جہاں تک ممکن ہو۔ گھر پر ہی رہیں اور کنبہ کے افراد کے ساتھ نماز پڑھیں۔



مہاراشٹر

مہاراشٹر حکومت نے مسلمانوں سے صرف گھر پر ہی بقرعید منانے کو کہا ہے۔ تہوار سے قبل مہاراشٹرا حکومت کے جاری کردہ رہنما خطوط پر مہاراشٹرا کی حکومت نے لوگوں سے کہا ہے کہ وہ گھروں میں نماز ادا کریں کیونکہ کووڈ۔19 کی پابندیوں کے سبب مذہبی مقامات کو بند کردیا گیا ہے۔ مساجد یا عیدگاہوں میں نمازیوں کی اجازت نہیں ہوگی۔

گجرات

گجرات میں ابھی تک بقر عید کے لئے کوئی ایس او پی نہیں ہے۔ بقر عید 21 جولائی کو گجرات سمیت ملک بھر میں منائی جائے گی۔ مسلمانوں سے اپیل کی گئی ہے کہ وہ عید کے دوران کورونا کے رہنما اصولوں پر عمل کریں۔ تاہم گجرات حکومت نے ابھی تک بقر عید کے لئے کسی خاص ایس او پی کا اعلان نہیں کیا ہے۔ گجرات میں کورونا وائرس کے معاملات کم ہونے کے ساتھ ہی 60 فیصد گنجائش والے سوئمنگ پول سمیت سرگرمیاں شروع کرنے کا حکم دیا گیا ہے

کیرالا

سپریم کورٹ نے پیر کو کیرالہ حکومت سے کہا کہ آئندہ بقرعید کو دیکھتے ہوئے ریاست میں COVID-19 پابندیوں میں تین دن کی نرمی برتی جائے گی۔ اس دوران احتیاط ضروری ہے۔ ہندوستانی میڈیکل ایسوسی ایشن (آئی ایم اے) کی جانب سے تیسری لہر کی انتباہ کے بعد کیرالہ حکومت ہفتہ کو ریاست میں عید الاضحیٰ کی تقریبات کے آس پاس کووڈ پابندیوں کو کم کرنے سے متعلق جاری کردہ اپنے حکم کو تبدیل یا واپس لے سکتی ہے۔

کرناٹک

کرناٹک کی ریاستی حکومت نے 18 جولائی کو بقرعید کی تقریبات کے سلسلے میں نئی ​​ہدایات جاری کیں۔ اس کے مطابق مسجد کے اندر صرف 50 افراد کی اجازت ہے اور لوگوں کو ان میں 6 فٹ کا فاصلہ برقرار رکھنا ہوگا۔ نمازیوں کو مساجد میں تشریف لاتے ہوئے مصلیٰ بھی ساتھ لیں آئیں۔ 10 سال سے کم عمر بچوں کو مساجد جانے کی اجازت نہیں ہے۔ مسجد میں داخل ہونے والے تمام افراد کو اپنے ہاتھوں کو اچھی طرح سے دھونا چاہئے اور ہر وقت ماسک پہننا چاہئے۔



تلنگانہ

تلنگانہ حکومت نے بقرعید تقریبات کے موقع پر سماجی فاصلے اور دیگر کووڈ 19 پروٹوکولز کی پاسداری کے ساتھ بڑے پیمانے پر اجتماع کی اجازت دی۔ مساجد اور عیدگاہیں 21 جولائی کو نماز عید کی تیاری کر رہی ہیں۔ تلنگانہ اسٹیٹ وقف بورڈ کے حیدرآباد کے تمام اجتماعی مقامات عید گاہ میر عالم ، عیدگاہ سکندرآباد ، قطب شاہی عید گاہ، عیدگاہ بلالی ، اور حفیظ پیت عیدگاہ میں جنگی بنیادوں پر تیاری جاری ہے۔ تاہم ریاست تلنگانہ کے محکمہ صحت نے بقرعید اور بونالو کے تحت نیک خواہشات کا اظہار کرتے ہوئے یاد دلایا کہ ریاست میں COVID-19 انفیکشن کی دوسری لہر نے سخت نقصان پہنچایا ہے۔ اس لیے احتیاط ضروری ہے۔

آندھرا پردیش

آندھرا پردیش حکومت میں عیدالاضحی (بقرعید) کی تقریبات اور نماز عید گاہوں میں یا کھلی جگہوں پر ادا نہیں کی جاسکتی ہے اور مساجد میں 50 فیصد کی حد تک ہی اجازت ہے۔ تاکہ اجتماعات سے بچا جاسکے۔ جمعہ کو جاری کردہ تازہ ترین رہنما خطوط میں ریاستی حکومت نے کہا ہے کہ اگر ضرورت ہو تو بعد کئی ہدایات جاری کی جائے گی۔ ماسک پہننا لازمی ہے اور کسی کو بھی ماسک کے بغیر جانے کی اجازت نہیں ہوگی۔

تمل ناڈو

تمل ناڈو مسلم لیگ (ٹی این ایم ایل) نے ریاستی حکومت سے اپیل کی ہے کہ وہ مساجد اور کورونا پابندیوں والے گراؤنڈز میں اجتماعی نماز کی اجازت دیں جیسے بچوں اور بزرگ شہریوں کو نماز پڑھنے سے منع کرنا ، معاشرتی فاصلہ برقرار رکھنا اور اس دوران سینی ٹائزر کا استعمال لازمی قرار دیا جاسکتا ہے۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Jul 21, 2021 12:04 AM IST