உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    لوک سبھا الیکشن 2019 کا بج گیا بگل، 7 مرحلوں میں ہوگی ووٹنگ، ضابطہ اخلاق نافذ، 23 مئی کوہوگا نتائج کا اعلان

    الیکشن کمیشن کے ذریعہ الیکشن کا اعلان کئے جانے کے بعد سے ملک میں ضابطہ اخلاق نافذ ہوجائے گا۔

  • News18 Urdu
  • | March 10, 2019, 19:03 IST
    facebookTwitterLinkedin
    LAST UPDATED 3 YEARS AGO

    AUTO-REFRESH

    HIGHLIGHTS

    22:1 (IST)

    ​نریندرمودی نے کہا کہ ان لوگوں نے اپنی ذاتی خواہشات کے لئے ہربات سے یوٹرن لینے کا کام کیا۔ اتنا ہی نہیں انہوں نے ملک میں نئی سیاست کی کوششوں کو بھی ناکام کیا ہے۔ یہ لوگ ملک بدلنے آئے تھے، لیکن خود ہی تبدیل ہوگئے۔ 

    22:0 (IST)

    ​وزیراعظم نریندر مودی نے کہا کہ یہ لوگ ٹکڑے ٹکرے گینگ کی حمایت میں جا کھڑے ہوئے۔ یہ لوگ نئی معیشت دینے آئے تھے، لیکن خود ہی افراتفری اورانارکی کا دوسرا نام بن گئے۔ ان لوگوں نے پہلے ہرکسی کو اناپ شناپ کہا اورپھر گھٹنوں کے بل چل کرمعافی مانگ لی۔ 

    21:55 (IST)

    ملک کے ہر آئینی ادارے، ہر عہدے اورہرشخص کو گالیاں دے کرانہوں نے اپنی تہذیب دکھائی ہے۔ بقول وزیراعظم مودی انہوں نے اپنی ہرناکامی کا ٹھیکرا دوسرے پر پھوڑنے کا کام کیا ہے۔

    21:38 (IST)

    لوک سبھا الیکشن کے تحت طوفانی ریلی کررہے وزیراعظم نریندر مودی نے دہلی کے رام لیلا میدان میں سبھی اپوزیشن جماعتوں پرنشانہ سادھا۔ وزیراعظم نے نام لئے بغیر دہلی کے وزیراعلیٰ اروند کیجریوال کے لئے کہا کہ ان ناکام پنتھیوں نے پنجاب مخالفین اور خالصتان حامیوں کو طاقت دی ہے۔ یہاں تک کہ بیرون ممالک جاکر ملک مخالف طاقتوں سے بھی رابطہ کرنے میں انہوں نے کوئی تامل نہیں کیا۔ 

    18:40 (IST)

    لوک سبھا الیکشن کی تاریخوں کا اعلان ہونے کے بعد کانگریس نے ٹوئٹ کرکے جیت کا دعویٰ کیا ہے۔ 

    18:29 (IST)

    چیف الیکشن کمشنر سنیل اروڑہ نے کہا ہے کہ ملک میں ضابطہ اخلاق نافذ ہوچکا ہے، کوئی بھی اس کی خلاف ورزی کرتا پایا جاتا ہے تو اس کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔ مجرمانہ شبیہ والے امیدواروں کواپنے مجرمانہ ریکارڈ کی اطلاع دینی ہوگی۔ وہیں رات 10 بجے سے صبح 6 بجے تک لاوڈ اسپیکرکا استعمال ممنوع ہوگا۔ 

    18:25 (IST)

    وزیراعظم نریندرمودی نے الیکشن کی تاریخوں کے اعلان کے ساتھ ہی ملک کے عوام سے بڑھ چڑھ کرانتخابات میں شامل ہونے کی اپیل کی ہے۔ 

    18:23 (IST)

    آندھرا پردیش، اروناچل پردیش، سکم اوراوڈیشہ کے اسمبلی انتخابات کے لئے ووٹنگ وہاں ہونے والے لوک سبھا الیکشن کی تاریخوں پر ہی ہوگی۔ جبکہ تمل ناڈو سمیت تمام ریاستوں میں ضمنی انتخابات کے لئے ووٹنگ لوک سبھا الیکشن کے ساتھ ہی ہوگی۔ تمل ناڈو کی سبھی 21 خالی اسمبلی سیٹوں پر لوک سبھا الیکشن کے لئے ہونے والی ووٹنگ کے ساتھ ہی ہوگی۔ 

    18:19 (IST)

    ساتویں اورآخری مرحلے میں 19 مئی کو بہار کی 8، جھارکھنڈ کی تین، مدھیہ پردیش کی 8، پنجاب کی 13، مغربی بنگال کی 9، چنڈی گڑھ کی ایک، اترپردیش کی 13 اورہماچل پردیش کی 4 سیٹوں پر ووٹنگ ہوگی۔ 

    18:18 (IST)

    چھٹے مرحلے میں 12 مئی کو بہارکی 8، ہریانہ کی 10، جھارکھنڈ کی 4، مدھیہ پردیش کی 8، اترپردیش کی 14، مغربی بنگال کی 8 اورقومی دارالحکومت دہلی کی سبھی سات لوک سبھا سیٹوں پرووٹنگ ہوگی۔ 

    لوک سبھا الیکشن 2019 کے لئے تاریخوں کا باضابطہ اعلان ہوچکا ہے۔ دہلی واقع وگیان بھون میں منعقدہ پریس کانفرنس الیکشن کمیشن نے آج اعلان کردیا ہے کہ آئندہ لوک سبھا انتخابات کے لئے 7 مرحلوں میں ووٹنگ ہوگی۔ پہلے مرحلے کے لئے 11 اپریل کو ووٹنگ ہوگی جبکہ 23 مئی کو نتائج سامنے آئیں گے۔ چیف الیکشن کمشنر سنیل اروڑہ نے بتایا ہے کہ اب ملک میں ضابطہ اخلاق نافذ ہوگیا ہے۔ اگرکوئی اس کی خلاف ورزی کرتا ہوا پایا جاتا ہے، تو اس کے خلاف کارروائی ہوگی۔  واضح رہے کہ موجودہ لوک سبھا الیکشن کی مدت تین جون 2019 کو ختم ہورہی ہے۔ ایسے میں تب تک نئی حکومت کی تشکیل ضروری ہوجاتی ہے۔

    الیکشن کمیشن نے عام انتخابات 2019 کا اعلان کردیا ہے۔ 7 مرحلے میں ووٹنگ ہوگی۔ پہلے مرحلے میں 20 ریاستوں کی 91 سیٹیں، دوسرے مرحلے میں 13 ریاستوں کی 97 سیٹیں، تیسرے مرحلے میں 14 ریاستوں کی 115 سیٹیں، چوتھے مرحلے میں 9 ریاستوں کی 71 سیٹیں، پانچویں مرحلے میں 7 ریاستوں کی 51 سیٹیں، چھٹے مرحلے میں 7 ریاستوں کی 59 سیٹیں اورساتویں مرحلے میں 8 ریاستوں کی 59 سیٹوں پرالیکشن ہوں گے۔

    پہلے مرحلے میں آندھرا پردیش، اروناچل پردیش، گوا، گجرات، ہریانہ، ہماچل پردیش، کیرلا، میگھالیہ، میزورم، ناگالینڈ، پنجاب، سکم، تلنگانہ، تمل ناڈو، اتراکھنڈ، انڈومان، دادراناگرہویلی، دمن دیو، لکشدیپ، دہلی، پانڈوچیری میں ووٹنگ ہوں گے۔

    کرناٹک، منی پور، راجستھان، تری پورہ میں دو مرحلوں میں ووٹنگ ہوگی۔ آسام اورچھتیس گڑھ میں تین مرحلوں میں ووٹنگ ہوگی جبکہ جھارکھنڈ، مدھیہ پردیش، مہاراشٹر اوراوڈیشہ میں چار مرحلوں میں ووٹنگ ہوگی۔ جموں وکشمیر میں پانچ مرحلوں میں،  جبکہ بہار، مغربی بنگال اوراترپردیش میں 7 مرحلوں میں ووٹنگ ہوگی۔