ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

ایم پی۔ میزورم میں 28 نومبر، راجستھان۔ تلنگانہ میں 7 دسمبر اور چھتیس گڑھ میں دو مرحلوں میں ووٹنگ

الیکشن کی تاریخوں کا اعلان ہوتے ہی آج سے ان ریاستوں میں انتخابی ضابطہ اخلاق نافذ ہو گیا ہے

  • UNI
  • Last Updated: Oct 06, 2018 04:26 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
ایم پی۔ میزورم میں  28 نومبر، راجستھان۔ تلنگانہ میں 7 دسمبر اور چھتیس گڑھ میں دو مرحلوں میں ووٹنگ
چیف الیکشن کمشنر او پی راوت پریس کانفرنس کرتے ہوئے۔

الیکشن کمیشن نے پانچ ریاستوں کے اسمبلی انتخابات کی تاریخوں کا آج اعلان کردیا۔ چھتیس گڑھ میں اسمبلی انتخابات دومراحل میں 12اور 20نومبرکو ،مدھیہ پردیش اور میزورم میں ایک مرحلہ میں 28نومبرکو اور راجستھان اور تلنگانہ میں ایک مرحلہ میں 7دسمبرکو ہون گے  ۔ سبھی ریاستوں میں ووٹوں کی گنتی ایک ساتھ 11دسمبرکو ہوگی۔


چیف الیکشن کمشنر اوپی راوت نے آج پریس کانفرنس میں یہ اعلان کیا ۔ اس کے ساتھ ہی پانچوں ریاستوں میں انتخابی ضابطہ اخلاق نافذ ہوگیا ہے ۔ انھوں نے کہا کہ ان سبھی انتخابات میں نئی وی وی پیٹ مشینیں استعمال کی جائیں گی۔ راوت نے بتایا کہ چھتیس گڑھ کے نکسلی انتہا پسندی سے متاثرعلاقوں کی 18سیٹوں کے لئے پولنگ 12نومبر کو اور باقی 72سیٹوں کے لئے 20نومبر کوہوگی ۔


 راوت نے بتایا کہ مدھیہ پردیش میں سبھی 230سیٹوں کے لئے پولنگ ایک ہی مرحلہ میں 28نومبر کوہوگی۔ میزورم کی سبھی 50سیٹوں کے لئے ایک ہی مرحلہ میں 28نومبر کو ہی ووٹ ڈالے جائیں گے ۔ راجستھان کی 200سیٹوں کے لئے ووٹ 7دسمبر کو ڈالے جائیں گے ۔تلنگانہ میں بھی اسی دن سبھی 119سیٹوں کے لئے پولنگ ہوگی ۔ان سبھی ریاستوں میں ووٹوں کی گنتی 11دسمبر کو ہوگی۔


تلنگانہ اسمبلی انتخابات آئندہ اپریل ۔مئی میں لوک سبھا انتخابات کے ساتھ ہونے تھے لیکن وزیراعلی چندر شیکھر راؤ کی کابینہ نے گزشتہ 6ستمبر کو اسمبلی تحلیل کرنے کی سفارش کی تھی جسے گورنر نے منظور کرلیا تھا ۔اس کے مدنظر وہاں مقررہ وقت سے قبل انتخابات کرائے جارہے ہیں ۔


اس سے پہلے کانگریس نے الیکشن کمیشن کی سنیچر کو یہاں منعقد ہونے والی پریس کانفرنس کا وقت اچانک تبدیل کئے جانے پر سوال اٹھاتے ہوئے کہا کہ ایسا وزیراعظم نریندر مودی کی راجستھان میں ہونے والی ریلی کے پیش نظر کیا گیا۔ کمیشن نے پہلے پریس کانفرنس کے لئے ساڑھے 12 بجے کا وقت طے کیا تھا لیکن اچانک اس کا وقت تبدیل کرکے تین بجے کردیا گیا۔ امید ہے کہ الیکشن کمیشن اس پریس کانفرنس میں پانچ ریاستوں کے اسمبلی انتخابات کی تاریخوں کا اعلان کرے گا۔


مودی کی راجستھان کے اجمیر میں ایک بجے ریلی ہونی ہے۔ کمیشن نے اچانک پریس کانفرنس کا وقت تبدیل کرکے تین بجے کردیا۔ اس کا سبب آپ خود سمجھ سکتے ہیں۔  سرجے والا نے سوال کیا کہ کیا الیکشن کمیشن آزاد ہے۔


خیال رہے کہ راجستھان، مدھیہ پردیش، چھتیس گڑھ، میزورم اور تلنگانہ میں اسمبلی انتخابات اس برس کے آخر میں ہونے والے ہیں۔ الیکشن کمیشن کے ذریعہ انتخابات کی تاریخوں کا اعلان کئے جانے کے ساتھ ہی ضابطہ اخلاق فوری طورپر نافذ ہوجاتا ہے۔ اس سے پہلے بھی کمیشن پر یہ الزام لگتے رہے ہیں کہ وہ حکومت کے دباو میں کام کرتا ہے لیکن کمیشن نے ان الزامات کی ہمیشہ تردید کی ہے۔


First published: Oct 06, 2018 03:10 PM IST