ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

کنہیا کے معاملے میں بسی کی قلابازی ، بتایا جے این یو میں کارروائی سے کیوں گریز کررہی ہے دہلی پولیس

نئی دہلی : دہلی پولیس کمشنر بی ایس بسی غداری کے الزام میں گرفتار جے این یو طلبا یونین کے صدر کنہیا کمار کو ضمانت دئے جانے کے معاملے میں اپنے سابقہ بیان سے آج پلٹ گئے اور کہا کہ اگر اسے ضمانت دی جاتی ہے تو انکوائری متاثر ہونے کا خطرہ ہے۔

  • UNI
  • Last Updated: Feb 23, 2016 06:33 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
کنہیا کے معاملے میں بسی کی قلابازی ، بتایا جے این یو میں کارروائی سے کیوں گریز کررہی ہے دہلی پولیس
نئی دہلی : دہلی پولیس کمشنر بی ایس بسی غداری کے الزام میں گرفتار جے این یو طلبا یونین کے صدر کنہیا کمار کو ضمانت دئے جانے کے معاملے میں اپنے سابقہ بیان سے آج پلٹ گئے اور کہا کہ اگر اسے ضمانت دی جاتی ہے تو انکوائری متاثر ہونے کا خطرہ ہے۔

نئی دہلی : دہلی پولیس کمشنر بی ایس بسی غداری کے الزام میں گرفتار جے این یو طلبا یونین کے صدر کنہیا کمار کو ضمانت دئے جانے کے معاملے میں اپنے سابقہ بیان سے آج پلٹ گئے اور کہا کہ اگر اسے ضمانت دی جاتی ہے تو انکوائری متاثر ہونے کا خطرہ ہے۔


مسٹر بسی نے کنہیا کی گرفتاری کے وقت کہا تھا کہ اگر وہ ضمانت کے لئے عرضی دے گا تو پولیس اس کی مخالفت نہیں کرے گی لیکن آج وہ اپنے اس بیان سے پلٹ گئے اور کہا کہ پہلے حالات کچھ اور تھے، اب حالات بدل چکے ہیں۔ ان سے جب اس بارے میں سوال کیا گیا تو انہوں نے امن وقانون کی بدلتی ہوئی صورت حال کا حوالہ دیا اور کہا کہ حالات ہمیشہ یکساں نہیں رہتے۔ پولیس کو وقت کے حساب سے اپنی حکمت عملی تبدیل کرنی پڑتی ہے۔


جے این یو کی موجودہ صورت حال اور وہاں پولیس کارروائی کے امکانات کے سوال پر پولیس کمشنر نے کہا کہ غداری کے ملزم کچھ طالب علم کیمپس میں واپس آئے ہیں، لیکن ان کے خلاف پولیس اس لئے ابھی کارروائی نہیں کر رہی ہے کیونکہ ان کی وجہ سے جان و مال کو فوری طور پر کوئی خطرہ نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ وہ چاہتے ہیں کہ طلبہ خود خود سپردگی کے لئے تیار ہو جائیں ورنہ پولیس کے پاس تمام متبادل کھلے ہوئے ہیں۔


مسٹر بسی نے کہا کہ فی الحال پولیس صبرو تحمل اور احتیاط سے کام لے رہی ہے۔ پولیس کا کام کرنے کا طریقہ ہمیشہ سے ہی منفرد رہا ہے۔ مناسب وقت آنے پر وہ قانون کے دائرے میں رہتے ہوئے جو بھی ضروری ہوگا، کرے گی۔

First published: Feb 23, 2016 06:33 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading