ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

کشمیر ہندوستان کا اٹوٹ انگ ہے اور نہ ہی پاکستان کی شہ رگ : انجینئر رشید

سری نگر : عوامی اتحاد پارٹی کے سربراہ اور شمالی کشمیر کے حلقہ انتخاب لنگیٹ سے آزاد ممبر اسمبلی انجینئر شیخ عبدالرشید نے پیر کے روز جموں وکشمیر کی قانون ساز اسمبلی میں کہا کہ ’یہاں تک کہ مجھے پھانسی دے دی جائے، میں تب بھی نہیں کہوں گا کہ جموں وکشمیر ہندوستان کا اٹوٹ انگ ہے‘۔ انہوں نے کہا کہ مسئلہ کشمیر تاحال حل طلب ہے۔

  • UNI
  • Last Updated: Jun 20, 2016 06:28 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
کشمیر ہندوستان کا اٹوٹ انگ ہے اور نہ ہی پاکستان کی شہ رگ : انجینئر رشید
سری نگر : عوامی اتحاد پارٹی کے سربراہ اور شمالی کشمیر کے حلقہ انتخاب لنگیٹ سے آزاد ممبر اسمبلی انجینئر شیخ عبدالرشید نے پیر کے روز جموں وکشمیر کی قانون ساز اسمبلی میں کہا کہ ’یہاں تک کہ مجھے پھانسی دے دی جائے، میں تب بھی نہیں کہوں گا کہ جموں وکشمیر ہندوستان کا اٹوٹ انگ ہے‘۔ انہوں نے کہا کہ مسئلہ کشمیر تاحال حل طلب ہے۔

سری نگر : عوامی اتحاد پارٹی کے سربراہ اور شمالی کشمیر کے حلقہ انتخاب لنگیٹ سے آزاد ممبر اسمبلی انجینئر شیخ عبدالرشید نے پیر کے روز جموں وکشمیر کی قانون ساز اسمبلی میں کہا کہ ’یہاں تک کہ مجھے پھانسی دے دی جائے، میں تب بھی نہیں کہوں گا کہ جموں وکشمیر ہندوستان کا اٹوٹ انگ ہے‘۔ انہوں نے کہا کہ مسئلہ کشمیر تاحال حل طلب ہے۔

انجینئر رشید نے جب اسمبلی میں محکمہ بجلی کے مطالبات زر پر جاری بحث میں حصہ لیا تو اپنی تقریر کے دوران اُن کی بی جے پی اور کانگریس کے ممبران کے ساتھ سخت تلخ کلامی ہوئی۔ انہوں نے اپنی تقریر میں کہا کہ اگرانہیں پھانسی بھی دے دی جائے وہ تب بھی کہیں گے کہ جموں وکشمیر ہندوستان کا اٹوٹ انگ ہے نہ پاکستان کی شہ رگ۔

انہوں نے ممبران بالخصوص بی جے پی ممبران سے مخاطب ہوکر کہا کہ وہ تاریخی حقیقت کو سمجھ لیں اور دہلی سے کہیں کہ مسئلہ کشمیر کا واحد حل رائے شماری ہے۔

انجینئر رشید نے کہا ’اگر آپ مجھے جیل میں ٹھونس دیں گے، الیکشن لڑنے سے روکیں گے یا پھانسی پر لٹکادیں گے، میں تب بھی کشمیر کے تعلق سے اپنے موقف میں تبدیلی نہیں لاؤں گا۔ ہم نے حق خودارادیت کے لئے ایک لاکھ جانیں دی ہیں، ہم اس پر سمجھوتہ نہیں کرسکتے‘۔

جب بی جے پی ممبر رویندر رینا نے اس پر احتجاج کرتے ہوئے انجینئر رشید سے کہا کہ آپ نے تو ہندوستان کی حفاظت کا حلف اٹھایا ہے، تو انہوں نے ردعمل میں کہا کہ وہ ہندوستان کی خودمختاری کے خلاف نہیں ہیں بلکہ صرف جموں وکشمیر کے بارے میں بولتے ہیں جو بقول اُن کے بقول دونوں ملکوں کے درمیان تنازعے کی جڑ ہے۔ انجینئر رشید نے کہا کہ ہندوستان کا دعویٰ ہے کہ یہاں کے لوگوں نے بڑی تعداد میں انتخابی عمل میں حصہ لیا اور سرحد کے اُس پار جو کشمیر ہے، وہاں کے لوگ پاکستان کے ساتھ خوش نہیں ہیں۔ تو پھر مسئلہ ہی کیا ہے، نئی دہلی کو رائے شماری کے انعقاد سے دور نہیں بھاگنا چاہئے۔

ہوسکتا ہے کہ آرپار کشمیر کے لوگ ہندوستان کا انتخاب کریں۔ پھر پورا جموں وکشمیر ہندوستان کا اٹوٹ انگ بن جائے گا۔ دریں اثنا بی جے پی نے انجینئر رشید کے بیان پر سخت ردعمل ظاہر کرتے ہوئے کہا ہے کہ جو لوگ جموں وکشمیر کو ہندوستان کا اٹوٹ انگ نہیں مانتے ہیں، انہیں اس ملک میں رہنے کا کوئی حق نہیں ہے اور انہیں پاکستان منتقل ہوجانا چاہیے۔
بی جے پی ترجمان خالد جہانگیر نے یہاں جاری اپنے ایک بیان میں کہا کہ ایسا لگتا ہے کہ انجینئر رشید بھول گئے ہیں کہ بحیثیت ایم ایل اے انہوں نے ہندوستان کی خودمختاری اور سالمیت کے تحفظ کا حلف لیاہے۔
First published: Jun 20, 2016 06:28 PM IST