ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

سابق وزیراعظم منموہن سنگھ نے عدم رواداری کے خلاف آواز اٹھانے والوں کی تعریف کی

نئی دہلی:سابق وزیر اعظم منموہن سنگھ نے آج ملک میں بڑھتی ہوئی عدم رواداری پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے اظہار رائے کی آزادی پر قدغن لگانے والی طاقتوں کی نکتہ چینی کی اور اس رجحان کے مذمت کرنے والے دانشوروں کی تعریف کی ۔

  • UNI
  • Last Updated: Nov 06, 2015 01:09 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
سابق وزیراعظم منموہن سنگھ نے عدم رواداری کے خلاف آواز اٹھانے والوں کی تعریف کی
نئی دہلی:سابق وزیر اعظم منموہن سنگھ نے آج ملک میں بڑھتی ہوئی عدم رواداری پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے اظہار رائے کی آزادی پر قدغن لگانے والی طاقتوں کی نکتہ چینی کی اور اس رجحان کے مذمت کرنے والے دانشوروں کی تعریف کی ۔

نئی دہلی:سابق وزیر اعظم منموہن سنگھ نے آج ملک میں بڑھتی ہوئی عدم رواداری پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے اظہار رائے کی آزادی پر قدغن لگانے والی طاقتوں کی نکتہ چینی کی اور اس رجحان کے مذمت کرنے والے دانشوروں کی تعریف کی ۔


ملک کے پہلے وزیر اعظم جواہر لال نہرو کی 125 ویں سالگرہ کے متعلق ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر سنگھ نے کہا کہ موجودہ حالات کافی چیلنجنگ ہیں کیوں کہ لوگوں کو اپنی رائے کا اظہار کرنے پر ایک مخصوص طبقہ کے لوگوں کے عتاب کا شکار ہونا پڑ رہا ہے ، ایسے میں سیکولر خیالات رکھنے والے تمام لوگوں کو عدم رواداری کے خلاف آواز بلند کرنی چاہئے۔


انہوں نے کہا کہ امن کے بغیر آزادی ممکن نہیں ہے اور نہ صرف ہماری آزادی بلکہ اقتصادی ترقی اور دانشورانہ فروغ کے لئے بھی امن ضروری ہے۔ اس لئے امن اور آزادی کو سیاسی نقطہ نظر کے ساتھ ساتھ اقتصادی ترقی کے نقطہ نظر سے بھی دیکھنا چاہئے۔ تقریب میں مشہور مورخ پروفیسر عرفان حبیب نے بھی شرکت کی ۔

First published: Nov 06, 2015 01:09 PM IST