ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

Farmers' Protest: کسانوں نے سخت کیا رخ، کہا۔ حکومت سے زرعی قوانین کو واپس کرائیں گے

تین نئے زرعی قوانین کے خلاف اپنا رخ سخت کرتے ہوئے کسان لیڈروں نے منگل کو کہا کہ وہ حکومت سے ان قوانین کو واپس 'کرائیں' گے اور کہا کہ ان کی لڑائی اس سطح پر پہنچ گئی ہے جہاں وہ اسے جیتنے کے تئیں 'عہد بستہ' ہیں۔

  • Share this:
Farmers' Protest: کسانوں نے سخت کیا رخ، کہا۔ حکومت سے زرعی قوانین کو واپس کرائیں گے
فائل فوٹو: فوٹو اے پی

نئی دہلی۔ تین نئے زرعی قوانین کے خلاف اپنا رخ سخت کرتے ہوئے کسان لیڈروں نے منگل کو کہا کہ وہ حکومت سے ان قوانین کو واپس 'کرائیں' گے اور کہا کہ ان کی لڑائی اس سطح پر پہنچ گئی ہے جہاں وہ اسے جیتنے کے تئیں 'عہد بستہ' ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اپنے مطالبات کے لئے وہ بدھ کو دہلی اور نوئیڈا کے درمیان چلہ بارڈر کو پوری طرح سے جام کر دیں گے۔ سنگھو بارڈر پر پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کسان لیڈر جگجیت ڈلےوال نے کہا کہ ' حکومت کہہ رہی ہے کہ وہ ان قوانین کو واپس نہیں لے گی، ہم کہہ رہے ہیں کہ ہم آپ سے ایسا کروائیں گے'۔


انہوں نے کہا کہ 'لڑائی اس مرحلے میں پہنچ گئی ہے جہاں ہم معاملے کو جیتنے کے تئیں عہدبستہ ہیں'۔ انہوں نے کہا ' ہم بات چیت سے نہیں بھاگ رہے ہیں لیکن حکومت کو ہمارے مطالبات پر دھیان دینا ہو گا اور ٹھوس تجویز کے ساتھ آنا ہو گا'۔ کئی دیگر کسان لیڈروں نے بھی پریس کانفرنس سے خطاب کیا اور لوگوں سے اپیل کی کہ 20 دسمبر کو ان کسانوں کو خراج عقیدت پیش کریں جنہوں نے احتجاج کے دوران اپنی جانیں گنوا دیں۔ کسان لیڈر رشی پال نے کہا کہ نومبر کے آخری ہفتے میں احتجاج شروع ہونے کے بعد روزانہ اوسطا ایک کسان کی موت ہوئی ہے۔


ایک دیگر کسان لیڈر نے کہا ' احتجاج کے دوران اپنی زندگی گنوانے اور شہید ہونے والے کسانوں کے لئے 20 دسمبر کو صبح 11 بجے سے دوپہر ایک بجے تک ملک کے سبھی گاوں اور تحصیل دفاتر میں یوم خراج عقیدت کا انعقاد کیا جائے گا'۔ اس سے پہلے وزیر اعظم نریندر مودی نے اپنی آبائی ریاست گجرات میں ایک پروگرام کے دوران کہا کہ دہلی کے آس پاس کسانوں کو گمراہ کرنے کی بہت سازشیں ہو رہی ہیں۔ انہیں خوفزدہ کیا جارہا ہے کہ ان کی زمینوں پر قبضہ کرلیا جائے گا۔



وزیر اعظم مودی نے کہا کہ زرعی اصلاحات کا مطالبہ برسوں سے کسان تنظیموں کی جانب سے کیا جا رہا تھا، تاکہ کسانوں کو اپنی پیداوار کو مطلوبہ مقام پر بیچنے کی آزادی حاصل ہو۔ جب اپوزیشن جماعتیں برسر اقتدار تھیں، ان کی حکومتیں یہ کام نہیں کر سکتی تھیں، لیکن جب موجودہ حکومت نے تاریخی زراعتی قوانین بنائے ہیں، تو وہ کسانوں کو گمراہ کر رہے ہیں۔
Published by: Nadeem Ahmad
First published: Dec 15, 2020 11:37 PM IST